All posts by asif azam

https://www.facebook.com/asif.azam.33821

ادویات کے گودام میں لگی آگ بے قابو

کراچی (ویب ڈیسک) کراچی میں ڈینسو ہال کے قریب ادوایات کے گودام میں اچانک آگ بھڑک اٹھی۔ آگ لگنے کی اطلاع ملتے ہی فائر بریگیڈ کی گاڑیاں اور امدادی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں۔ عمارت سے تمام افراد کو نکال لیا گیا ہے۔ فائر بریگیڈ کی چھ گاڑیاں آگ بجھانے میں مصروف ہیں جبکہ مزید گاڑیوں کو بھی طلب کر لیا گیا ہے۔ ریسکیو حکام کا کہنا ہے کہ تنگ گلیوں کے باعث امدادی کاموں میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ صورتحال کے باعث ایم اے جناح روڈ کو ٹریفک کے لئے بند کر دیا گیا ہے۔ ٹریفک پولیس نے شہریوں کو متبادل راستہ استعمال کرنے کی ہدایت کی ہے۔ آگ نے بجلی کے تاروں کو بھی لپیٹ میں لے لیا۔ قریب ہی واقع کیمیکل گودام کے لپیٹ میں آنے کا بھی خدشہ ہے۔

ملکی تاریخ کا سب سے بڑا قبضہ سکینڈل پکڑا گیا

لاہور (خصوصی رپورٹ) ملکی تاریخ کا سب سے بڑا اراضی سکینڈل بے نقاب‘ فرضی عدالتوں کے جعلی فیصلوں کے ذریعے زمینوں کی خریدوفروخت میں اربوں روپے کا فراڈ کیا گیا۔ جعلساز گروہ صوبائی دارالحکومت میں کئی شہریوں کی لاکھوں کنال اراضی ہڑپ کر چکا۔ معلوم ہوا ہے کہ شہر کے علاقہ سمن آباد کا رہائشی ارشد چودھری اس گروہ کا سرغنہ ہے۔ وہ اور اس کا گروہ عدالتوں کے جعلی فیصلے تیار کرنے میں مہارت رکھتا ہے۔ اس مافیا نے کئی شہریوں کی لاکھوں کنال اراضی کے کاغذات میں ردوبدل کر کے انہیں جائیدادوں کی ملکیت سے محروم کر دیا۔ ایسا ہی ایک شہری سعیدباری ہے جس کی 3800کنال اراضی کی ملکیت اس گروہ نے جعلسازی سے تبدیل کر دی۔ اسے حقیقت کا علم تب ہوا جب اراضی فروخت کرنے کیلئے متعلقہ پٹواری سے رجوع کیا تو بتایا گیا کہ اس کی اراضی دہائیوں پہلے دوسروں کے نام منتقل ہو چکی ہے جبکہ اس سلسلہ میں کئی عدالتی فیصلے بھی موجود ہیں‘ چنانچہ جب تصدیق کیلئے عدالت سے رجوع کیا گیا تو ماجرا کچھ اور ہی نکلا۔ سامنے یہ آیا کہ اس ساری جعلسازی کے پیچھے ارشد چودھری اور اس کا گروہ کام کر رہا ہے جبکہ انہوں نے عدالتوں کے کم از کم 50سال پہلے کے جعلی فیصلے تیار کر رکھے ہیں۔ اکثر فیصلوں میں ارشد مدعی اور اس کا ساتھی ولی محمد مخالف فریق ہوتا جبکہ بعض فیصلوں میں ولی محمد مدعی اور ارشد مخالف فریق ہوتا تھا‘ نیز ہر جعلی فیصلے میں فریقین کے رہائشی پتے کویت کے درج تھے۔ جعلی فیصلے تیار کرتے ہوئے اس گروہ سے ایسی غلطی سرزد ہو گئی جس کی وجہ سے وہ منظرعام پر آ گیا۔ گروہ نے 1962ءکا ایک ایسا جعلی فیصلہ تیار کیا جس میں عدالت کی جانب سے مدعی کو ہدایت کی گئی کہ وہ داد رسی کیلئے ایل ڈی اے سے رجوع کرے حالانکہ ایل ڈی اے کا قیام ہی اس فیصلے کے 13سال 1975ءمیں عمل میں آیا تھا۔ذرائع کے مطابق اس نے جعلسازی کیخلاف مقدمہ درج کرانے کی کوشش بھی کی مگر کہیں بھی شنوائی نہ ہوسکی اور اب اپنی ہی جائیداد کی ملکیت ثابت کرنے کیلئے 4سال سے عدالتوں کے چکر لگانا پڑ رہے ہیں۔علاوہ ازیں ارشد چودھری کا ایک جھوٹ ایسے بھی پکڑا گیا کہا اس نے ایک سول جج سلمان نبی کے جج بننے سے 2ماہ پہلے ہی کا کا دستخط شدہ فیصلہ بھی تیار کرلیا، ملزم نے یہ دھندہ 14سال پہلے شروع کیا جبکہ اب تک ایک لاکھ 93ہزار کنال زمین کی ملکیت سے متعلق فیصلوں کا انکشاف ہوچکا،تاہم نجانے ایسے کتنے فیصلے اس گروہ کے پاس اب تھی موجود ہیں۔ مزید برآں ایک اور شہری میاں آفتاب بھی اسی گروہ کا نشانہ بنے، ان کی والدہ کی 200کنال زمین جعلی فیصلوں کے ذریعے ہڑپ کرنے کی کوشش ہوئی، 2000ءمیں انہیں جعلسازی کا علم ہوا تو مشکلات کا ایک لمبا سلسلہ چل نکلا ،میاں آفتاب نے سول عدالت سے رجوع کیا مگر 16سال گزر گئے فیصلہ ابھی تک نہیں ہوا اور زمین کی مالکن بھی انتقال کرچکی ہیں۔جعلی عدالتی فیصلوں سے کمائی کا گورکھ دھندہ ایسا کہ نقل پر اصل کا گمان گزرتا ہے۔سارے فراڈ میں اہم کردار اراضی سے متعلقہ علاقے کا پٹواری بھی ادا کرتا تھا، چنانچہ جب اپراٹی کا اصل مالک اسے فروخت کرنے کی کوشش کرتا تو ملزم ارشد اور اس کا گروہ جعلی عدالتی فیصلہ لیکر اس اس پٹواری کے پاس جاپہنچتا، یوں سودا کھٹائی میں پڑجاتا، کیونکہ جعلساز عدالتی فیصلہ کے ذریعے یہ دعویٰ کرتے کہ اصل مالک وہی ہیں اور اگران کی مرضی کیخلاف پراپرٹی فروخت کی گئی تو وہ سب کو عدالت لے جائیگا، ایسے میں اصل مالک کے پاس منہ مانگی قیمت دیکر جعلی دستاویزات خریدنے کے سوا کوئی چارہ ہی نہ رہتا۔

وہی ہوا جس کا ڈر تھا….ایشوریا رائے کی خودکشی….بچن خاندان پر قیامت ٹوٹ پڑی

ممبئی (ویب ڈیسک) بالی ووڈ کی معروف اداکارہ اور امیتابھ بچن کی بہو سابقہ مس ورلڈ ایشوریہ رائے نے گھریلو ناچاقیوں سے تنگ آ کر خود کشی کی کوشش کی ہے، بھارتی میڈیا کے مطابق ایشوریا نے نیند کی گولیاں کھا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرنے کی کوشش کی لیکن بروقت طبی امداد سے ان کی جان بچا لی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق اس خبر کو میڈیا میں جانے سے روکنے کے لئے بچن فیملی کی طرف سے بھرپور کوشش کی گئی حتیٰ کہ ڈاکٹروں کو بھی گھر پر ہی بلایا گیا او ان سے یہ خبر ظاہر نہ کرنے کی اپیل کی گئی۔ ڈاکٹروں کی ٹیم میں شامل ایک ڈاکٹر نے ویب سائٹ کو نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر بتایا کہ انہیں بچن فیملی کی طرف سے کہا گیا کہ ایشوریہ نے غلطی سے خواب آور گولیوں کی زیادہ مقدار کھا لی ہے۔ ڈاکٹرز کے مطابق ابھی تک ایشوریا رائے کی حالت تشویشناک ہے اور ڈاکٹروں نے ان سے ملاقات پر پابندی عائد کر دی ہے۔ ڈاکٹر کے مطابق ایشوریہ کا معدہ صاف کر کے انہیں بمشکل ہوش میں لایا گیا تاہم نیم ہوش میں آنے پر وہ اپنی ساس جیا بچن کے خلاف پھٹ پڑیں اور روتے ہوئے کہا کہ مجھے مر جانے دیں، اس زندگی سے مر جانا ہی بہتر ہے۔ بچن فیملی نے اس خبر کی سختی سے تردید کی ہے اور کہا ہے کہ ایسا کچھ نہیں ہوا۔

”مشیر خارجہ سرتاج عزیر کو بھارت نہیں جا ناچاہیے“ معروف صحافی ضیا شاہد کی چینل ۵ کے پروگرام میں گفتگو

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) چینل ۵ کے تجزیوں اور تبصروں پر مشتمل پروگرام ”ضیا شاہد کے ساتھ“ میں گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی اور تجزیہ کار ضیا شاہد نے کہا ہے کہ مشیر خارجہ سرتاج عزیز کو بھارت میں ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں جانے کا کوئی حق حاصل نہیں ہے۔ بھارت کنٹرول لائن پر ہماری ایمبولینس، بسوں، کھیتوں میں کام کرنے والے محنت شوں، بچوں، بوڑھوں اور خواتین کو فائرنگ سے مار رہا ہے۔ پاکستان کے ساتھ ہر قسم کے مذاکرات کرنے سے انکار کر چکا ہے تو ہماری حکومت کے اندر ان کی اتنی محبت کیوں پھوٹ رہی ہے۔ بھارت نے ہر قسم کے مذاکرات نہ کرنے کا کہہ دیا ہے تو سرتاج عزیز کو وہاں جانے کی کیا ضرورت ہے۔ بھارت نے سارک کانفرنس کا بائیکاٹ کیا صرف ہم ہی رہ گئے ہیں کہ وہ ہمیں اشارہ بھی کرے تو ناچتے کودتے وہاں چلے جائیں۔ مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا بھارت جانا بڑی غلطی ہو گا جب تک بھارت پاکستان سے مذاکرات کے لئے حامی نہ بھرے ہمیں ہرگز ہر گز کسی صورت بھارت میں کسی کانفرنس میں شرکت نہیں کرنا چاہئے۔ بھارت تو پاکستان کا پانی بند کر کے پیاسا مارنے کی دھمکیاں دے رہا ہے۔ سرتاج عزیز کو چاہئے کہ اگر بھارت جانا ہی ہے تو ایک بوتل میں پانی ساتھ لے جائیں جانے وہاں انہیں پانی دیا جائے یا نہیں۔ سینئر صحافی نے کہا کہ کافی عرصہ سے دیہاتوں سے آبادی تیزی سے شہروں میں منتقل ہو رہی ہے۔ کئی برسوں سے مردم شماری کرانے کا مطالبہ کیا جا رہا ہے تا کہ نئی حد بندی حلقہ بندیاں ہوں اور آبادی کے لحاظ سے ممبران اسمبلی کی تعداد کا تعین کیا جا سکے۔ عدالت نے مردم شماری کرانے کے حوالے سے بڑا زبردست فیصلہ کیا ہے۔ اس سے قبل بلدیاتی الیکشن بھی عدالت نے ہی کرائے لیکن آج تک بلدیاتی نمائندے اختیارات کے لئے مارے مارے پھر رہے ہیں۔ اب بھی شاید ایسا ہی ہے اور عدالت تو مردم شماری کرانے کا حکم دے گی اور حکومت پھر کوئی ڈنڈی مارے گی کیونکہ اس کا مردم شماری کرانے کا کوئی ارادہ نظر نہیں آتا۔ پیپلز پارٹی پنجاب کے سیکرٹری انفارمیشن مصطفی نواز کھوکھر نے کہا کہ پاکستان میں بائیں بازو کی ترقی پسند جماعت صرف پیپلزپارٹی ہے۔ ماضی کی مقبول ترین پارٹی اس وقت مشکل حالات سے گزر رہی ہے لیکن اب سینئر لیڈر شپ نے کتھارسس کیا اور اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ نئے خیالات کے ساتھ ایک نئی پیپلزپارٹی سامنے لائی جائے گی۔ تحریک انصاف دوبار بڑی ناکامی سے دوچار ہوئی جس کے باعث اس کے سینئر رہنما اور کارکن مایوسی کا شکار ہیں۔ پیپلزپارٹی ان حالات کا فائدہ اٹھائے گی۔ تنظیم سازی کے بعد ان لوگوں کو سامنے لائے ہیں جن پر کوئی داغ نہیں ہے۔ پی پی کا یوم تاسیس ایک کانفرنس تھی اس لئے محدود تعداد میں کارکنوں کو بلایا گیا۔ اگلے سال 50 ویں یوم تاسیس پر مینار پاکستان پر بڑا جلسہ کریں گے۔ آصف زرداری پہلے صدر تھے جنہوں نے اختیارات منتقل کر دیئے 18 ویں ترمیم سے صوبوں کو طاقتور بنایا۔ سندھ میں تبدیلی کیلئے وزیراعلیٰ کو تبدیل کیا گیا۔ پانامہ ملک کی تاریخ کا سب سے بڑا مالی سکینڈل ہے۔ ہم ن لیگ کو ڈیموکریٹک احتساب کی جانب لا رہے ہیں۔ چیئرمین بلاول کے دیئے 4 مطالبات نہ مانے گئے تو 27 دسمبر سے احتجاج شروع کر دیں گے۔ ہمارا احتجاج پی ٹی آئی جیسا نہیں ہو گا کہ مگر یہ پش اپس لگاتے رہے اور کارکن انتظار کرتے رہ گئے۔ ہمارا ایک جیالا دس آدمیوں کے برابر ہے۔ سی پیک پر تمام صوبوں کو برابر حصہ ملنا چاہئے نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب میں آپریشن نہیں کرنے دیا گیا۔ بلاول بھٹو مکمل خود مختار ہیں۔ پیپلزپارٹی تحریک انصاف کی طرح اشاروں پر چلنے والی جماعت نہیں ہے۔

ڈالر گرل کے خواب بکھر گئے, سکون آور دواﺅں کااستعمال

کراچی(خصوصی رپورٹ) ایان علی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کے کیس کا فیصلہ ججوں کے اختلافی نوٹ کے باعث چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کو بھجوادیا گیاسندھ ہائی کورٹ میں ماڈل ایان علی کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی عدالت کی جانب سے محفوظ کیا جانے والا فیصلہ اختلافی نوٹ کی صورت میں آیا جہاں ایک معزز جج نے ایان علی کی پٹیشن کو منظور جبکہ دوسرے نے مسترد کرنے کا فیصلہ دیا دونوں ججوں کے فیصلوں میں اختلاف کے باعث معاملہ چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کو واپس بھجوادیا گیا جس پر چیف جسٹس تیسرے جج کوبطور ریفری جج کے طور پر نامزد کرینگے اور ریفری جج کا فیصلہ حتمی سمجھا جائے گا۔واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے ماڈل ایان علی کا نام ای سی ایل سے خارج کرنے سے متعلق تمام درخواستیں نمٹاتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ کو ماڈل گرل کی درخواست پر جلد فیصلہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔

الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف سے بڑا مطالبہ کردیا, رہنماءپریشان

اسلام آباد (آئی این پی) الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کو حکم دیا ہے کہ مالی حسابات، غیرقانونی ذرائع سے بیرون ملک سے رقوم کی وصولی اور مبینہ مالی بے ضابطگیوں سے متعلق تمام دستاویزات آئندہ تاریخ سماعت 16جنوری سے قبل پیش کی جائیں، حکم عدولی کی صورت میں قانونی کاروائی کا سامنا کرنا ہوگا۔ پی ٹی آئی کو برطانوی لائیڈزاکاﺅنٹس سے متعلق ثبوت بھی پیش کرنے کاحکم دیاگیا ہے جسے اسلام آباد لاک ڈاﺅن کے موقع پر بیرون ممالک فنڈز جمع کرنے کے لئے مشتہر کیاگیاتھا۔ چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) سردار رضاخان کی سربراہی میں قائم الیکشن کمیشن کے بینچ نے جمعرات کو یہ حکم تحریک انصاف کے بانی راہنما اکبر ایس بابر کی جانب سے دائر کردہ پٹیشن کی سماعت کے دوران جاری کیا۔ اکبر بابر جو پارٹی کے مرکزی سیکریٹری اطلاعات رہے ہیں، نے نومبر2014ءمیںالیکشن کمشن میں پٹیشن دائر کی تھی جس میں پی ٹی آئی کے مالی امور میں بڑے پیمانے پر گھپلوں، خوردبرد،پارٹی لیڈروں اور ملازمین کے نجی بینک کھاتوںمیں رقوم کی منتقلی،غیرقانونی ذرائع سے بیرون ممالک سے رقوم کی فراہمی جیسے الزامات عائد کئے گئے تھے۔ اکبربابر کے وکیل سید احمد حسن نے کمیشن کے روبرو موقف اختیار کیاکہ پی ٹی آئی کا وکیل بدھ کے روز بھی اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیش نہیں ہوا ۔ہائیکورٹ میں یہ پٹیشن پی ٹی آئی نے ا لیکشن کمشن کی کاروائی رکوانے اور حکم امتناعی کے حصول کے لئے دائر کی ہوئی ہے لیکن مختلف حیلے بہانے اور تاخیری حربے اختیار کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ الیکشن کمشن کی جانب سے پی ٹی آئی کو مقدمہ میں متعلقہ دستاویزات پیش کرنے کا حکم دیاگیا تھا جس پر ایک سال گزرنے کے باوجود عمل درآمد نہیں کیاجارہا اور پی ٹی آئی یہ دستاویزات پیش نہ کرکے اس حکم کی مسلسل خلاف ورزی کررہی ہے۔ انہوں نے کمشن کی توجہ دلاتے ہوئے موقف اپنایا کہ ایک طرف مقدمہ میں کاروائی زیرالتواءہے تو دوسری جانب پی ٹی آئی کی جانب سے غیرقانونی ذرائع سے فنڈز جمع کرنے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ فنڈز جمع کرنے کے لئے برطانوی لوئیڈزبینک اکاﺅنٹ مشتہر کیاگیا جسے الیکشن کمشن میں ظاہر نہیں کیاگیا۔ الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کو حکم صادر کیاکہ آئندہ تاریخ سماعت سے پہلے وہ تمام دستاویزات پیش کی جائیں جن کے بارے میں پٹیشنر کی استدعا پر حکم صادرکیاگیاتھا، حکم عدولی کی صورت میں پی ٹی آئی کو قانون کا سامنا کرنا پڑے گا۔ دریں اثناءالیکشن کمیشن کے باہر میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے پٹیشنر اکبر بابر نے بتایا کہ الیکشن کمیشن کے حکم کی روشنی میںعمران خان کے دستخطوں سے امریکہ میں بنائی جانے والی دو آف شورلمیٹڈ لائیبیلیٹیز کمپنیوں(یو ایس اے ایل ایل سیز5975 اور 6160 )کی رجسٹریشن اور ٹرانسفر آف فنڈز کی دستاویزات طلب کی گئی ہیں جن کے ذریعے غیرقانونی غیرملکی 30 لاکھ ڈالر کی رقم حاصل کی گئی۔ اس کے علاوہ تحریک انصاف کے اُن ملازمین کے بینک اکاﺅنٹس کی تفصیل بھی شامل ہے جن میں کروڑوں روپے کے غیرملکی غیرقانونی فنڈزہنڈی کے ذریعے آئے اور کوئی ریکارڈ نہ ہونے کی وجہ سے ہڑپ کرلئے گئے جس کی نشاندہی سالانہ آڈٹ رپورٹ میں اور پٹیشنر نے کی تھی۔ انہوںنے بتایا کہ الیکشن کمیشن نے برطانوی لوئیڈزبینک اکاﺅنٹس کے بارے میں ثبوت بھی فراہم کرنے کا حکم دیا ہے جسے مبینہ طورپر دونومبر2016ءکو اسلام آباد لاک ڈاﺅن کے حوالہ سے بین الاقوامی فنڈز جمع کرنے کے لئے استعمال کیاگیا۔ پی ٹی آئی کی آڈٹ رپورٹس میں اس بینک اکاﺅنٹ کو ظاہر نہیں کیاگیا تھا۔ چیف الیکشن کمشنر نے جمعرات کو سماعت کے دوران ریمارکس میں کہاکہ اس مقدمے میں تاخیر کی ذمہ دار ی پی ٹی آئی پر عائد ہوتی ہے۔ انہوں نے تحریک انصاف کے وکیل کو مخاطب کرکے کہاکہ بلاجواز تاخیر سے پی ٹی آئی اپنی مدد نہیں کررہی۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے پی ٹی آئی اکاﺅنٹس کی پڑتال پر کارروائی روکنے کے لئے کوئی حکم جاری نہیں کیالیکن اس کے باوجود الیکشن کمشن میں کاروائی میں تاخیر برتی گئی۔ الیکشن کمشن کے وکیل کو یہ اختیار کبھی نہیں دیاگیا کہ وہ پی ٹی آئی اکاﺅنٹس کی پڑتال کا عمل معطل کرنے کے لئے اسلام آباد ہائیکورٹ میں کوئی زبانی یقین دہانی کرائے۔ چیف الیکشن کمشنر نے کہاکہ کمشن نے حال ہی میں تمام بڑی سیاسی جماعتوں کے اکاﺅنٹس کی جانچ پڑتال کا عمل شروع کیا ہے۔ پڑتال کا یہ عمل پولیٹکل فنڈنگ سیکشن کے تحت کیاجارہا ہے جسے حال ہی میں الگ سے قائم کیاگیا ہے۔ اکبر بابر نے میڈیا کو بتایا کہ غیرملکی فنڈنگ کیس میں یہ ایک بڑی پیش رفت ہے اور قانون کے تحت سیاسی جماعتوں کو نظم میں لانے لانے کے لئے ایک مثال ثابت ہوگی۔

نواز شریف‘ ٹرمپ کے درمیان ٹیلی فون رابطہ ‘بھارت میں کھلبلی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مختلف ریاستوں کے سربراہان میں رابطے اور کسی کی کامیابی پر مبارکباد دینا‘ ایک دوسرے کیلئے نیک خواہشات کا اظہارمعمول کی بات ہے لیکن پاکستان کی طرف سے وزیراعظم نواز شریف اور امریکہ کے منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے درمیان رابطے کے اعلامیہ پر دنیا بھر کا میڈیا حیران رہ گیا‘ اس کی وجہ شاید اعلامیہ میں بتائی جانیوالی باتیں تھیں۔ حکومت پاکستان کی طرف سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا کہ وزیراعظم نوازشریف نے ڈونلڈٹرمپ کو ٹیلی فون کیا اور کامیابی پر مبارکباد دی، ٹرمپ کا کہناتھاکہ وزیراعظم نواز شریف‘ آپ کی بہت اچھی شہرت ہے ، آپ لاجواب آدمی ہیں،آپ حیران کردینے والا کام کر رہے ہیں جو دکھائی دیتاہے ، میں جلدآپ سے ملنے کا خواہاں ہوں ، جیسا کہ میں وزیراعظم آپ سے بات کر رہا ہوں تو ایسے لگتاہے کہ ایک ایسے شخص سے بات کر رہا ہوں جسے لمبے عرصے سے جانتاہوں، آپ کے ملک میں زبردست مواقع ہیں، پاکستانی ذہین ترین لوگوں میں سے ہیں ، میں تیار ہوں اور آپ کی خواہش پر کسی بھی مسئلے میں اپنا کردار اداکرسکتاہوں،یہ ایک اعزاز ہوگا اور میں ذاتی طور پر یہ کروں گا، صدر کی ذمہ داریاں سنبھالنے یعنی 20 جنوری سے قبل بھی آپ کی جب مرضی آئے ، کال کرسکتے ہیں۔ دونوں رہنماں کے درمیان ہونیوالی گفتگو کامتن سامنے آتے ہی دنیا بھر کے میڈیا میں ہلچل مچ گئی اور واشنگٹن پوسٹ نے لکھا کہ پاکستانیوں کی کھلے دل سے تعریف ڈونلڈ ٹرمپ کا بڑا یوٹرن ہے کیونکہ 2012ءمیں ٹرمپ پاکستان کو برا بھلا کہہ چکے ہیں، نواز شریف کو اس طرح ملک میں بھی پسند نہیں کیاجاتا جتنی ٹرمپ نے تعریفیں کیں، اسے کرپشن اور پاناماپیپرز کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے ۔ نیوز ویب سائٹ Vox نے لکھا کہ یہ سمجھنا مشکل ہے کہ کچھ پاکستانی بیوروکریٹ ٹرمپی لائنز بنارہے ہیں جیساکہ پاکستانی دنیا کے ذہین ترین لوگوں میں سے ایک ہیں۔ جس کے بارے میں سوچنا چاہیے کہ کم ذہین لوگ کون ہیں، اس کا مطلب اس کے سواکچھ نہیں کہ ٹرمپ کی مسلمانوں پر پابندی کی پالیسی کے تحت ان سب سے زیادہ ذہین لوگوں کاامریکہ داخلہ بند ہوجائے ۔

لیفٹیننٹ جنرل اشفاق ندیم، لیفٹیننٹ جنرل جاوید اقبال رمدے کاریٹائرمنٹ سے متعلق اہم فیصلہ آگیا

لاہور (سیاسی رپورٹر) ملتان کے کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل اشفاق ندیم کے بارے میں چند روز سے افواہیں پھیل رہی تھیں کہ وہ اپنے بیج میٹ لیکن جونیئر لیفٹیننٹ جنرل قمر باجوہ کے آرمی چیف بننے کے بعد فوجی روایات کے مطابق قبل از وقت ریٹائرمنٹ لیکر اپنی ذمہ داری چھوڑ دیں گے جبکہ بہاولپور کے کور کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل جاوید اقبال رمدے جو موجودہ آرمی چیف جنرل قمر باجوہ کے بیج میٹ بھی ہیں اپنے دوستوں اور بہی خواہوں اور خود نئے آرمی چیف کی خواہش کے مطابق اپنی سروس جاری رکھیں گے۔ لیفٹیننٹ جنرل اشفاق ندیم کے حوالے سے ملتان میں تو یہ خبریں گردش کرنے لگی تھیں کہ شاید ان کے لئے الوداعی تقریب کا بھی اہتمام کیا جا رہا ہے۔ جس کے لئے انہوں نے اسلام آباد سے واپسی پر حتمی فیصلہ کرنا تھا تاہم تازہ ترین اطلاعات کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ پاک بھارت سرحد اور کنٹرول لائن پر کشیدگی کے باعث دونوں نے یہ فیصلہ کیا کہ وہ اس نازک موقع پر پاک فوج کو نہیں چھوڑیں گے اور اپنی خدمات جاری رکھیں گے۔ یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ آرمی کے سابق اور ریٹائرڈ افسروں کی اکثریت نے بھی جو کسی نہ کسی مرحلے پر ان دونوں کے بیج میٹ رہے ہیں انہیں تسلسل کے ساتھ یہی مشورہ دیا تھا کہ ملکی حالات کا تقاضا ہے کہ وہ پاک فوج سے ریٹائرمنٹ نہ لیں۔ جبکہ وہ اصولی طور پر اگست 2017ءتک یہ خدمات انجام دے سکتے ہیں۔

اہم پاکستانی شخصیت کو بھارت جانے کی اجازت, وزیراعظم نے ہدایات جاری کردیں

اسلام آباد، مظفرآباد (نامہ نگار خصوصی) وزیراعظم نواز شریف نے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کو ہارٹ آٰف ایشیا کانفرنس میں شرکت کے لیے بھارت جانے کی ہدایت کردی۔میڈ یا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم ہاوس میں مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے نواز شریف سے ملاقات کی جس میں انہوں نے وزیراعظم کو ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کے لیے مجوزہ دورہ بھارت پر بریفنگ دی۔ اس موقع پر وزیراعظم نے سرتاج عزیز کو ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں پاکستان کی نمائندگی کی ہدایت دی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں پاکستان خطے کی سیکیورٹی کو در پیش چیلنجز کا معاملہ اٹھائے گا اور مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے مناسب اقدامات کرنے پر بھی بات کی جائے گی۔ وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے متاثرےن لائن آف کنٹرول کے لےے 10)کروڑ 51 لاکھ روپے کی مالی امداد کی منظوری دے دی وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف نے لائن آف کنٹرول پر بھارتی فائرنگ سے شہید ہونے والے(39)شہداءکے لیے ( 03)کروڑ( 90)لاکھ روپے ، شدید زخمی معذو ر ہونے والے( 128)افراد کےلئے (02)کروڑ(56)لاکھ روپے ، گولہ باری سے مکمل طور پر تباہ ہونے والے(04)مکانوں کے مالکان کےلئے (40)لاکھ روپے اور جزوی طور متاثر ہونے والے( 73)مکانوں کے مالکان کےلئے( 03)کروڑ(65)لاکھ روپے ، کل رقم (10)کروڑ( 51)لاکھ روپے کی مالی امداد کی منظوری دیتے ہوئے مطلوبہ رقم حکومت آزاد کشمیر کے حوالے کر دی ہے ۔ حکومت پاکستان کی جانب سے اضافی ملنے والی اس مالی امداد سے (39)شہداءکے ورثاءکو فی کس (10)لاکھ روپے ، شدید زخمی معذور ہونے والے( 128)زخمیوں کو فی کس( 02)لاکھ روپے اور مکمل طور پر تباہ ہونے والے( 04)مکانات کے مالکان کو فی کس( 10)لاکھ روپے ، جزوی طور پر تباہ ہونے والے (73)مکانوں کے مالکان کو فی کس( 05)لاکھ روپے مالی امداد دی جائےگی۔ یہ مالی امداد اس مالی امداد کے علاوہ ہوگی جو قبل ازیں حکومت آزاد کشمیر متاثرین کو دے رہی ہے۔ وزےر اعظم محمد نواز شرےف نے 3دسمبر کو لاہور میں میئر ،ڈپٹی میئر، چیئر مین میونسپل کمیٹےوں ، ٹاﺅن کمیٹےوںاور ضلع کو نسلوںکے امےدواروں کا اجلا س طلب کر لیا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں امےدواروں کے انٹروےو واور نا مزدگےا ں زےر اعظم خود کرینگے وزےر اعظم نے یہ فیصلہ پنجاب میں بلدےاتی انتخابات میں مسلم لیگ (ن) بڑھتی ہو ئی دھڑے بندےوں کے با عث کیا ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ بلدےاتی انتخابات کی مخصوص نشستوں پر وزےر اعظم کو لا علم رکھتے ہو ئے وزےر اعلیٰ پنجاب کے صاحبزادے ایم این اے حمزہ شہباز شرےف نے مخصوص نشستوں پر پنجاب کے20سے زائد اضلاع کو اوپن کردےا گےا تھا جس کی وجہ سے پارٹی کے اندر دھڑے بندی شدت اختےار کر گئی تھی جس کا وزےر اعظم محمد نواز شرےف نے نو ٹس لیا اور دھڑے بندےو ں کی خبروں پربرہمی کا اظہار کیا اورپارٹی ذمہ داران کو ہدایت کی کہ ارکان قومی وصوبا ئی اسمبلی کو بےا ن با زی سے روکا جا ئے اور ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنےوالوں کےخلاف پا رٹی آئین کے مطابق کارروائی کی جائے۔ وزیراعظم محمد نوازشریف سے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے جمعرات کو یہاں ملاقات کی ۔ وزیراعظم آفس کی طرف سے جاری بیان کے مطابق ملاقات کے دوران قومی سلامتی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ذرائع کے مطابق وزیر اعظم محمد نواز شریف وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے خیریت دریافت کی۔وزارت پانی وبجلی نے چشمہ ایٹمی پاورپلانٹ 3کی آزمائشی پیداوار کا کامیاب ٹیسٹ کامیابی سے مکمل کر لےا ‘ وزیر اعظم نواز شریف چشمہ پاور پلانٹ کا افتتاح کریں گے۔ذرائع کے مطابق چشمہ ایٹمی پاور پلانٹ 3 کی آزمائشی پیداوار کا ٹیسٹ مکمل کر لیا گیا ہے جس کے بعد اس پلانٹ سے رواں ماہ سے 340 میگا واٹ بجلی ملنا شروع ہو جائے گی ذرائع کا کہنا ہے کہ سیفٹی اقدامات کے بعد چشمہ 3سے بجلی ملے گی اور وزیر اعظم نواز شریف چشمہ پاور پلانٹ کا افتتاح کریں گے ۔پلانٹ چائنہ نیشنل نیوکلیئر کارپوریشن کے تعاون سے مکمل کیا گیا ہے جس پر 85فیصد سرمایہ کاری چین نے کی ہے ۔

وزیراعلیٰ پنجاب کی وزیراعلیٰ سندھ سے ملاقات, اندرونی کہانی سامنے آگئی

لاہور ( اپنے سٹاف رپورٹر سے + ایجوکیشن رپورٹر) وزیر اعلیٰ محمد شہباز شریف سے سندھ کے وزیراعلیٰ سید مراد علی شاہ نے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور صوبوں کے مابین تعلقات کو مزےد فروغ دےنے کے حوالے سے تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں وزرائے اعلیٰ نے بین الصوبائی ہم آہنگی کومزےد فروغ دینے پر اتفاق کیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو آگے لے جانے کیلئے ”ہم“ کی روش پر چلنا ہوگا۔ ذاتی انا اور ”میں“ کی روش نے ملک وقوم کا بے پناہ نقصان کےا ہے لہذا اب وقت آ گیا ہے کہ ہم تمام اختلافات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے وطن عزیز کی خوشحالی اور استحکام کیلئے کام کریں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان چار اکائیوں کےساتھ گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر پر مشتمل ہے اور ملک تبھی ترقی کرے گا جب چاروں اکائیاں ترقی کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب نے مل کر ملک کی ترقی اور خوشحالی کیلئے کام کرنا ہے۔ پاکستان ہم سب کا ہے اور وطن عزیز کو مل کر سنوارنا ہے اور قومی یکجہتی اور بھائی چارے کی فضا کو مل کر فروغ دینا ہے۔ا نہوںنے کہا کہ سندھ مےں بسنے والے ہمارے بھائی ہےں ۔ پنجاب حکومت نے اپنے تعلیمی پروگراموں میںسندھ، خیبرپختونخوا، بلوچستان، آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کے طلبا و طالبات کو بھی شامل کیا ہے جس سے قومی ےکجہتی اور ےگانگت کے ساتھ بھائی چارے کو فروغ مل رہا ہے۔ وزےراعلیٰ پنجا ب نے کہا کہ ہم سب نے اتحاد و اتفاق کے راستے پر چلتے ہوئے پاکستان کو مضبوط بنانا ہے اور اس مقصد کے حصول کےلئے ذاتی مفادات کو چھوڑ کر قومی مفادات کو ترجےح دےنا ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بھی پاکستان کے چاروں صوبے اور وفاقی حکومت مکمل ہم آہنگی کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں، بلاشبہ اجتماعی بصیرت سے کئے گئے فیصلے اور مشترکہ کاوشیں رنگ لائیں گی اور انشاءاللہ پاکستان امن و سلامتی کا گہوارہ بنے گا۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا اور انہیں گلدستہ بھی دیا۔ بعدازاں وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے سندھ کے وزیراعلیٰ کو ائیرپورٹ پر رخصت کیا۔ سید مراد علی شاہ نے پرخلوص میزبانی پر وزیراعلیٰ پنجاب کا شکریہ ادا کیا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ عوام کو معیاری طبی سہولتوں کی فراہمی یقینی بنانے کیلئے ہیلتھ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم بنیادی اہمیت کا حامل ہے اور اس جدید نظام کے ذریعے ہسپتالوں میں مریضوں کے علاج میں بہت بہتری آئے گی۔ سرکاری ہسپتالوں میں ہیلتھ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم لگانے کے پروگرام کو تیزی سے آگے بڑھانا ہوگا۔وزےراعلیٰ نے ہیلتھ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے پروگرام کو آگے بڑھانے کیلئے کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے جامع سفارشات جلد پیش کی جائیں۔وہ آج یہاں ہیلتھ کئیر سیکٹر کے کورین ماہرین کی جانب سے ہیلتھ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے بارے میں بریفنگ دینے کے حوالے سے اجلاس سے خطاب کر رہے تھے۔وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کو طبی سہولتوں کی فراہمی کیلئے جامع پروگرام پر عمل پیرا ہیں اور صحت کے شعبے کی بہتری کیلئے انقلابی اقدامات کئے جا رہے ہیں اور اسے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دکھی انسانیت کی خدمت عبادت سے کم نہیں اور اسی جذبے سے ہم طبی شعبے کی بہتری کیلئے تیزی سے آگے بڑھ رہے ہیں۔ دکھی انسانیت کے زخموںپر مرہم رکھنے کیلئے جس قدر وسائل بھی درکار ہوں گے مہیا کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہیلتھ کئیر سسٹم کے حوالے مطلوبہ نتائج حاصل کرنے کیلئے سب کو مل کر کام کرنا ہوگا۔اجلاس میں کورین ماہرین نے ہیلتھ مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے بارے میں تفصےلی بریفنگ دی۔صوبائی وزراءخواجہ سلمان رفیق، خواجہ عمران نذیر، مشیر ڈاکٹر عمر سیف، وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی، متعلقہ سیکرٹریز اور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما سینیٹر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عبدالقیوم نے ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم محمد نوازشریف کی قیادت میں ملکی مسائل کے حل کیلئے کی جانے والی مخلصانہ کاوشیں رنگ لا رہی ہیں او رملک تیزی سے ترقی و خوشحالی کی راہ پر گامزن ہے۔انہو ںنے کہا کہ چائنہ پاکستان اکنامک کوریڈور پاکستان سمیت خطے کی ترقی اور خوشحالی کا عظیم منصوبہ ہے جس کے ثمرات سے پورا پاکستان مستفید ہوگااورمختلف ممالک کی سی پیک میں دلچسپی خوش آئند ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے مظفرگڑھ کے پسماندہ گاﺅں سے تعلق رکھنے والے پوزیشن ہولڈر نابینا طالب علم عامر شہزاد اور اس کے خاندان کیلئے 10 لاکھ روپے مالی امداد کا اعلان کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے نابینا طالب علم عامر شہزاد کی قابلیت،محنت اورذہانت کو سراہتے ہوئے کہا کہ حکومت عامر شہزاد کے تمام تعلیمی اخراجات بھی اس کے علاوہ خود برداشت کرے گی جبکہ10لاکھ روپے کی مالی امداد عامر شہزاد اوراس کے خاندان کی دےکھ بھال کےلئے ہوگی۔