تازہ تر ین

اخبارات کے اشتہارات کے واجبات کی ادائیگی کا مسئلہ جلد حل کر لیا جائیگا ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے کونسل آف نیوز پیپرایڈیٹرز کے صدر کی سربراہی میں وفد کی ملاقات، پنجاب میں میڈیا اکیڈمی کے قیام کیلئے سی پی این ای تجاویز دے:گفتگو

لاہور (نمائندہ خصوصی) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے وزیر اعلیٰ آفس میں کونسل آف پاکستان نیوزپیپر ایڈیٹرز (سی پی این ای) کے صدر عارف نظامی کی سربراہی میں سی پی این ای کے وفد نے ملاقات کی۔ ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال اور اخباری صنعت کو درپیش مسائل کے حل کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیر اعلیٰ سردار عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مسائل کی نشاندہی کے حوالے سے میڈیا کا کردار کلیدی اہمیت رکھتا ہے کیونکہ صحافت ریاست کا چوتھا ستون ہے اور میڈیا حکومت کی رہنمائی بھی کرتا ہے اور میں سمجھتا ہوں کہ میڈیا کی تعمیری تنقید سے ہمیں رہنمائی ملتی ہے۔ اس موقع پر وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے وزیر اعلیٰ کی توجہ اخبارات کو اشتہارات کی مد میں واجب الادا رقوم کی جلد از جلد ادائیگی کی جانب مبذول کرائی، جس پر وزیر اعلیٰ نے اخبارات کواشتہارات کی مد میں واجبات کی ادائیگی کے طریقہ کار وضع کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ وزیر اعلیٰ نے مزید کہا کہ ہم میڈیا اکیڈمی بنانے کا منصوبہ رکھتے ہیں اور میڈیا اکیڈمی کے قیام کے منصوبے کے لئے سی پی این ای کی مشاورت اور تجاویز چاہتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اخباری صنعت کے مسائل ان کی مشاورت سے حل کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اہداف کا تعین کر لیا ہے اور تیزی سے ان کے حصول کے لئے کوشاں ہیں۔ ہماری نیت ٹھیک اور سمت درست ہے۔ میرے دروازے ہمہ وقت کھلے ہیں۔ پنجاب میں آپ کو ہر سطح پر میرٹ نظر آئے گی۔ کابینہ مکمل ہو چکی ہے اور وزراءکو ذمہ داریاں تفویض کی جا چکی ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان کے نئے پاکستان کے وژن کو پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے۔ تمام فیصلے مشاورت سے کر کے ان پر عملدرآمد کیا جاتا ہے۔ سابق دور کے منصوبوں کے آڈٹ کا حکم دے دیا ہے۔ کابینہ کی سب کمیٹیاں تشکیل دی جا چکی ہیں جو کہ اپنا کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب بہت بڑا صوبہ ہے اور اس سے آبادی میں چھوٹے درجنوں ممالک ہیں، بلدیاتی اداروں کے نئے منصوبوں کے لئے فنڈز کے اجراءپر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ ہم قانون کے دائرہ کار میں رہتے ہوئے اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں۔ اینٹی کرپشن ادارے کی کارکردگی تسلی بخش نہیں، اینٹی کرپشن ادارے کی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے ہدایات دی جا چکی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا کام آپ کو نظر آئے گا اور فرق بھی۔ وزیر اعظم عمران خان کی طرف سے 100دن کاٹارگٹ دیا گیا ہے،میں صبح سے رات گئے تک سرکاری فرائض کی انجام دہی میں مصروف رہتا ہوں۔ وزارت اعلیٰ کا منصب سنبھالنے سے قبل دوپہر کو دو گھنٹے آرام کرتا تھا اور اب آرام کا وقت نہیں ملتا، ہر وقت کام میں مصروف رہتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں شعبہ سیاحت کے فروغ کے بہت سے مواقع موجود ہیں، ہم ان مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھائیں گے۔ جنوبی پنجاب میں خوبصورت مقامات کو ترقی دے کر سیاحت کو فروغ دیں گے۔ میں ہر ماہ دو دن جنوبی پنجاب کے ضلع ملتان میں گزاروں گا۔ میرے ساتھ سیکریٹریز بھی ہوں گے اور لوگوں کے مسائل وہاں پر ہی حل کریں گے۔ محکمہ انٹی کرپشن کا حال یہ ہے کہ جس ادارے کا سالانہ بجٹ 2ارب روپے ہے مگر ا س محکمے نے صرف 90مقدمات فائنل کئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ٹرانزیکشن پریڈ میں ہیں اور بہت سے اصلاحات کے ثمرات آئیں گے۔ میں نے پروٹوکول ختم کر دیا ہے اور مجھے ہر کوئی مل سکتا ہے۔ لینڈ ریکارڈ سسٹم کے تحت اراضی سینٹرز کی تعداد میں اضافہ کرنا چاہتے ہیں۔ میری کوشش ہے کہ اراضی سینٹر کو تحصیل سے قانونگوہی تک لے جایا جائے۔ ای خدمت سینٹرز کو بتدریج ہر ضلع اور پھر تحصیل کی سطح پر لیکر جائیں گے۔ سیف سٹی اتھارٹی کا دائرہ کار بھی ہر ڈویژن تک پھیلائیں گے۔ اس موقع پر سی پی این ای کے صدر عارف نظامی کی سربراہی میں وفد نے وزارت اعلیٰ کا منصب سنبھالنے پر سردار عثمان بزدار کو مبارکباد دی اور کہا کہ آپ صاف گو شخص ہیں اور وزیر اعظم عمران خان نے آپ کو وزیر اعلیٰ بنا کر خوبصورت انتخاب کیا ہے۔ صوبائی وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان، میشران عون چوہدری، اکرم چوہدری، سیکریٹری اطلاعات، ڈی جی پی آر اور متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved