انٹرویو کے دوران ”عمران“ کی تصویر دیکھ کر بشارالاسد حواس باختہ

لندن (نیٹ نیوز) شکار اپنے جلاد کے سامنے.. یہ اس عمل کا عنوان ہے جو ایک مغربی صحافی کی جانب سے شامی صدر بشار الاسد کے ساتھ انٹرویو کے موقع پر سامنے آیا۔سوئٹزرلینڈ کے چینل SRF1 کے نمائندے نے انٹرویو کے دوران اپنی جیب سے شامی بچے ”عمران“ کی تصویر نکال کر بشار الاسد کے چہرے کے سامنے کر دی۔تاہم شامی صدر اس اچانک حرکت سے حواس باختہ ہو گیا اور اپنے مظالم کا شکار ہونے والے بچے کا سامنا کرنے سے منہ موڑنے لگا۔ بشار نے کہا کہ یہ تصویر جس کے لیے دنیا ہل گئی تھی ”جعلی ہے“! میزبان نے گفتگو کے دوران بشار سے سوال کیا کہ کیا وہ شامی صدر کو ایک تصویر دکھا سکتا ہے۔ بشار نے حامی بھر لی تو میزبان نے جیب سے ”عمران“ کی تصویر نکال کر بشار کو دکھاتے ہوئے کہا کہ “یہ چھوٹا سا بچہ اس جنگ کی علامت بن گیا ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ آپ اس تصویر کو پہچانتے ہوں گے۔ اس کا نام عمران ہے اور اس کی عمر پانچ برس ہے۔ یہ خون میں لت پت ، خوف زدہ اور حیران ہے۔ کیا آپ کے پاس اس بچے اور اس کے گھر والوں سے کہنے کے لیے کچھ ہے؟

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved