تازہ تر ین

ایان علی کی خبر 2015ءمیں سب سے پہلے میں نے بریک کی

ڈاکٹرشاہدمسعود
ماڈل گرل ایان علی کی خبر سب سے پہلے 2015میں میں نے بریک کی، 3سال سے اسی معاملہ پر چیخ رہاہوں اور نوٹس بھگت رہاہوں، خبر اپنے وقت پر دی جائے خبر، بعد میں محض ایک کہانی رہتی ہے ، جعلی اکاو¿نٹس سکینڈل میں میڈیاہاو¿سز بھی آئینگے ، بیرون ملک زیارتوں کیلئے جانیوالوں کے ذریعے منی لانڈرنگ کی جاتی رہی، ڈاکٹر، وکلاءاور دیگر وجود جو باہر جاتے ان کے ذریعے پیسے باہر بھجوائے جاتے رہے، ابھی تو ٹریول بلز سامنے آئینگے تو حیران کن انکشافات ہونگے، منی لانڈرنگ کے پیسے سے بیرون ممالک میں بڑی بڑی لابنگ فرموں کی خدمات حاصل کی گئیں، ایف اے ٹی ایف وفد نے سٹاک بروکرز کی بھی بات کی اور ریکارڈ مانگا ہے ، وفد ابھی مطمئن نہیں ہے، پارلیمان کو اسی لئے غیر متعلق کہتا ہوں کہ سینٹ کی صورتحال دیکھ لی ، مشاہداللہ نے وزیر اطلاعات کو اپنی باتوں میں الجھالیاہے، فواد چوہدری اہم عہدے پر ہیں انکا کام پالیسی بیان دینا ہے معمولی باتوں میں الجھنا نہیں ہے، تاہم انہیں پھنسالیاگیاہے، وزیراعظم عمران خان کا نکتہ نظر درست ہے ، وہ ایماندار ہیں تاہم حکومت اور ریاست کو چلانا الگ شعبدہ ہے ،سٹیٹس کو کو توڑنا ہے تو اس کا ایک طریقہ کارہوناچاہیے، عمران خان چونکہ ڈرائیونگ سیٹ پر ہیں اس لئے جوابدہ بھی وہی ہونگے، خزانہ خالی ہے اور حکومتی ٹیم سے معاشی معاملات سنبھالے نہیں جارہے ، اسد عمر بیرون ملک گئے تو ان کا متبادل یہاں موجود ہوناچاہئے تھا ، آئی ایم ایف نے ساڑھے تین سو سے چارسو اشیاءکی قیمتیں بڑھانے کی بات کی ہے ، جن میں مقامی اشیاءبھی شامل ہیں ، گھروں کے کرائے بڑھانے کی بات بھی کی گئی ہے ، سٹاک مارکیٹ گرنے اور ڈالر کی قیمت اچانک بڑھنے پر ہنگامی بنیادوں پر ایک تحقیقاتی کمیشن بناناچاہیے تھا، عمران خان اگر اسمبلی کو توڑتے ہیں تو اصل نقصان اپوزیشن کا ہوگا، اس وقت حکومت کو چلنے دینا خود حکومت سے زیادہ اپوزیشن کیلئے ضروری ہے ، بیک اپ پلان بھی تیار ہورہاہے کہ اگر عمران خان حکومت توڑتے ہیں تو کیا ہوگا، عمران خان کو انتہائی کمزور حکومت ملی ہے جو اتحادیوں کے بل پر چل رہی ہے ، اتحادی بول رہے ہیں صرف شجاعت اور پرویز الٰہی خاموش ہیں کہ وہ سیاست کو خوب سمجھتے ہیں، وزیراعظم تمام حالات کا ازسرنوجائزہ لیں ، یہ بات کرنے کی ضرورت نہیں ہوتی اگر حکومت نے چین سے معاہدوں پر نظرثانی کرنا ہے تو یہ بات کہنے کی کیا ضرورت تھی، بات کرنے کے نتیجہ یہ سامنے آیا ہے کہ آئی ایم ایف نے اپنی شرائط بڑھادی ہیں، لوٹ مار کرنیوالی مافیا ابھی بھی معاشی افراتفری پھیلانے کیلئے سٹاک مارکیٹ کو استعمال کرسکتی ہے ، حکومت پھونک پھونک کر قدم اٹھائے اور مچھروں کو ڈنڈوں سے مارنے کی کوشش نہ کرے، انہیں مارنے کیلئے سپرے کا استعمال کرے، تحریک انصاف کے کارکن سعد رفیق کے مقابلہ میں ہمایوں اختر کو ٹکٹ دینے پر خوش نہیں ہیں۔
٭٭٭


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved