تازہ تر ین

روزہ میں ماں کا بچے کو دودھ پلانا ٹھیک ہے یا نہیں ؟

لاہور (ویب ڈیسک )کیا بچے کو دودھ پلانے والی عورت روزے کے دوران بچے کو دودھ پلا سکتی ہے،روزہ ٹوٹ تو نہیں جائے گا ؟،جواب: بچے کو دودھ پلانے والی عورت اگر بہت کمزور ہے اورروزہ رکھنے کی صورت میں اس کی صحت کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے یا بچے کے لئے ا±س کا دودھ نہ ہونے یا انتہائی کم ہونے کی صورت میں بچے کی صحت کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے ،تو اسے عذر کی بنا پر رمضان کاروزہ چھوڑنے کی رخصت ہے ،جس کی بعد میں قضا لازم ہے۔تاہم اگر بچے کو دودھ پلانے والی عورت رمضان المبارک کا روزہ بھی رکھتی ہے اور بچے کو دودھ بھی پلاتی ہے تو اس کے روزے پر اس کا کوئی اثر نہیں پڑے گا۔احادیث وآثار میں فقہی اصول یہ بیان کیا گیا ہے :ترجمہ:”روزے دار کے معدے میں کسی چیز کے داخل ہونے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے ، خارج ہونے سے نہیں ٹوٹتا “۔اور ماں کا دودھ ا±س کے وجود سے خارج ہوتا ہے۔ امام بخاری بیان کرتے ہیں :ترجمہ:” حضرت ابن عباس اور عکرمہ بیان کرتے ہیں : روزہ کسی چیز کے داخل ہونے سے ٹوٹتا ہے ،خارج ہونے سے نہیں ٹوٹتا“۔

 


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved