All posts by asif azam

https://www.facebook.com/asif.azam.33821

جنوبی پنجاب کے ارب پتیوں نے لمبا مال کمالیا

ملتان (خصوصی رپورٹ) ملتان کے دو بڑے صنعتی گروپ کے مالکان کی دبئی سمیت یورپین ممالک میں جائیدادیں موجود ہیں، ذرائع کے مطابق جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے ایک ہزار سے زائد افراد جن میں سیاسی شخصیات، صنعتکار اور زمیندار شامل ہیں نے دبئی سمیت دیگر ممالک میں قیمتی فلیٹس اور دیگر جائیدادیں خرید رکھی ہیں، تحقیقاتی اداروں نے ائیرپورٹس سے مسلسل ایک ملک کیلئے سفر کرنے والے افراد کی فہرست بھی تیار کی ہے جن کے بارے میں بیرون ملک کاروبار ہونے کا شبہ ہے جو چھپایا جارہا ہے۔

صارفین ریحام خان پر ٹوٹ پڑے مگر کیوں؟

لاہور (نیٹ نیوز) وزیراعظم عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان نے گزشتہ روز سماجی رابطوںکی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کیا کہ وزیراعظم ہاﺅس سے ہدایات دی جارہی ہیں کہ معروف اینکرز جو حکومتی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہیں ان کو نکال دیا جائے۔ ریحام خان کی ٹویٹ کے بعد صارفین نے ان کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔ ان کے ٹویٹ کے جواب میں فواد نامی صارف نے لکھا کہ اس کو مرض لاجواب ہے۔ سمیرا خان نے لکھا کہ اس بیچاری کو شریفوںنے ٹیشوپیپر کی طرح استعمال کرکے پھینک دیا ہے۔ انیلا قاضی نے لکھا کہ ریحام خان کو چین نہیں آرہا اس لیے وہ بوکھلا گئی ہیں۔ ایک صارف نے ریحام خان کو مشورہ دیتے ہوئے لکھا کہ کوئی اچھا بندہ ڈھونڈ کر شادی کر لو تاکہ عمران خان آپ کے ذہن سے نکل جائے۔ ایک صارف نے تو یہاں تک لکھ دیا کہ کوئی علامہ خادم رضوی سے ریحام خان کی شادی کروادے۔

ھم جنس پرستی نصاب میں شامل

جنیو (خصوصی رپورٹ) سکاٹ لینڈ کے سکولوں میں ہم جنسی پرستی کی تعلیم دی جانے لگی۔ بعض سنجیدہ حلقوں نے تنقید کرتے ہوئے اس منصوبے کو فوری بند کرنے کا مطالبہ کردیا ہے۔ ابھی واضح نہیں کس عمرکے بچوں کو یہ تعلیم دی جارہی ہے لیکن یہ تصدیق ہوگئی کہ بچوں کو سلیبس میںشامل مضمون پڑھائے جارہے ہیں۔

بیوی کو بلیک میل کرنے والا گرفتار کیسے ہوا؟دلچسپ خبر

گوجرانوالہ (نیااخبار رپورٹ) ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ نے گجرات میں کارروائی کرتے ہوئے بیوی کی نازیبا ویڈیوز بنا کر بلیک میل کرنے والے شوہر کو گرفتار کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق ملزم نے سعودی عرب میں مقیم لڑکی سے سوشل میڈیا پر دوستی کی تھی‘ لڑکی گجرات آئی تو دونوں نے گھر والوں کو بتائے بغیر شادی کرلی۔ شادی کے بعد ملزم نے بیوی کی ویڈیوز بنائیں اور بلیک میل کرنا شروع کردیا۔ ایف آئی اے کے مطابق ملزم بیوی کو نامعلوم شخص بن کربلیک میل کرتا اور ویڈیو اپ لوڈ کرنے کی دھمکی دیتا تھا۔ ملزم نے بیوی سے لاکھوں روپے بٹورے۔ تنگ آکرلڑکی نے گھر والوں کو بتا دیا۔ ایف آئی اے نے ملزم کو گرفتار کیا تو ملزم خاتون کا شوہر نکلا۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر ایف آئی اے کے مطابق ملزم کے موبائل سے بیوی کی ویڈیوز برآمد کر لی گئیں۔

پارکوںسڑکوں پر ایسی تقریب کی پابندی لگ گئی ،کہ جان کرہرشہری کو جھٹکا لگ گیا

لاہور (خصوصی رپورٹ) پبلک پارکس میں شادی کی تقریبات کا معاملہ، سینئر وزیر عبدالعلیم خان کا نوٹس، پارکوں میں شادیوں پر ضلع حکام اور پی ایچ اے کو فوری کارروائی کرنے کے احکامات جاری کر دیے۔ سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان نیڈ پٹی کمشنر اور ڈی جی پی ایچ اے کو ہدایات جاری کی ہیں کہ پارکوں میں شادیوں پر ضلعی حکام اور پی ایچ اے فوری کارروائی کریں، عبدالعلیم خان کے مطابق عوامی مقامات کی خوبصورتی خراب نہیں ہونی چاہیے، سینئر وزیر نے کہا کہ پودوں اور گھاس کو نقصان پہنچانا کسی طور پر درست نہیں، پارکوں میں تقریبات کے انعقاد پر پابندی کے فیصلے پر عملدرآمد کرایا جائے۔ عبدالعلیم خان کا کہنا تھا کہ ادارے اپنی ذمہ داریاں پورکی کریں، کسی جگہ سڑک بند کر کے یا پارک میں شادی کی تقریب خلاف قانون ہے۔ قومی املاک کو نقصان پہنچانے والے مرتکب افراد کو گرفتار کر کے بھاری جرمانہ کیا جائے گا ۔

65شرفاءکے کھاتے کھل گئے،چونکا دینے والے انکشافات

کراچی (خصوصی رپورٹ) نیب نے اب تک 65سیاسی رہنماﺅں اور سرکاری افسران کے خلاف تحقیقات کی ہیں جن میں 19کا تعلق سندھ سے، 19کا خیبرپختونخوا سے، 18کا پنجاب سے اور 9کا بلوچستان سے ہے۔ ان سیاسی رہنماﺅں کا تعلق کچھ یوں ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے 16، پاکستان مسلم لیگ ن کے 10، پاکستان مسلم لیگ ق کے 5، متحدہ قومی موومنٹ کے 4، پاکستان تحریک انصاف کا ایک، پاکستان مسلم لیگ ف کا ایک، جمعیت علمائے اسلام کا ایک، ایک آزاد، عوامی نیشنل پارٹی کا ایک اور بلوچستان نیشنل پارٹی کا ایک عہدیدار شامل ہے۔ نیب کی سپریم کورٹ میں جمع کروائی گئی فہرست کے مطابق سندھ کے افراد میں پہلے نمبر پر وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا ہے۔ ان پر الزام ہے کہ انہوں نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال کرکے Stevta میں غیرقانونی بھرتیاں کیں، ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔ بابر غوری نے کے پی ٹی میں غیرقانونی بھرتیاں، ریفرنس دائر، وہ مفرور ہیں۔ ڈاکٹر عاصم حسین، ریفرنس دائر، تحقیقات جاری، عبوری ضمانت پر ہیں۔ سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی نے ناجائز اثاثے اور غیرقانونی بھرتیاں کیں، تحقیقات جاری ہیں۔ وزیرداخلہ سہیل انور سیال آمدنی سے زائد اثاثے، ان کے خلاف بھی تحقیقات جاری ہیں۔ سابق وزیر رﺅف صدیقی نے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا، ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔ شرجیل انعام میمن کے خلاف ریفرنس دائر، جیل میں ہیں۔ میئر کراچی وسیم اختر کے ایم سی فنڈز میں خوردبرد، تحقیقات جاری ہیں۔ سابق وزیر جام خان شورو کرپشن اور پلاٹوں کی غیرقانونی الاٹمنٹ، تحقیقات جاری ہیں، سابق وزیر اعجاز جاکھرانی کے خلاف اثاثوں کی تحقیقات جاری۔ سابق وزیر لیاقت جتوئی کے اثاثوں کی تحقیقات جاری۔ سابق ممبر صوبائی اسمبلی پیر صبغت اللہ راشدی کے غیرقانونی پلاٹوں کی الاٹمنٹ‘ تحقیقات جاری۔ سابق چیف سیکرٹری سندھ صدیق میمن کے غیرقانونی پلاٹوں کی الاٹمنٹ، تحقیقات جاری۔ سابق آئی جی سندھ غلام حیدر جمانی کرپشن اور کرپٹ پریکٹیسز اور غیرقانونی بھرتیاں، ریفرنس دائر، عبوری ضمانت پر ہیں۔ سابق وزیر نواب محمد تیمور تالپور آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی منظور قادر کاکا کے خلاف ریفرنس دائر، ملک سے فرار۔ سابق وزیر منظور وسان آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ خیبرپختونخوا سے پہلے نمبر پر سابق وزیراعلیٰ پرویز خٹک اختیارات کا ناجائز استعمال اور ہیلی کاپٹر کیس، غیرقانونی الاٹمنٹ، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر امیر مقام آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعظم کی مشیر عاصمہ عالمگیر اور ان کے خاوند ارباب عالمگیر خان، آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعلیٰ اکرم درانی اختیارات کا ناجائز استعمال، تحقیقات جاری۔ مرید کاظم کے خلاف ریفرنس دائر، تحقیقات جاری۔ مسلم لیگی رہنما کیپٹن ریٹائرڈ محمد صفدر آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سنیٹر عثمان سیف اللہ 34 آف شور کمپنیوں کے مالک، تحقیقات جاری۔ سابق پرائم منسٹر سیکرٹری اعظم خان اختیارات کا ناجائز استعمال، تحقیقات جاری۔ سابق وفاقی سیکرٹری نعیم خان، توانا پاکستان کرپشن سکینڈل کا ریفرنس دائر، سابق آئی بی کے پی کے ملک نوید ریفرنس دائر، پلی بارگیننگ کا عمل جاری۔ سابق وفاقی سیکرٹری طارق حیات خان کے خلاف ریفرنس دائر۔ سابق چیف سیکرٹری امجد علی خان کا اختیارات کا ناجائز استعمال، تحقیقات جاری۔ سابق مشیر برائے چیف مسٹر سکندر عزیز ریفرنس دائر، عبوری ضمانت پر ہیں۔ سابق وزیر صاحبزادہ محمود زیب اختیارات کا ناجائز استعمال، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر شیراعظم ریفرنس دائر۔ کمشنر برائے افغان تارکین وطن ضیاءالرحمن کرپشن اور کرپٹ پریکٹیسز، تحقیقات جاری۔ سابق مشیر ملک قاسم آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ پشاور کے ناظم عاصم خان آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق سیکرٹری حفیظ الرحمن کرپشن اور کرپٹ پریکٹیسز، تحقیقات جاری۔ بلوچستان سے سابق وزیراعلیٰ اسلم خان رئیسانی آمدنی سے زائد ثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعلیٰ سردار ثناءاللہ زہری آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق مشیر خالد لانگو کرپشن، تحقیقات جاری۔ سابق سیکرٹری مشتاق رئیسانی 67کروڑ کی کرپشن، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر اسفند یار بھاری خوردبرد، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر محمد عاصم کرد کرپشن، تحقیقات جاری۔ سابق ایم ڈی پی ٹی سی ایل میر شاہجہان کھیتران غیرقانونی بھرتیاں، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر سعادت انور اختیارات کا ناجائز استعمال، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر رحمت بلوچ آمدنی سے زاثد اثاثے، تحقیقات جاری۔ پنجاب سے سابق وزیراعظم نوازشریف ریفرنس دائر، ضمانت پر ہیں۔ حمزہ شہباز اور سلمان شہباز کرپشن اور آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعظم شوکت عزیز اختیارات کا ناجائز استعمال اور آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعظم پرویزاشرف 12ریفرنس دائر، ضمانت پر ہیں۔ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی ریفرنس دائر، ضمانت پر ہیں۔ سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیراعلیٰ شہبازشریف آشیانہ ہاﺅسنگ میں گرفتار ہیں۔ سابق وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر اسحاق ڈار آمدنی سے زائد اثاثے، تحقیقات جاری، مفرور ہیں۔ سابق وزیر خواجہ سعد رفیق، پیراگون/آشیانہ سکیم انکوائری، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر خواجہ آصف منی لانڈرنگ، تحقیقات جاری۔ سابق وزیر شوکت ترین ریفرنس دائر، ملک سے باہر ہیں۔ سابق وزیر رانا مشہود احمد پنجاب سپورٹس بورڈ میں کرپشن، تحقیقات جاری۔ حنیف عباسی کرپشن، جیل میں ہیں۔ علیم خان کرپشن، تحقیقات جاری۔ سابق سٹاف آفیسر برائے وزیراعظم ذوالفقار بخاری آف شور کمپنی، تحقیقات جاری۔ سابق ایف بی آر چیئرمین عبداللہ یوسف، سلمان صدیقی اور علی ارشد حلیم اختیارات سے تجاوز، تحقیقات جاری اور سابق وزیراعظم کے پرنسپل سیکرٹری فواد حسین فواد آشیانہ اقبال کیس، جیل میں ہیں۔

ویڈیو لیک کا معاملہ: وزیراعظم نے وزیراعلیٰ، گورنر اور اسپیکر کو طلب کرلیا

لاہور (ویب ڈیسک ) وزیراعظم نے گورنر پنجاب کی شکایت سے متعلق ویڈیو لیک ہونے کے بعد وزیراعلیٰ اور گورنر سمیت اسپیکر پنجاب اسمبلی کو بھی اسلام آباد طلب کرلیا۔گزشتہ روز اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الٰہی کی رہائش گاہ سے ایک ویڈیو منظر عام پر آئی تھی جس میں مسلم لیگ (ق) کے رہنما اور وفاقی وزیر طارق بشیر چیمہ جہانگیر ترین سے گورنر پنجاب چوہدری سرور کی شکایت کررہے تھے۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے پنجاب حکومت میں اختیارات کے معاملے پر وزیراعلیٰ، گورنر اور اسپیکر کو اسلام آباد بلوایا ہے جس میں تینوں رہنماﺅں سے ویڈیو لیک کے سلسلے میں بات کی جائے گی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان پہلے ون ٹو ون تینوں رہنماﺅں سے ملاقاتیں کریں گے اور اتحادی جماعت (ق) لیگ کے گورنر پنجاب سے متعلق تحفظات کو دور کریں گے جب کہ پنجاب حکومت میں اختیارات کے توازن کو برقرار رکھنے کے لیے بھی بات کی جائے گی۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم سے ملاقات میں سینٹ انتخابات کی حکمت عملی بھی مرتب کی جائے گی۔

تقریب میں عارف علوی کی آمد پر پارٹی ترانے بجانے پر تنقید، ایوان صدر کی وضاحت

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی نجی تعلیمی ادارے کی تقریب میں شرکت کے دوران پارٹی ترانے بجائے جانے پر تنقید کے بعد ایوان صدر نے اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ صدر نے اس پر ناپسندیدگی کا اظہار کیا تھا۔واضح رہے کہ حال ہی میں اسلام آباد میں پاک-چائنا فرینڈ شپ سینٹر میں ایک نجی تعلیمی ادارے کی تقریب میں صدر عارف علوی نے شرکت کی تھی۔صدر مملکت جب تقریب میں پہنچے تو اس موقع پر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے نغمے بجائے گئے، جس کے بعد سوشل میڈیا پر تنقید کی گئی۔اس حوالے سے ترجمان ایوان صدر نے اپنے ردعمل میں کہا کہ ایوانِ صدر کو جو پروگرام بھیجا گیا تھا، اس میں ترانوں کا ذکر نہیں تھا۔ترجمان نے مزید کہا کہ اگر میزبان پارٹی ترانے بجانا شروع کردیں تو اس میں ایوان صدر کو ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔ترجمان کے مطابق صدر مملکت نے اپنے خطاب کے آغاز میں پارٹی ترانوں پر ناپسندیدگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اب ملک کے صدر ہیں اور ایسی چیزوں کی حوصلہ افزائی نہیں کرتے۔

شہر اقتدار کی بے حسی ، زخمی ممتا کی تصویر مدد کی منتظر ہی رہی

اسلام آباد  (ویب ڈیسک ) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی مارگلہ پہاڑیوں میں واقع دامن کوہ کے سیاحتی مقام کی جانب جانیوالی شاہراہ پر ایک بندریا تیزرفتار گاڑی کی زد میں آکر شدید زخمی ہوگئی۔ چہرے اور سر سے بہنے والےخون میں لت پت بندریا اپنے بچے کو گود میں لپٹائے ممتا کے جذبے سے سرشار سڑک کنارے بے بسی کی تصویر بنی رہی لیکن راہگیروں سمیت اسلام آباد میں جانوروں کے معالجین، جانوروں کیلئے کام کرنیوالی سماجی تنظیموں اور اسلام آباد انتظامیہ نے کوئی توجہ نہیں دی۔ زخمی بندریا اپنے بچے کو سینے سے چمٹائے سڑک کنارے پڑی تڑپتی رہی۔ ہمارا مذہب اسلام جانوروں سے بھی حسن سلوک کی تلقین کرتا ہے، مہذب ممالک میں اس طرح کے واقعہ کی صورت میں اسے فوری طبی امداد فراہم کی جاتی۔ بے حسی کے مظاہرے پر سوشل میڈیا میں بھی زبردست تنقید کی گئی۔ دامن کوہ کی جانب جانیوالی سڑک پر بہت سے بندر خوراک کی تلاش میں سڑک پر آجاتے ہیں جنہیں دیکھ کر سیاح اور بچے لطف اندوز ہوتے ہیں‘ انہیں پھل وغیرہ کھانے کو دیتے ہیں۔ گزشتہ روز وزیر مواصلات مراد سعید کے منسٹرز انکلیو میں واقع گھر میں بندروں نے یلغار کر دی تھی جس پر پولیس کو بلوایا گیاتھا۔

خاتون انصاف کیلئے ترس رہی ہے،71 سال گزر گئے سسٹم کو شرم آنی چاہئے،چیف جسٹس لاہورہائیکورٹ کے 71 سال پرانی جائیداد کیس میں ریمارکس

لاہور(ویب ڈیسک )چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس انوارالحق نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ایک خاتون انصاف کےلئے ترس رہی ہے،71 سال گزر گئے سسٹم کو شرم آنی چاہئے،تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس انوارالحق نے فاطمہ جناح میڈیکل کالج کی ڈاکٹر نازیفہ عثمان کی 71 سالہ پرانی 310 کنال زمین سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی،درخواست گزار کے وکیل نے عدالت کے رو برو موقف اختیار کیا کہ نازیفہ عثمان کے والد نے جالندھر سے پاکستان ہجرت کی تھی،نازیفہ عثمان کے والد نے 310 کنال زمین کا کلیم داخل کیا ،71سال گزرنے کے باوجود زمین نہیں ملی، عدالت سے استدعا ہے کہ زمین یا اس کے بدلے رقم ادا کی جائے۔سرکاری وکیل نے بتایا کہ عدالتی حکم کی تعمیل کےلئے سمری بھجوا دی گئی ہے، عدالت نے استفسار کیا کہ 45 روزمیں پبلک سیفٹی کمیشن کے قیام کے فیصلے پرعمل کیوں نہیں کیا؟۔چیف جسٹس انوار الحق نے ریمارکس دیئے کہ ایک خاتون انصاف کےلئے ترس رہی ہے،71 سال گزر گئے سسٹم کو شرم آنی چاہئے،ہم یہاں منصف اعلیٰ بن کے بیٹھے ہیں، چیف جسٹس نے ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل کو ہدایت کی پنجاب حکومت ایک ہفتے میں معاملہ حل کرے۔