تازہ تر ین

بھارتی مےڈےا کا نفسےاتی پراپےگنڈہ

تابندہ خالد……..اظہارخیال
ایک مشہور کہاوت ہے کہ محبت اور جنگ میں سب جائز ہوتا ہے لیکن بھارت کے موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے ہم کہہ سکتے ہیں کہ نریندر مودی کیلئے جنگ اور الےکشن مےں سب جائز ہے ۔ بھارت میں عام انتخابات 2019ءکا اعلان ہو چکا ہے۔ یہ انتخابات 11اپرےل سے 19مئی تک 7مراحل مےں ہوں گے۔ 23 مئی کو ہونیوالی ووٹوں کی گنتی کے بعد یہ طے ہوگا کہ بھارت مےں کس کی سرکار بنے گی۔ بےن الاقوامی سطح پر ےہ بات منظرِ عام پر آچکی ہے کہ بی جے پی نے اپنے سےاسی مقاصد کے لےے پورے خطے کے امن کو دا¶ پر لگا دےا ہے۔ مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتابےزجی نے اےک تہلکہ خےز انکشاف کےا ہے کہ بھارتی سرکار اپرےل مےں دوبارہ سرجےکل سٹرائےک کر سکتی ہے۔ بھارتی سےاست دان راج نتھ سنگھ جو کہ مودی کا چمچہِ اعظم ہے، اس نے کرناٹک کے ضلع مےنگلور مےں ریلی سے خطاب کے دوران لوگوں کو ورغلاتے ہوئے کہا کہ 5 سالوں مےں مودی حکومت نے پاکستان مےں 3بار اےئرسٹرائےک کی ہے، 2کی تفصےلات تو مےں نے دے دی ہےں اور اےک کی مےں نہےں دے سکتا۔ ےعنی ےہ بتانے کی کوشش کی جارہی ہے کہ بھارت کے لےے مودی کی قےادت کس قدر م¶ثر ہے کہ اس نے دشمن کے گھر مےں گھس کر اسے مات دی جبکہ دنےا جانتی ہے کہ سچائی اس کے بالکل برعکس ہے۔ اگر اتنی ہی کامےاب اےئرسٹرائےک تھی تو پھر بھارتی حکومت نے فضائےہ کے سےنئر آفےسر وےسٹرن اےئر کمانڈر چےف اےئر مارشل سی ہری کمار کو عہدہ سے کےوں برطرف کےا؟ انہےں تو شاباش دےنی چاہےے تھی۔
مذکورہ بالا باتوں کے تناظر مےں ےہ بات واضح ہے کہ بھارت کی ہٹ دھرمی، جذبہ خےر سگالی کے تحت ابھی نندن کو رہا کرنے کے باوجود جوں کی توں برقرار ہے۔ بھارت کے ارادے اچھے نہےں اس بات کی تصدےق اسٹاک ھوم انٹرنےشنل پےس رےسرچ انسٹی ٹےوٹ کی اس رپورٹ سے ہوتی ہے کہ بھارت روس، اسرائےل، امرےکا اور فرانس سے دھڑا دھڑ اسلحہ کی خرےداری کر رہا ہے اور بھار ت نے مزےد 140اےٹمی ہتھےاروں کا ذخےرہ بھی کر لےا ہے۔ مودی نے پلوامہ حملہ اور سرجےکل اےئر سٹرائےک کے ڈرامے کو حقیقی رنگ دےنے اور عالمی سطح پر پروپےگنڈا کے لےے چند بھارتی چےنلز کو خرےد کر ان کی حماےت حاصل کی کےونکہ جب تک عوام کی رضامندی حاصل نہ ہوجنگ کا تصور بھی ممکن نہےں۔ بھارتی مےڈےا جو کہ صحافت کے قانون سے ناواقف ہے، حقائق کو توڑ مروڑ کر اور اپنی من پسند رائے کی تشرےح و شعبدہ بازی کے ذرےعے بھارتی عوام کو بے وقوف بنا رہا ہے۔ ”ہر ہر مودی، گھر گھر مودی“ کی تروےج و اشاعت کے لےے چند بکا¶ نےوز چےنلز اپنی پسند کے سروے کروا رہے ہےں۔
قارئےن نفسےاتی جنگ کا مقصد ےہ بھی ہوتا ہے کہ لوگوں کو برے عمل پر اکساےا جائے۔ لوگوں کی رغبت اور وابستگی کو بڑھاےا جائے ےا پھر حقائق کو ےوں بےان کےا جائے کہ عوام خودبخود منطقی نتائج تک پہنچ جائےں۔پروپےگنڈے اور نفسےاتی جنگ کے ذرےعے سے دشمن کو اس وقت تک پست حوصلہ اور کمزور نہےں کےا جاسکتا جب تک معیاری پروپےگنڈا نہ کےا جائے۔ بھارتی میڈیا کے پراوپیگنڈہ کے جواب میں 50فیصد باشعور بھارتی عوام جب ثبوت مانگتے ہےں اور انہےں کوئی ثبوت مہےا نہےں کےا جاتا تو وہ جان چکے ہےں کہ چوکےدار (مودی) ہی چور ہے۔ اس نے اےئر سٹرائےک ووٹروں ہی کو لبھانے کے لےے کی اور 50 فیصد ان پڑھ عوام کو نےوز اےنکرز نے اپنے سحر مےں جکڑ رکھا ہے۔ بھارتی عوام کو سچائی پر مبنی حالات و واقعات سے اتنا دور رکھا جاتا ہے جتنا مشرق و مغرب!۔ مثال کے طور پر مقبوضہ کشمےر مےں نہتے مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے جارے رہے ہےں۔ دہشت گردی کے نام پر مسلمان کشمےرےوں کے قتلِ عام سے ان کی نسل کشی کی جارہی ہے، خواتےن کی عزت و عصمت تک محفوظ نہےں، معصوم بچوں کو پےلٹ گن کے ذرےعے اندھا کےا جا رہا ہے۔ اس بات کی تصدیق امرےکی اخبار واشنگٹن پوسٹ نے کی کہ بھارت انتہا پسندی پر اتر آےا ہے لےکن بھارتی عوام کو ےہ باور کرواےا جارہا ہے کہ کشمیری بھارت کے ساتھ وابستگی چاہتے ہےں، حالانکہ حقیقت اس کے برعکس ہے۔ بھارت حرےت رہنما¶ں سےد علی گےلانی، ےاسےن ملک و دےگر کو علیحدگی پسند اور دہشت گرد کہتا ہے۔ 13مارچ کو بھارتی عوام کے سامنے بے بنیاد اور حقائق کے برخلاف چند دستاوےزات جاری کی گئےں جن مےں درج تھاکہ کس کس حرےت رہنما کے اکا¶نٹ مےں کس سال کتنی رقم ”پتھرباز دہشت گردوں“ کی سپورٹ کے لےے فراہم کی گئی۔ ان دستاوےزات کی مضحکہ خےز بات تو ےہ ہے کہ اگر 2015ءمےں بقول بھارتی مےڈےا کے ”ٹےرر فنڈنگ“ کی تھی تو ےہ تفصےلات 2019ءمےں ہی کےوں منظرِ عام پر لائی گئےں جبکہ الےکشن مےں محض 27دن باقی رہ گئے ہےں۔ 9مارچ کو سری نگر مےں جھوٹی پاسنگ آ¶ٹ پرےڈ کروائی گئی اور دنےا کو دکھانے کی کوشش کی گئی کہ 152 نوجوان کشمےرےوں نے بھارتی فوج مےں شمولےت اختےار کر لی ہے اور تقرےب مےں ان کی مائےں بھی تھےں۔
قارئےن ملاحظہ کےجئے کہ کس قدر پروپےگنڈا کےا جارہا ہے کہ پروپےگنڈے کو بھی شرم آجائے۔ کچھ روز قبل بھارت کے ایک چےنل نے ےہ خبر عوام مےں سنسنی پےدا کرنے کے لےے نشر کی کہ چےن پاکستان کے ساتھ ملکر 2019ءاور 2020ءکے درمےان کسی بھی وقت بھارت پر حملہ کرسکتا ہے۔ بھارتی فوج کی انٹیلی جنس کو ےہ خفےہ رپورٹ موصول ہوئی ہے اور چند گھنٹوں کے بعد ےہ خبر وےب مےڈےا سے ختم کر دی گئی۔ گوےا پاکستان کے خلاف مکمل طو رپر عوام کو برانگےختہ کےا جارہا ہے۔ آئے روز کی پاک بھارت چپقلش کا واحد حل مسئلہ کشمےر ہے مگر بھارت اس مےں بھی حےلہ سازی سے کام لے رہا ہے۔ کشمیری نوجوانوں کو ٹارگٹ کلنگ کےا جارہا ہے۔ بھارت نہاےت عےاری سے مقبوضہ کشمےر مےں غےر کشمےرےوں کو لاکر آبادی کا توازن بگاڑنے کی کوشش کر رہا ہے کہ جب عالمی دبا¶ پر رےفرنڈم ہو تو بھارت کے حق مےں ووٹ زےادہ ہوں۔ بلاشبہ گمراہ کن نشرےات بھارتی مےڈےا کا خاصہ ہےں۔ میری نظر مےں ہو سکتا ہے کہ اےسے بد دےانت صحافی اور چےنلز جو جانبداری کا ثبوت دےتے ہوئے مودی کے حق مےں مہم چلا رہے ہیں ان سے متاثر ہو کر بھارتی عوام مودی کو حکومت کی باگ تھما دےں مگر ایسا کر کے وہ بھارت کے مستقبل اور خطے کے امن کو دا¶ پر ضرور لگا دےں گے۔
(کالم نگارمختلف موضوعات پرلکھتی ہیں)
٭….٭….٭


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved