Tag Archives: nawazsharif

جے آئی ٹی رپورٹ نے تہلکہ مچا دیا


اسلام آباد(ویب ڈیسک) پاناما کیس کی جے آئی ٹی کا کہنا ہے کہ شریف خاندان کی آمدن اور طرز رہائش مطابقت نہیں رکھتیں لہذٰا ان کے خلاف نیب میں ریفرنس دائر کیا جائے۔سپریم کورٹ میں پاناماکیس کے حوالے سے جے آئی ٹی کی پیش کردہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ عدالت نوازشریف، حسن اور حسین نواز کے خلاف نیب میں ریفرنس دائر کرے۔رپورٹ میں جے آئی ٹی نے مو¿قف پیش کیا ہے کہ مدعا علیہان کی آمدنی اوردولت کے ظاہر کردہ ذرائع میں اہم تضاد پایا جاتا ہے، بڑی رقوم کی قرض اور تحفے کی شکل میں بے قاعدگی سے ترسیل کی گئی، برطانیہ کی کمپنیاں نقصان میں تھیں لیکن پھر بھی بھاری رقوم کی ترسیل میں مصروف تھیں، یہ بات کہ لندن کی پراپرٹیز اس بزنس کی وجہ سے تھیں آنکھوں میں دھول جھونکنے کے مترادف ہے۔ انہی آف شورکمپنیوں کو برطانیہ میں فنڈز کی ترسیل کے لیے استعمال کیا گیا ان فنڈز سے برطانیہ میں مہنگی جائیدادیں خریدی گئیں۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ بےقاعدہ ترسیلات لندن کی ہل میٹل کمپنی، یو اے ای کی کیپٹل ایف زیڈ ای کمپنیوں سےکی گئیں، رقوم سعودی عرب میں ہل میٹل کمپنی کی جانب سے ترسیل کی گئیں، نوازشریف اور ان کے صاحبزادے حسین اور حسن نواز جےآئی ٹی کے سامنے رقوم کی ترسیلات کی وجوہات بھی نہیں بتا سکے، مدعاعلیہان کی ظاہرکردہ دولت اور ذرائع آمدن میں واضح فرق ہے پاکستان میں موجود کمپنیوں کا مالیاتی ڈھانچہ مدعاعلیہان کی دولت سےمطابقت نہیں رکھتا جب کہ شریف خاندان کی آمدن اور طرز رہائش بھی ایک جیسا نہیں۔رپورٹ میں استدعا کی گئی ہے کہ جے آئی ٹی مجبور ہے کہ معاملے کو نیب آرڈیننس کے تحت ریفر کردے کیوں کہ نیب آرڈیننس سیکشن 9 اے وی کےتحت یہ کرپشن اور بدعنوانی کے زمرے میں آتا ہے۔

امن کی ضمانت نہیں دے سکتے ،وزیر اعظم نواز شریف نے بھارت کو واضح پیغام دیدیا


 اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ برہان وانی کا یوم شہادت ساری دنیا کو یہ پیغام دے رہا ہے کہ اگر مقبوضہ کشمیر میں ظلم کا یہ بازار گرم رہا تو پھر دنیا میں امن کی ضمانت نہیں دی جا سکتی۔برہان وانی شہید کی پہلی برسی کے موقع پراپنے خصوصی پیغام میں وزیر اعظم نے کہا کہ برہان مظفر وانی تحریک آزادی کشمیر کے ایک نئے باب کا عنوان ہے، ایک سال پہلے اس جواں سال شہادت نے مقبوضہ کشمیر میں اپنے لہو سے جو چراغ روشن کیا، اس سے آج پوری وادی میں چراغاں ہے، برہان وانی کی شہادت نے ثابت کردیا کشمیر کا بچہ بچہ آزادی کے جذبے سے سرشار ہے، برہان وانی کا یوم شہادت ساری دنیا کو یہ پیغام دے رہا ہے کہ اگر مقبوضہ کشمیر میں ظلم کا یہ بازار گرم رہا تو پھر دنیا میں امن کی ضمانت نہیں دی جا سکتی۔ یہ شہادت عالمی برادری اور اور قوتوں کو بھی متوجہ کرتی ہے کہ وہ مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی سے آنکھیں نہیں چرا سکتے۔وزیر اعظم نے مزید کہا کہ اسلحہ کے زور پر قوموں کے جذبہ آزادی کو نہیں کچلا جا سکتا۔ کوئی بھی بھارت کے غاصبانہ قبضے کو قبول کرنے کے لئے آمادہ نہیں، بھارت کو یہ حقیقت بھی سمجھ لینی چاہیے کہ تاریخ کو اندھا نہیں کیا جا سکتا، برہان وانی کی شہادت نے بھارتی پروپیگنڈے کو بھی بے نقاب کر دیا کہ آزادی کشمیر کی تحریک کسی خارجی مداخلت کے زیر اثر ہے، مقبوضہ کشمیر کی یہ تحریک آزادی مقامی اور ہر طرح کی بیرونی مداخلت کے بغیر آگے بڑھ رہی ہے۔

نواز شریف کا کھیل ختم،اگلا وزیر اعظم کون ؟


کراچی(ویب ڈیسک)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ نوازشریف کو جب اکثریت ملی انہوں نے اپنے پاو¿ں پر کلہاڑا مارا لیکن اب ان کا کھیل ختم ہوچکا ہے اور 3 دن میں سب سامنے آجائے گا۔جیسے جیسے کراچی کے پی ایس 114 کے ضمنی انتخابات قریب آرہے ہیں سیاسی گہماگہمی بھی تیزی سے عروج پرجارہی ہے سیاسی جماعتیں اپنے امیدواروں کو کامیاب کرنے کے لئے رابطے تیز کررہے ہیں۔اے این پی، پی پی آئی اور مجلس وحدت المسلمین پہلے ہی پیپلزپارٹی کی حمایت کا اعلان کرچکے ہیں جب کہ پی آئی ٹی کے امیدوار کو کامیاب بنانے کے لئے مسلم لیگ(ن) کے سابق ایم پی اے عرفان مروت بھی میدان میں ہیں جب کہ عمران خان کی خصوصی درخواست پر شیخ رشید بھی پی ٹی آئی کے امیدوار کی حمایت میں کراچی پہنچ گئے ہیں۔کراچی پہنچے کے بعد ائیرپورٹ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نوازشریف کہتے ہیں ان کے خلاف سازش ہورہی ہے جب کہ معاملہ اس کے برعکس ہے نوازشریف خود اپنے خلاف سازشیں کررہے ہیں اور انہیں جب بھی دوتہائی اکثریت ملی انہوں نے اپنا خانہ خراب کیا اور اپنے پاو¿ں پر خود کلہاڑا مارا۔شیخ رشید کا کہنا تھا کہ عمران خان کو مبارکباد دیتا ہوں کہ انہوں نے ملک کی تاریخ بدل ڈالی اب 72 سے 80 گھنٹے کا کھیل باقی ہے سب ثابت ہوجائے گا اور مریم نواز کی آمدن کا ذریعہ بھی سامنے آجائے گا، اب نوازشریف کو خود فیصلہ کرنا ہے کہ اگلا وزیراعظم کون ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر مرکز کی اسمبلیاں تحلیل کریں گے تو صوبوں کی اسمبلیاں بھی تحلیل ہوں گی ہمیں صرف مرکزی حکومت تحلیل کرنا قبول نہیں۔سربراہ عوامی مسلم کا کہنا تھا کہ انتخابی سرگرمیاں جمہوریت کا حسن ہے میں بھی عمران خان کی درخواست پر ان کے امیدوار کی حمایت اور انتخابی مہم کامیاب بنانے کراچی آیا ہوں امید ہے پی ایس 114میں تحریک انصاف فتح یاب ہوگی اورہم خون کے آخری قطرے تک عمران خان کے ساتھ مل کر (ن) لیگ کی سیاست کو نیست ونابود کردیں گے۔

جے آئی ٹی کا معاملہ حل ہوجائے پھر دھرنا پارٹی سے نمٹ لیں گے، وزیراعظم


دوشنبے(ویب ڈیسک) وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ میں نے کبھی بھڑک نہیں ماری لیکن جے آئی ٹی کا معاملہ حل ہوجائے پھر دھرنا پارٹی سے بھی نمٹ لیں گے۔دوشبنے سے وطن واپسی پر طیارے میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ دورہ تاجکستان کامیاب رہا، افغان صدر نے تجارتی راہداری کے لیے بھارت کو راستہ دینے کی تجویز دی جس پر ہم نے کہا پہلے پاکستان، تاجکستان اور افغانستان اپنے معاملات بہتربنالیں، بھارت سے متعلق معاملہ بعد میں دیکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جانب سے مظالم کا سلسلہ جاری ہے اورکچھ ہی دنوں میں 100 سےزائد کشمیری شہید کردیئے گئے، ایسے حالات میں بھارت سے کاروبار کی بات کیسے ہوسکتی ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ افغانستان کےالزام کا جواب دیا کہ ہماری طرف سے کوئی مداخلت نہیں ہورہی جب کہ مقبوضہ کشمیر میں مظالم سے پاک بھارت تعلقات خراب ہوئے لہذا بھارت کو مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند اور مسئلہ کشمیر کے حل کی طرف آنا چاہیے۔ فریش مینڈیٹ سے متعلق پوچھے گئے سوال پر انہوں نے کہا کہ میں نے کبھی بھڑک نہیں ماری لیکن جے آئی ٹی کا معاملہ حل ہوجائے پھر دھرنا پارٹی سے بھی نمٹ لیں گے، یہ ہر سازش میں شریک رہے اور سازشیں کرتے رہے اور 2014 میں ان کے دھرنوں کو دیکھ لیا۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جس نے ایٹمی دھماکے کا بٹن دبایا اسی کا احتساب ہورہا ہے وہ بھی جعلی، ہم خود جے آئی ٹی کے عمل سے گزرنا چاہتے ہیں اور حالات کا تقاضا بھی یہی ہے،سپریم کورٹ کے کسی بھی قسم کے فیصلے کا انتظار کررہے ہیں جب کہ جمہوریت کو مجھ سے کوئی خطرہ نہیں۔

”فوج نواز شریف کو اقتدار سے دور کرنا چاہتی ہے “۔۔دھماکہ خیز خبر


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی سیکرٹری خارجہ امور نے وزیراعظم نوازشریف کو اثاثہ قرار دیدیا امریکی سنیٹرز سے نوازشریف کی مدد کرنے کی اپیل کردی نجی ٹی وی پروگرام میں سینئر صحافی نے انکشاف کیا کہ بھارتی سیکرٹری خارجہ جیش شنکر نے امریکہ میں چار سنیٹرز سے ملاقات میں کہا کہ پاکستان میں فوج نوازشریف کو اقتدار سے الگ کررہی ہے ان کی مدد کرنی چاہیے جس پر امریکی سینیٹرز نے کہا کہ پاکستان تو آپ کادشمن ملک ہے پھر اس معاملے میں کیوںپڑ رہے ہیںجیش شنکر نے جواب میں کہا کہ نوازشریف اثاثہ ہیں۔

بہت ہو گئی ،اب یہ برداشت نہیں کرونگا ،نواز شریف نے آخر کار دل کی بات کہہ دی


اسلام آباد (صباح نیوز، این این آئی) وزیراعظم میاں محمد نوازشریف نے کہا ہے کہ رمضان المبارک میں ترقیاتی کاموں کے نام پر کوئی پاور شٹ ڈا¶ن نہیں ہو گا۔ رمضان المبارک میں صارفین کو ہر صورت بجلی فراہمی کے اقدامات کریں۔ پاور پلانٹس کی مرمت اور دیکھ بھال کا کام بروقت مکمل کیا جائے۔ مستقبل میں توانائی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے مربوط نظام تشکیل دیا جائے۔ وزارت پانی و بجلی 2023ءبجلی کی طلب اور رسد کی تجربہ رپورٹ تیار کرے جبکہ وزیراعظم نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی۔ بجلی کی طلب اور رسد برابر کرنے کے لئے مزید متحرک ہو جائیں۔ وزیراعظم کی زیرصدارت کابینہ کی توانائی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف، وزیر برائے منصوبہ بندی احسن اقبال، وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیر پانی و بجلی خواجہ محمد آصف، وزیر پیٹرولیم شاہد خاقان عباسی اور دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔ کچھ پاور پلانٹس کی دیکھ بھال اور مرمت کے کام میں تاخیر کا وزیراعظم نے نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ رمضان المبارک میں صارفین کو کسی قسم کی دقت نہیں ہونی چاہئے اور ان کو جو بجلی ضرورت ہے وہ فراہم کرنے کے اقدامات کئے جائیں اور مرمتی کام کو فوری طور پر مکمل کیا جائے اور آئندہ کے لئے ایسا شیڈول مرتب کیا جائے کہ موسم کی تبدیلی کے دوران بجلی کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنائی جائے۔ اجلاس میں ایل این جی پر چلنے والے 1200 میگاواٹ کے پاور پلانٹ کا منصوبہ لگانے کی اصولی منظوری دی گئی ہے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی ہے کہ وزارت پانی و بجلی 2023ءتک کے لئے بجلی کی طلب اور رسد کے حوالے سے تجزیاتی رپورٹ تیار کرے جس میں مستقبل کی توانائی کی تمام ضروریات کا احاطہ کیا جائے۔ اس میں یہ بھی شامل کیا جائے کہ جو ٹرینڈ میں تبدیلی آئی ہے۔ ملک میں معاشی سرگرمیاں بڑھی ہیں۔ اس وجہ سے مختلف برقی آلات کے استعمال میں اضافہ ہوا ہے اور صارفین نے بجلی کا استعمال زیادہ کرنا شروع کر دیا ہے یا ان کے اطوار میں تبدیلی آئی ہے۔ اس کو بھی تجزیاتی رپورٹ میں شامل کیا جائے تاکہ بجلی کی طلب و رسد کے میکانزم کے حوالے سے صحیح اندازہ ہو سکے کہ یہ کتنا ہے اور اس کی ضروریات کتنی ہیں۔ وزیراعظم نے متعلقہ حکام کی جانب سے حکمت عملی بناتے ہوئے بہت سی چیزوں کو نظرانداز کرنے پر افسوس کا اظہار کیا ہے اور اس بات کا نوٹس لیا ہے اور کہا ہے کہ یہ نہیں ہونا چاہئے۔ وزیراعظم نے ستمبر 2018ءتک طلب و رسد کا جامع نظام بنانے کے حوالے سے بین الوزارتی کمیٹی سے رپورٹ طلب کر لی ہے جبکہ منگل کے روز اجلاس جو ابتدائی رپورٹ پیش کی گئی ہے۔ اس میں کہا گیا ہے کہ بجلی کے طرز استعمال میں تبدیلیوں اور برقی آلات کے استعمال میں اضافہ کو بھی طلب و رسد کے میکانزم میں شامل کیا جائے گا۔ اجلاس کے دوران سیکرٹری برائے پانی و بجلی نے گذشتہ اجلاس کے فیصلوں پر عملدرآمد کے حوالے سے آگاہ کیا۔ اجلاس میں سیکرٹری پانی و بجلی نے کمیٹی کو گزشتہ اجلاس میں کئے گئے فیصلوں پر پیش رفت کے بارے میں بھی آگاہ کیا جن میں خزانہ ، پانی و بجلی اور پٹرولیم و قدرتی وسائل کی وزارتوں کی بین الوزارتی کمیٹی کے کام ، ستمبر 2018ءتک بجلی کی طلب و رسد کا جائزہ اور غیر فعال بجلی گھروں کااستعمال شامل ہیں۔ اس موقع پر وزیر اعظم نے کہاکہ یہ امر افسوس ناک ہے کہ متعلقہ حکام کی طرف سے اہم نوعیت کے فوری عوامل کو مد نظر رکھے بغیر منصوبہ بندی کی جاتی ہے ۔ وزیراعظم نے وزارت پانی و بجلی کو ہدایت کی کہ 2023ءتک بجلی کی طلب و رسد کاجائزہ لیاجائے تاکہ ملک کی مستقبل کی توانائی ضروریات کو پورا کرنے کے حوالے سے مربوط طویل معیاد منصوبہ بندی کی جاسکے۔ وزیر اعظم نے یہ بھی ہدایت کی کہ مرمت ودیکھ بھال کی بنیاد پر بجلی گھروں کی بندش کے شیڈول کو موسم گرما سے موسم سرما تک منتقل کرنے کا بھی جائزہ لیاجائے تاکہ بجلی کی بہت زیادہ طلب کے مہینوں کے دوران زیادہ سے زیادہ بجلی فراہم کی جا سکے۔ اس دوران توانائی کے بارے میں کابینہ کمیٹی نے متفقہ طور پر منظوری دی کہ رمضان کے دوران ترقیاتی کاموں کو بنیاد بناکر بجلی کی بندش نہیں ہونی چاہیے۔ یہ بھی فیصلہ کیاگیا کہ اقتصادی خوشحالی اور صارفین کے طرز عمل کی بناءپر برقی مصنوعات کے استعمال میں اضافے سمیت دیگر عوامل کو بھی بجلی کی متوقع طلب کے تخمینہ جات میں شامل کیا جائے۔ کمیٹی نے ایل این جی سے چلنے والے 1200میگاواٹ کی گنجائش کے نئے پاور پلانٹ کے قیام کی بھی اصولی منظوری دی۔

ملک کی ترقی کا راستہ روکنے والوں کو جواب دینا پڑے گا، وزیر اعظم


جہلم: وزیراعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ ملک کی ترقی کا راستہ روکنے والوں کو جواب دینا پڑے گا تاہم وہ جتنا روکتے رہیں ہم ملک کی خوش حالی کے لیے کام کرتے جائیں گے۔ کٹاس راج کے دورے کے موقع پر وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ جنہوں نے پہلے بھی کچھ نہیں وہ اب کیا کریں گے، سابقہ حکومتوں نے اندھیروں میں جھونک دیا تاہم نہ صرف انہیں جواب دینا پڑے گا بلکہ آج ترقی کا راستہ روکنے والوں کو بھی جواب دینا پڑے گا، وہ جتنا روکتے رہیں ہم رکنے والے نہیں ہم ملک کی خوش حالی اور بیروز گاری کے خاتمے کے لیے بھی کام کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ آج بیروزگاری اور پسماندگی بھی کم ہورہی ہے جب کہ لوڈشیڈنگ بھی نہ ہونے کے برابر ہے۔ کے پی کے میں بھی موٹروے ہم بنارہے ہیں کیونکہ نیا پاکستان بنانے والوں نے کچھ نہیں کیا سب ہم بنارہے ہیں۔ وزیر اعظم نے کہا کہ تمام الہامی کتابوں اور انبیائے کرام کو ماننے تک ہم مسلمان نہیں کہلا سکتے، ہمارے صوفیا کرام نےانسان دوستی کادرس دیا تاہم کچھ لوگ اسلام کے نام پرمعلوم نہیں کیا کیا باتیں کرتے ہیں۔ کٹاس راج چاروں تہذیبوں کا سنگم ہے اور اس کی تہذیب 4 ہزار قبل مسیح کی ہے، مذہب سب کا اپنا اپنا مگرانسانیت مشترکہ اساس ہے، پاکستان میں اقلیتوں کو برابر کے حقوق حاصل ہیں اور تمام مذاہب کے لوگ مل کر کام کررہے ہیں، اکثریت اور اقلیت کو مساوی حقوق دینا ہمارا ایمان ہے۔