بچوں پر سختی کرنے والے والدین کیلئے بڑی خبر

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ)برطانوی ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ والدین کی غیرضروری سختی سے بچے جھوٹ بولنے کے عادی ہو جاتے ہیں۔ نفسیاتی معالجین کے مطابق گھر کا ماحول بہت زیادہ جبر اور سختی پر مبنی ہوتو وہاں ایک ایسا ماحول بن جاتا ہے جہاں بچہ سچ بولنے کو غنیمت نہیں جانتا اور یوں کسی ماہر فنکار کی طرح غلط بیانی سے کام لینا شروع کر دیتا ہے ۔معالجین کا کہنا ہے کہ تالی ہمیشہ دونوں ہاتھوں سے بجتی ہے عین اسی طرح بچوں کے جھوٹ بولنے میں والدین کا برابر کا ہاتھ ہوتا ہے کیونکہ والدین کی جانب سے بے جا سختی انہیں اس جانب دھکیلتی ہے کہ وہ جھوٹ بولیں۔ماہریننے اس تجربے کے لیے مغربی افریقہ کے دو سکولوں میں تجربات کیے جن میں ایک سکول کا ماحول نرم اور دوسرے کا قدرے سخت تھا۔ اس میں بچوں کو کھلونے پھینک کر شور مچانے کے لیے کہا گیا جب کہ ان کے بڑے خفیہ جگہ سے یہ سب کچھ دیکھ رہے تھے ۔ معلوم ہوا کہ جس سکول کا ماحول قدرے نرم تھا وہاں کے بچوں نے شور مچانے کا اعتراف کیا جبکہ جہاں سخت ماحول دیکھا گیا اور بچوں کو سزا کا ڈر تھا وہاں فوری طور پر بچوں نے بڑی مہارت سے جھوٹ بولا۔

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved