All posts by mujahid raza

بورڈ افسران کا ڈرامہ بے نقاب

اسلام آباد (سپورٹس ڈیسک) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی)کے اعزازی عہدے رکھنے والے چیئرمین شہریار خان اور ایگزیکٹو کمیٹی کے سربراہ نجم سیٹھی سمیت دیگر افسران کا مراعات نہ لینے کا ڈرامہ بے نقاب ہو گیا ،وزارت بین الصوبائی رابطہ نے کرکٹ بورڈ کے بابوز کے تین سالوں کے دوران اٹھنے والے کروڑوں روپے کے غیر ملکی دوروں کی تفصیلات قومی اسمبلی میں پیش کر ڈالی۔ وزارت کی جانب سے پیش کی گئی دستاویز میں بتایا گیا کہ پی سی بی کے چیئرمین پی سی بی شہریار خان اور ایگزیکٹو کمیٹی کے سربراہ نجم سیٹھی سمیت دیگر با اثر افسران کے تین سالوں کے دوران بھارت، انگلینڈ، یو اے ای، سری لنکا سمیت دیگر غیر ملکی دوروں پر کروڑوں روپے اڑا ئے گئے لیکن کوئی غیر ملکی ٹیم پاکستان کا دورہ کر سکی نہ ہی انٹرنیشنل کرکٹ بحال ہو سکی۔ دستاویز کے مطابق پی سی بی کے با اثر عہدداران کیلئے کرکٹ بورڈ سونے کا انڈہ دینے والی مرغی بن گئی اور بورڈ نے نجم سیٹھی سمیت شہریار خان کے غیر ملکی دوروں پر کروڑوں روپے خرچ ڈالے اور ارباب اختیار کے دوروں کے باوجود ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ کی واپسی نہ ہو سکی۔نجم سیٹھی نے بطور پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین اور ایگزیکٹو کمیٹی کے سربراہ کی حیثیت سے تین سالوں میں 27غیر ملکی دورے کئے جن پر 1کروڑ 2لاکھ روپے خرچ کئے گئے اور ان دوروں کے دوران نجم سیٹھی نے ڈیلی الاونس کی مد میں 50لاکھ روپے بھی وصول کئے۔ شہریار خان کے بطور پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ کی حیثیت سے 11دوروں پر 55لاکھ خرچ کئے گئے جبکہ لاکھوں روپے ماہانہ تنخواہوں لینے والے بورڈ کے افسران بھی اس بہتی گنگا سے مستفید ہوتے ہوئے اور غیر ملکی دورے کرنے کی دوڑ میں پی سی بی کے چیف آپریٹنگ آفیسر سبحان احمد نمبر ون رہے ۔جن کے 32دوروں پر 87لاکھ روپے خرچ ہوئے۔ دستاویز کے مطابق جنرل منیجر انٹرنیشنل کرکٹ عثمان واہلہ کے بھی 23غیر ملکی دورو ں پر 1کروڑ3لاکھ روپے کے اخراجات آئے جبکہ جنرل منیجر لاجسٹک اسد مصطفی کے دوروں پر بھی 1کروڑ3لاکھ خرچ کئے گئے۔ پاکستان کرکٹ بورڈ نے ملک میں انٹرنیشنل کرکٹ نہ ہونے کے باوجود پی سی بی کے گورننگ بورڈ کے ممبران کو راضی رکھنے کیلئے انہیں 71لاکھ روپے کے غیر ملکی دورے کروا ڈالے جنہیں مختلف دوروں کے دوران آسٹریلیا،نیوزی لینڈ اور متحدہ عرب امارات بھیجا گیا جس کے تحت پی سی بی کے گورننگ بورڈ کے رکن منصور علی خان کے دورے پر 13لاکھ 72ہزار، شکیل شیخ کے دورے پر 7لاکھ 92ہزار، اعجاز فاروقی کے دورے پر 4لاکھ 74ہزار، اعجاز چوہدری کے دورے پر 17لاکھ 30ہزار، یوسف کھوکھر کے دورے پر 17لاکھ 48ہزاراور گل زادہ کے 5لاکھ 65ہزار شامل ہیں۔

فیس بک پر وزیر اعلیٰ کی قابلِ اعتراض تصاویر …. سیاسی حلقوں میں ہلچل

نئی دہلی(ویب ڈیسک )بھارتی پولیس نے بائیس سالہ راحت خان کو فیس ب±ک پر بھارتی ریاست اتر پردیش کے نومنتخب وزیر اعلیٰ یوگی ادتیاناتھ کی ’قابلِ اعتراض‘ تصویر پوسٹ کرنے کے جرم میں گرفتار کر لیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق نوجوان بھارتی شہری راحت خان نئی دہلی کے نواحی علاقے گریٹر نوئیڈا کا شہری ہے۔ راحت کو مقامی پولیس نے اتر پردیش کے نو منتخب وزیر اعلیٰ ادتیاناتھ یوگی کی ایک ’قابل اعترض‘ تصویر سوشل میڈیا نیٹ ورک فیس ب±ک پر پوسٹ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا۔اس بھارتی مسلمان شہری کے خلاف درخواست ادتیاناتھ کی بنائی ہوئی ہندو نوجوانوں کی ایک تنظیم نے جمع کرائی تھی۔

سلمان بٹ بارے آفریدی کا سخت بیان منظر عام پر

کراچی(ویب ڈیسک )پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے اسپاٹ فکسنگ کی سزا مکمل کرنے والے سابق کپتان سلمان بٹ کی ٹیم میں واپسی کی مخالفت کرتے ہوئے فکسنگ کرنے والے کھلاڑیوں کو مثالی سزا دینے پر زور دیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق شاہد آفریدی نے سلمان بٹ کی واپسی کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ اگر پہلے ہی مثال قائم کی جاتی تو حالیہ اسکینڈل سامنے نہ آتا اور اس فیصلے سے مستقبل میں کھلاڑی غیرذمہ داری کا مظاہرہ کرنے سے دور ہوں گے۔شاہد آفریدی نے پشاورزلمی کی نوجوان ٹیم کی حمایت کے لیے دبئی میں آئی سی سی اکیڈمی کا دورہ کیا اور ٹیم کے کوچ محمد اکرم اور انتظامیہ کی گزشتہ سال خیبر پختونخوا (کے پی) سے باصلاحیت کھلاڑیوں کے انتخاب پر تعریف کی۔شاہد آفریدی نے کہا کہ بڑے شہروں میں اکیڈمیز اور سہولیات موجود ہیں لیکن صوبے کے چھوٹے شہروں میں اس طرح کی سہولیات نہیں ہیں اس لیے کوچ اور انتظامیہ کو اس کا سہرا جاتا ہے کہ وہ دوافتادہ علاقوں کے باصلاحیت کھلاڑیوں تک پہنچ گئے۔دبئی میں ہونے والے ایمرٹس ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا کہ پشاورزلمی ایمرٹس ٹی ٹوئنٹی میں شرکت کرے گی اور ٹیم میں کھلاڑیوں کی اکثریت ان کی ہوگی جنھیں گزشتہ سال ٹیلنٹ ہنٹ کے دوران منتخب کیا گیا تھا۔انہوںنے کہاکہ کس کو معلوم کہ ان میں سے چند کھلاڑی جلد ہی قومی ٹیم کا حصہ بن جائیں۔

گرین شرٹس کیلئے آخری موقع …. کپتان پر امید

بارباڈوس(ویب ڈیسک )ویسٹ انڈیز اور پاکستان کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان چار ٹی ٹوئنٹی میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ اتوار کو کھیلا جائے گا۔ قومی کھلاڑیوں نے خوب پریکٹس کی۔گرین شرٹس نے مختصر فارمیٹ کی عالمی چمپئن ٹیم سے نمٹنے کیلئے خوب پسینہ بہایا، کوچز کا زور فیلڈنگ اور بیٹنگ پر زیادہ رہا۔پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے مابین اب تک ہونے والے ٹی ٹوئنٹی میچز میں جیت کے حوالے سے پاکستان کی ٹیم کا پلڑا بھاری ہے۔دونوں ٹیموں کے مابین 2011سے لے کر 2016تک دنیا کی مختلف گراﺅنڈز میں سات ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلے گئے جس میں سے پاکستان کی ٹیم نے پانچ اور ویسٹ انڈیزنے دو جیتے ہیں۔ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹی ٹوئنٹی میچز میں اب تک پاکستان کے تین کپتانوں سرفراز احمد ¾شاہد آفریدی اور محمدحفیظ نے کپتانی کی جس میں سے سرفراز احمد سب سے کامیاب کپتان رہے ¾ ان کی کپتانی میں ویسٹ انڈیز کے خلاف تین ٹی ٹوئنٹی میچز کھیلے گئے جس میں تینوں میں پاکستان نے کامیابی حاصل کی ۔قومی کرکٹ ٹیم دورہ ویسٹ انڈیز کے دوران چار ٹی ٹوئنٹی، تین ون ڈے اور تین ٹیسٹ میچز کی سیریز کھیلے گی ۔ اس سیریز کو پاکستان کی ورلڈ کپ تک رسائی کے لیے اہم قرار دیا جا رہا ہے۔کپتان سرفرازاحمد نے کہا کہ یہ دورہ ہمارے لیے بڑی اہمیت کا حامل ہے جہاں کامیابی کی صورت میں کوالیفائر کھیلے بغیر ورلڈ کپ میں جانے کی ہماری توقعات مزید مضبوط ہوں گی۔

25 سال پُرانی یادیں تازہ …. سابق پاکستانی کرکٹرز کے حیرت انگیز انکشافات

اسلام آباد(ویب ڈیسک )پاکستان کو پہلی بار عالمی چمپئن بنے آج 25 سال مکمل ہو گئے ہیں ¾25 مارچ 1992 وہ خوش قسمت دن تھا جب پاکستان کرکٹ کا فاتح عالم بنا۔تفصیلات کے مطابق پاکستان کو ورلڈ کپ جیتے 25 سال مکمل ہوچکے ہیں اور ورلڈ کپ کی سلور جوبلی منائی گئی ¾ورلڈ کپ 1992 ءمیں شریک کھلاڑیوں نے سلور جوبلی کے موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا۔اس موقع پر ورلڈ کپ کے فاتح کپتان عمران خان نے کہا کہ ورلڈ کپ کے آغاز سے پہلے سعید انور اور وقار یونس ان فٹ ہوگئے تھے اور دونوں کھلاڑیوں کے ان فٹ ہونے سے مشکلات پیدا ہوئیں۔عمران خان کا کہنا تھا کہ جاوید میانداد اور میں بھی پوری طرح فٹ نہیں تھے مگر ٹیم کی فائٹنگ سپرٹ کی داد دینا ہوگی کیونکہ دوسری ٹیمیں ہمت ہار جاتی ہیں اور ہم نے فتح سمیٹی۔جاوید میانداد نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ عالمی چمپئن بننا کسی بھی ملک کیلئے اعزاز کی بات ہے،ورلڈ کپ کی جیت قوم کے چہروں پر خوشی لے آئی تھی۔جاوید میانداد نے کہاکہ کسی بھی ملک کے لیے اس سے زیادہ فخر کی بات کیا ہوسکتی ہے کہ وہ کسی بھی کھیل میں عالمی چمپئن بنے۔ پاکستان ہاکی اور سکواش میں ورلڈ کپ ونر تھا جس کے بعد ہم نے کرکٹ میں بھی یہ مقام حاصل کیا جس سے اس کے وقار میں مزید اضافہ ہوا تھا۔ مجھے اچھی طرح یاد ہے کہ یہ جیت قوم کے چہرے پر خوشی لے آئی تھی۔ ہم کھلاڑی بھی خوش تھے کہ اس جیت نے دنیا کو یہ دکھادیا تھا کہ پاکستان کی کرکٹ اس معیار کی ہے کہ یہ عالمی کپ جیت سکتی تھی۔وسیم اکرم نے کہاکہ میرے لیے ورلڈ کپ کی یہ جیت کسی خواب کی تعبیر کی طرح تھی کہ ورلڈ کپ کے فائنل میں کوئی ایسی کارکردگی دکھاو¿ں جس سے کھیل کا نقشہ بدل جائے اور دنیا مجھے یاد رکھے اور لگاتار دو گیندوں پر دو وکٹوں نے وہ کردکھایا۔ آج طویل عرصہ گزرجانے کے باوجود کوئی بھی ان دو گیندوں کو نہیں بھلاسکا ہے ۔معین خان نے کہاکہ فائنل کا ٹرننگ پوائنٹ وسیم اکرم کی دو گیندوں پر ایلن لیمب اور کرس لوئس کی وکٹیں تھیں جس کے بعد ہمیں بہت زیادہ یقین ہوگیا تھاکہ ہم یہ ورلڈ کپ جیت جائیں گے اور کوئی بھی دنیاوی طاقت پاکستان کو اس جیت سے نہیں روک پائے گی ۔انضمام الحق نے کہاکہ میرے کیرئیر کا یہ ابتدائی دور ہی تھا اور آج پچیس سال گزرجانے کے باوجود ہر کوئی میری سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ کے خلاف ساٹھ رنز کی بات کرتا ہے حالانکہ میں نے اپنے ون ڈے کریئر میں گیارہ ہزار سے زیادہ رنز بنائے ہیں لیکن لوگ ان ہزاروں رنز کے بجائے اس ایک اننگز کو ابھی تک یاد رکھے ہوئے ہیں۔ دراصل آپ کی زندگی کے کچھ پہلو، کچھ حصے ایسے ہوتے ہیں جنہیں نہ آپ بھول سکتے ہیں نہ لوگ۔رمیز راجہ نے کہاکہ اہم کھلاڑیوں کا ورلڈ کپ سے پہلے ہی ان فٹ ہوجانا اور پھر ایک کے بعد ایک میچ ہارنا، ایسے میں پاکستانی ٹیم کا ورلڈ کپ کا جیت جانا کسی معجزے سے کم نہ تھا ۔عام طور پر جب ٹیم ہارتی ہے تو ڈریسنگ روم میں اس کے اثرات نمایاں دکھائے دیتے ہیں اور ٹیم بکھری ہوئی دکھائی دیتی ہے لیکن ورلڈ کپ میں ایسا بالکل نہیں ہوا جس کی ایک بڑی وجہ عمران خان کی لیڈرشپ تھی۔عاقب جاوید نے کہا کہ کپتان عمران خان نے صرف ایک ہی بات ہم تمام کھلاڑیوں سے کہی تھی کہ خوفزدہ ہوکر نہ کھیلیں خوف کے بغیر کھیلنے کے اسی سبق نے کھلاڑیوں کو ابتدائی میچز میں شکست کے باوجود مایوس نہیں ہونے دیا تھا۔ فائنل سے پہلے ہمارے ذہن بالکل واضح تھے۔ ہمیں یقین تھا کہ ہم ورلڈ کپ جیتیں گے۔ مجھے اچھی طرح یاد ہے کہ گراہم گوچ کا کیچ لے کر میں جسطرح میدان میں خوشی سے دوڑا تھا وہ بیان سے باہر ہے۔

پشاور پولیس کا کامیاب سرچ آپریشن …. انتہائی مطلوب افراد بارے اہم خبر

پشاور(ویب ڈیسک ) پشاور میں پولیس نے سرچ آپریشن کر کے 20مشتبہ افراد کو گرفتار کر لیا۔ پشتخرہ اور ملحقہ علاقوں میں پولیس نے سرچ آپریشن کر کے 20افراد کو گرفتار کیا جن میں 11مشکوک افراد بھی شامل ہیں۔پولیس کا کہنا ہے کہ 9افراد کو نا مکمل کوائف کی وجہ سے گرفتار کیا گیا جبکہ سرچ آپریشن کے دوران 2پستول ،گولیاں اور منشیات بھی برآمد ہوئے ہیں۔

پاک فوج کا بھارتی بارڈرسیکیورٹی فورسز کو مٹھائی کا تحفہ

لاہور(کرائم رپورٹر) یوم پاکستان موقع پر پاک فوج نے روایتی حریف بھارت کی سیکیورٹی فورسز کو بھی اپنی خوشیوں میںشامل کرنا نہ بھولا اور واہگہ بارڈر پر روایتی تقریب میں بھارتی بارڈ رسیکیورٹی فورسز کو مٹھائی کا تحفہ پیش کیا۔ تفصیلات کے مطابق یوم پاکستان کے موقع پر واہگہ بارڈر پر روایتی تقریب کا انعقاد کیاگیا جس دوران پنجاب رینجرز نے مشترکہ چیک پوسٹ پر بی ایس ایف کو مٹھائی کا تحفہ دیا۔ پنجاب رینجرز کی طرف سے یہ تحفہ لیفٹیننٹ کرنل بلال احمد وڑائچ نے بھارتی کمانڈر کو دیا۔ یادرہے کہ انتہاپسند عمومی طورپر پاک بھارت تعلقات کے مخالف سمجھے جاتے ہیں اور پاکستان اور پاکستان کی مسلح افواج کیخلاف ہرزہ سرائی بھی کرتے ہیں ، یوم پاکستان کے موقع پر چین، سعودی عرب اور ترکی کی فوج کی تقریب میں شرکت اور جنوب افریقی فوج کے سربراہ کی شرکت جہاں دشمنوں کو ناگوار گزری ہوگی ، وہیں مٹھائی کا تحفہ وصول کرنا بھی ایک آنکھ نہ بھایا ہوگا۔

بھارتی حکومت مسئلہ کشمیر پر تنہا کچھ نہیں کرسکتی

نئی دہلی (اے این این) بھارت نے ”میں نہ مانوں “ کی رٹ برقرار رکھتے ہوئے مسئلہ کشمیر کے حل کےلئے مذاکرات پر آمادگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان ہاتھ بڑھا نے میں پہل کرے تو ہم بھی بات چیت کےلئے تیار ہیں ،پورا ہندوستان کشمیر میں حالات ٹھیک دیکھنا چاہتا ہے ،پچھلی حکومت نے بھی شرط رکھی تھی پاکستان پہلے دہشتگردی ختم کرے پھر بات ہو گی،اب پاکستان اتنا تو کہہ دے وہ دہشتگردوں کی سرگرمیوں پر روک لگانا چاہتا ہے،وہ پہل تو کرے،مسئلہ کشمیر کو حکومت تنہا نہیں سلجھا سکتی وہاں کے عوام اور نوجوانوں کو بھی کردار ادا کرنا ہوگا۔ان خیالات کا اظہار بھارت کے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے بھارت کے ایوان بالا(راجیہ سبھا) میں کیا جہاں وہ مختلف ارکان پارلیمنٹ کے سوالوں کے جواب دے رہے تھے۔ راج ناتھ سنگھ نے سماج وادی پارٹی کے سکھ رام سنگھ یادو کے سوال سے متعلق جنتا دل کے شرد یادو اور مارکسی کمیونسٹ پارٹی کے سیتارام یچوری کے ضمنی سوالات کے جواب دئیے ۔ یادو نے سنگھ نے کہا کہ مرکزی حکومت صرف بندوق کے بل پر کشمیر مسئلہ کو کیوںحل کرنا چاہتی ہے ، وہ پاکستان سے بات کیوں نہیں کرتی، تو راجناتھ سنگھ نے کہا کہ پچھلی حکومت نے بھی پاکستان کے ساتھ بات چیت کے لئے یہ شرط رکھی تھی کہ وہ پہلے دہشت گردی کی حمایت ختم کرے ۔ انہوں نے کہا، “ہم پاکستان سے بات چیت کرنے کو تیار ہیں لیکن پاکستان بات چیت کے لئے پہلے پہل تو کرے ۔ وہ یہ تو کہے کہ وہ دہشت گردوں کی سرگرمیوں پر لگام لگانا چاہتا ہے ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ وہ کشمیر کا مسئلہ حل کرنے کے لئے تین بار وہاں گئے ۔ انہوں نے ٹویٹ کر کے بھی اس کی اطلاع دی کہ وہ ارکان پارلیمنٹ کے وفد کی قیادت کرتے ہوئے وہاں گئے ، اس وفد میں یادو اور یچوری بھی ساتھ گئے تھے لیکن حقیقت سب جانتے ہیں کہ وہاں سے الٹے قدم پیچھے آنا پڑا۔ سنگھ کے اس تبصرہ پر کچھ ممبران پارلیمنٹ نے اعتراض بھی کیا۔ سنگھ نے اس وقت کہا کہ وہ آج ایوان کو یہ بات بتانا چاہتے ہیں کہ جب کشمیر کے مختلف گروپوں سے بات چیت ہونی طے ہوئی تو وزیر اعلی محبوبہ مفتی خود اس کے لئے نہیں آئیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے مسئلے کو حل کرنے کے لئے انہوں نے ہر قدم اٹھائے لیکن اس مسئلہ کو حکومت تنہا نہیں سلجھا سکتی، اس کے لئے تمام سیاسی جماعتوں اور شہریوں کا بھی تعاون چاہئے ۔اس سے پہلے سکھرام سنگھ یادو کے سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ پچھلی حکومت نے بھی کشمیر کا مسئلہ حل کرنے کے لئے کئی اقدامات کئے ۔ وہ تنہا اس کا کریڈٹ لینا نہیں چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہاں کے نوجوانوں کو قومی دھارے میں لانے کے لئے 10 ہزار خصوصی پولیس افسر ان تعینات کئے گئے ، پانچ نئی ریزرو بٹالینوں میں 4500 لوگ مقرر کیے گئے اور مرکزی مسلح ٹیم میں 1200 لوگ مقرر کیے گئے اس کے علاوہ ہنر مندی کے فروغ اور روزگار کے لئے اڑان اور اسکول کالج کے ڈراپ آٹ کے لئے حمایت جیسی اسکیمیں شروع کی گئیں۔ یادو نے یہ بھی بتایا کہ سرجیکل اسٹرائک سے پہلے یکم جولائی 2016 سے 30 ستمبر تک 110 دہشت گردانہ واقعات ہوئے اور 34 سیکورٹی جوان اور سات شہری ہلاک ہوئے تھے لیکن یکم اکتوبر 2016 سے 31 دسمبر 2016 تک 87 دہشت گردانہ واقعات ہوئے اور 19 سیکورٹی جوان اور چھ شہریوں کی جانیں گئیں۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ جب کوئی سیکورٹی جوان مارا جاتا ہے تو اس کے جسد خاکی کو باعزت طریقے سے اس کے آبائی گاں بھیجا جاتا ہے اور مقامی ایم پی، ایم ایل اے کے علاوہ ضلع انتظامیہ کو بھی مطلع کیا جاتا ہے اور سرکاری اعزاز کے ساتھ ان کی رسومات ادا کی جاتی ہیں اور شہید کے خاندان کو تقریبا ایک کروڑ روپے دیئے جاتے ہیں۔ ویسے کسی شہید کی جان قیمت روپیوں سے نہیں لگائی جاسکتی۔

جرمنی میں سب سے بڑا مصنوعی سورج چمکنے لگا

لاہور(خصوصی رپورٹ) جرمنی میں دنیا کے سب سے بڑے مصنوعی سورج نے کام شروع کر دیا ہے۔ یہ سورج 149بڑے بڑے لیمپوں پر مشتمل ہے ۔ اس تجربے کا مقصد توانائی کے نئے ماحول دوست ذرائع تلاش کرنا ہے ۔یہ دیو ہیکل لیمپ اسی طرح کے ہیں جیسے فلم پروجیکٹرز کیلئے استعمال کیے جاتے ہیں۔ Synlight نامی یہ تجربہ جرمن شہر کولون سے تیس کلومیٹر مغرب کی جانب ژیولِش میں کیا جا رہا ہے ۔ جرمن ایروسپیس سنٹر ڈی ایل آر کے سائنسدان اسمصنوعی سورج کی تیز روشنی اور حرارت کے ساتھ تجربات کرتے ہوئے یہ پتہ چلانا چاہتے ہیں کہ سورج سے جو بے پناہ توانائی روشنی کی صورت میں زمین تک پہنچتی ہے اسے کیسے زیادہ موثر طریقے سے محفوظ کیا جا سکتا ہے ۔ان تجربات کے دوران جن نکات پر توجہ مرکوز کی جائیگی ان میں سے ایک کا تعلق موثر طور پر ہائیڈروجن پیدا کرنا ہے جو طیاروں کیلئے مصنوعی ایندھن تیار کرنے کی جانب پہلا قدم ہے ۔ تجربات کا مقصد پانی کے خلیوں کو توڑ کر آکسیجن اور ہائیڈروجن میں تقسیم کرنا ہے چار گھنٹوں کے اندر اندر ان تجربات میں اتنی بجلی استعمال ہوتی ہے جتنی چار ارکان پر مشتمل ایک گھرانہ پورے ایک سال میں استعمال کرتا ہو گا۔یہ تجربات قدرتی ماحول میں اس لیے نہیں ہو سکتے کہ دھوپ کی شدت مختلف مقامات پر بار بار بدلتی رہتی ہے اور اسی لیے لیبارٹری کے اندر یہمصنوعی سورج تیار کیا گیا ہے تاکہ تجربات کیلئے مسلسل ایک ہی شدت کی روشنی اور حرارت میسر آ سکے ۔

لڑکی کومتاثر کرنے کیلئے نوجوان مگرمچھ سے لڑنے دریا میں کودگیا

آسٹریلیا (خصوصی رپورٹ) آسٹریلیا کے صوبے کوئنز لینڈ میں لڑکی کو متاثر کرنے کیلئے ایک نوجوان اپنا ہاتھ تڑروا بیٹھا۔ مذکورہ نوجوان مگرمچھ سے لڑنے دریا میں کود گیا۔ 18 سالہ ڈی پاﺅ نے کہا ہے کہ اس نے دریا میں تین میٹر لمبے مگرمچھ کے منہ پر مکے مارے اور پھر اس کی آنکھ پر حملہ کرکے بھاگ نکلا۔ اس دوران اس کا ہاتھ بھی زخمی ہواجسے ڈاکٹرز نے فوری طور پر طبی امداد دے کر کٹنے سے بچا لیا۔