تازہ تر ین

مودی کے نام ایک خط!

سجادوریا……..گمان
پاکستان اور بھارت کے درمیان جاری حالیہ کشیدگی سے اس خطہ میں امن وامان کو شدید خطرات لاحق ہو گئے ہیں۔ بھارت میں اگلے ماہ شروع ہونیوالے انتخابات میں اپنی کامیابی یقینی کیلئے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے فروری کے اواخر میں پاکستان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی تو ہماری بہادر فضائیہ نے انڈین سورماﺅں کو مار بھگایا۔ اس کے بعد ہمارے شاہینوں نے بھارت کے دو طیارے مار گرائے اور ایک پائلٹ گرفتار کر لیا جسے بعدازاں رہا کر دیا گیا۔ خطہ کی موجودہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے میرا دل چاہ رہا ہے کہ نریندر مودی کو ایک خط لکھوں جس کا متن کچھ اس طرح ہو۔ ” نمستے ،مودی جی۔آپ کا شکریہ کہ آپ نے مجھے موقع فراہم کیا کہ مےں آپ سے مخاطب ہو سکوں ۔رواےت اور دستور کے مطابق مجھے چاہئے تو ےہ کہ مےں آپ کو مطلع کروں کہ مےرے مزاج بالکل ٹھیک ہےں اور آپ سے آپکی خےریت درےافت کروں؟ ۔لےکن بُرا ہو میڈیا اور سوشل میڈیا کا کہ کوئی بھی بات چھپی نہیں رہنے دےتا ،ےہاں تک کہ بے عزتی والی بات بھی ٹویٹس کی زد مےں رہتی ہے۔عرض ہے کہ بے عزتی والی بات مےں نے اےسے ہی عادتاََ اور محاورةََ کی ہے آپ بالکل دل پہ نہ لیجئے گا۔اس لیے بتا رہا ہوں کہ اسی میڈیا نے ہی ےہ بات پھےلا دی ہے کہ آج کل آپ کے مزاج بہت برہم اور تلخ ہوئے جاتے ہےں۔سُنا ہے کہ آپ آج کل گرم پانےوں کی زد مےں ہےں ۔آپ کی اپوزیشن جماعتوں نے آپ کی جماعت پر اور آپ کی شخصیت پر ”سرجیکل اسٹرائیک“ کر رکھی ہے۔آپ اپنی صفائیاں پےش کر رہے ہےں اور منتےں کر رہے ہےں کہ ےقین کر لو ہم نے دہشت گردمارے ہےں لےکن کوئی ثبوت نہیں ہمارے پاس۔ مودی جی ،مےرا ’گمان ‘ ہے کہ آپ کا میڈیا ہی آپکی بے عزتی کروانے مےں پےش پےش ہے اور ےہ جو جنرل بخشی ہے بڑی مونچھوں والا ،اس کی اپنی عزت تو کوئی ہے نہیں ،آپ کو بھی چہار سُو رسوا کر کے رکھ دیا ہے۔کسی دن اس جنرل بخشی سے پو چھےں کہ جنرل صاحب جب کارگل مےں دُشمن کو بھسم کرنے کا وقت تھا ،تب تم نے کچھ کیا نہیں اور تم پوری بریگےڈ سمےت بنکرز کے اندر ہی ’باتھ روم‘ کرتے تھے ،باہر ہی نہیں نکلتے تھے ،اب تمہاری بڑھکےں ہی ختم نہیں ہوتیں ؟مودی جی ےہ باتھ روم والی بات بھی اس مونچھوں والے شخص نے ہی بتائی ہے ٹی وی پر۔ مودی جی‘ مےرا خط آپ کے نام ہے،آپ حےران تو ہونگے کہ پاکستان کا اےک معمولی پتر کا ر اور قلمکار آپ اےسے مہا اوردبنگ نےتا کے نام خط لکھنے کی جسارت کےسے کر سکتا ہے؟اور اس خط مےں آپکا دھنے وات کر نا چاہتا ہے ؟مجھے پورا ’وشواس ‘ہے کہ ہمارے وزیرخارجہ شاہ محمود قرےشی کے بقول ” سُشما جی“مےرا ےہ خط ضرور آپ تک پہنچا نے کا بندوبست فرمائےں گی۔کبھی مجھے شک ہوتا ہے کہ ’سُشما جی‘ کہیں مےرا خط وزارتِ خارجہ کی ڈاک کے ڈھےر مےں ہی نہ بھول جائےں۔’سشما جی ‘مجھے بہت شاطر محسو س ہوئی ہےں کےونکہ مجھے اےسے لگا جن دنوں پاکستان کے ساتھ ”گُھس کے مارےں گے“اور ” ابھی نندن“ سیریز کھےلی جا رہی تھی ،ان دنوں سشما سوراج کا بےانیہ ڈانواں ڈول دکھائی دے رہا تھا۔عالمی سطح پر وہ کہہ رہی تھیں کہ بھارت جنگ نہیں کرے گا جبکہ اپنے میڈیا پر وہ پاکستان کو للکار رہی تھیں۔مودی جی ،مےرا خط اگر آپ تک پہنچ جائے تو مےری اےک عرضی ضرور ہے آپ کی خدمت مےں۔ مےں کہنا ےہ چاہتا ہوں کہ مہربانی فرما کر’ سشما جی ‘کو ہٹا کر سمرتی اےرانی کو اگر وزیر خارجہ لگا دےں تو بہت ہی بہتر ہوگا ۔ دراصل مےں کہنا ےہ چاہتا ہوں کہ67سالہ سشماجی جب میڈیا پر آکر اس بُڑھاپے مےں پاکستان کو للکارتی ہےں تو بہت ےہ منظر ہی تکلیف دہ بن جاتا ہے جب کوئی بات کرنے والا بات بُری کر رہا ہو ۔پنجابی مےں کہاوت ہے کہ ”منہ نہ چنگا ہووے تے ،گل ای چنگی کر لو“ےعنی سُشما جی پر ےہ محاورہ معذرت کے ساتھ عرض بہت جچتا ہے ۔اس لئے مےں گزارش کر رہا ہوں کہ پاکستان کے لئے تو بھارت سے کوئی خےر کی خبر آنی ہی نہیں اس لئے کم از کم کو ئی اچھا چہرہ ہی وزارت خارجہ مےں لگا دےں ،تاکہ کچھ تو کرکرا پن کم ہو سکے۔مےں اُمید رکھتا ہوں کہ آپ ہماری اس ’ معصومانہ ‘خواہش کا ضرور خےال رکھےں گے ۔
ہاں ،سمرتی اےرانی کا ذکر آےا تو مےں بھول ہی گےا کہ مےں نے جن اقدامات کے لئے شکریہ ادا کرنے کے لئے خط لکھا ہے وہ بھی آپکی خدمت مےں گوش گزار کر دوں۔مودی جی ،ہمارے ملک مےں فتنہ پےدا ہو گےا تھا ،وہ فتنہ چند سےاسی جماعتوں اورسےاسی لیڈروں کی شکل مےں اور بعض بے چارے نمک خو ار دانشوروں کی شکل مےں، ریاستی اداروں کے خلاف سرگرم تھا۔ مودی صاحب آپ کے ”گھس کے مارنے “والے اقدام نے دراصل ان بےچاروں کو گُھس کے مار دیا ہے۔پُوری قوم ان فتنہ پروروں پر لعنت بھےج کرپاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہو گئی ہے۔پاکستانی قوم مسلسل کئی سالوں سے جنگ بُھگت رہی ہے ،کچھ اپنوں اور غےروں نے فوج کے بارے مےں فتنہ پرور خےالات کو ترویج دے رکھی تھی لےکن آپ کا شکرےہ کہ آپ نے موقع فراہم کر دیا کہ مےری افواج نے خود کو نہ صرف قوم کی نظروں مےں سُرخرو کیا بلکہ عالمی سطح پر بھی اپنی دھاک بٹھائی ۔پاک فضائیہ،پاک بحریہ اور بری فوج نے اپنی صلاحیتوں کا لوہا منواےا۔پوری قوم کا مورال بلند ہے اور اندرونی فتنہ پردازوں کو جگہ نہیں مل رہی کہ شرمندگی چھپا سکےں۔ےہی کہتے نظر آئے کہ اب اچھا جواب دیا افواج نے ،جو کل طنزیہ کہہ رہے تھے کہ بھارتی جہاز آئے تھے تو گئے کےوں؟۔
مےں آخر مےں عرض کر وں کہ پاکستان کی قوم جو معاشی بد حالی دور کرنے مےں مصروف تھی ،عالمی سطح پر اپنی ساکھ بہتر بنانے مےں مشغول تھی ،آپ نے اور ابھی نندن نے موقع فراہم کر دیا کہ پاکستان عالمی سطح پر اےک ذمہ دار رےاست کے طور پر اُبھرا ہے۔آپ کا شکریہ۔ہاں ،وہ ابھی نندن کا بھی شکریہ ادا کرنا ہے کہ وہ ہمارے مہمان بنے۔آپ بھی کبھی آئیے ،ہم مہمان نواز ی کرےں گے ۔کیا ہوا اگر نوازشریف جےل مےں ہےں، میرے خیال میں شہباز شریف اور مرےم نواز ،پوری طرح خاطر داری کرےں گے۔
مےں ذاتی طور پر بھی ”امن کی آشا“ کا حامی رہا ہوں ،لےکن آپ کی حرکتےں دےکھ کر ےقین ہو گےا ہے کہ مےری فوج نے آپ کے ناپاک ارادوں کو خاک مےں ملا دیا ہے۔مےں پاک فوج اور اپنی خفیہ ایجنسیوں کو سلےوٹ پےش کرتا ہوں کہ انہوں نے پاکستان کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے ،پاک فوج کی کامےابےوں نے آپ کے سینے پر مونگ دلی ہے۔ آپ جیسے اےک طاقتور عالمی حماےت ےافتہ دشمن کو اےسے بھسم کیا کہ اپنے ہی زخم چاٹتا رہ گےا۔مےں تو کہتا ہوں کہ آپ آئندہ انتخابات میں کامیابی حاصل کر لیں کیونکہ آپکی پانچ سالہ حکومت نے بھارت مےں نفرت کے عمل کو تےز کیا ہے ،اگلے پانچ سالوں مےں کشمیر ،مشرقی پنجاب اور ہندو مسلم فسادات سے بھارت بربادی کی طرف جائے گا۔ےہ کام آپ کے علاوہ کوئی اور نہیں کر سکتا “۔
(کالم نگارقومی اور بین الاقوامی ایشوز پرلکھتے ہیں)
٭….٭….٭


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved