تازہ تر ین

این اے 125 انتخابی عذرداری کیس سعد رفیق کی درخواست پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد)مانیٹرنگ ڈیسک( سپریم کورٹ نے این اے 125 انتخابی عذرداری کیس میں خواجہ سعدرفیق کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔تفصیلات کے مطابق جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں 2رکنی بنچ نے سماعت کی،وکیل حامد خان نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ این اے 125 میں انتخابی عملے کوتبدیل کیاگیا،انتخابی عمل کے دوران الیکشن قواعد کی خلاف ورزی ہوئی،درخواستگزار کے وکیل کا کہناتھاکہ سینکڑوں فارم 14 قانونی طریقے سے نہیں بھرے گئے۔اس پر جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ لگتاہے آپ آئندہ الیکشن سے پہلے فیصلہ نہیں چاہتے،آپ کوعدالتی نظائردینے کیلئے 15 منٹ دیئے تھے،آپ نے تودوبارہ دلائل دیناشروع کردیئے۔جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ آج کے بعد ہمارابنچ دستیاب نہیں، پھرگلہ مت کریں کہ الیکشن سے پہلے فیصلہ نہیں آیا۔سپریم کورٹ نے وکلا کے دلائل مکمل پر فیصلہ محفوظ کر لیا،جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ خواجہ سعد رفیق کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر رہے ہیں جو مناسب وقت پر سنایا جائے گا۔واضح رہے کہ الیکشن ٹربیونل نے این اے 125کا انتخاب کالعدم قرار دیا تھا جبکہ وفاقی وزیر ریلوے نے عدالت عظمی سے حکم امتناعی حاصل کر رکھا ہے۔

 


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved