تازہ تر ین

نظام ضروربدلے گا!

رانا زاہد اقبال …. اظہار خیال
جناب ارشد ملک جج احتساب عدالت نے گزشتہ دنوںاےک پرےس رےلےز جاری کےا جس مےں مرےم نواز کے انکشافات کہ نواز شرےف کے خلاف فےصلہ دباو¿ کے تحت کےا تھا ‘کی تردےد کرتے ہوئے کہا کہ مےری گفتگو کو توڑ مروڑ کر اور سےاق و سباق سے ہٹ کر پےش کےا گےا۔ سابق چےف جسٹس افتخار چوہدری کے حق مےں وکلاءکی کامےاب تحرےک کے بعد آزاد عدلےہ بڑے بڑے مجرموں کی گردن پر بھی ہاتھ ڈالنے کے قابل ہو گئی۔ اس حوالے سے ےہ حقےقت ہمارے سامنے ہے کہ عدلےہ نے بلا امتےاز اعلیٰ ترےن سطح پر ہونے والی کرپشن کے خلاف بھی ڈنڈا ٹھاےا، جس کی واضح مثال ملک کے حاضر وزےر اعظم کو بھی سزا کا سامنا کرنا پڑا۔ بلکہ ےہ کہنا بے جا نہےں ہو گا کہ ملک کی تارےخ مےں حکمرانوں اور بالادست طبقات کے خلاف ےہ پہلا مثبت اور بے باکانہ فےصلہ ہے۔ لےکن قدم قدم پر بااثر اشرافےہ آج بھی آزاد عدلےہ کی راہ مےں مختلف سازشوں اور بہانوں سے روڑے اٹکا رہی ہے۔سب سے زےادہ حےرت کی بات ےہ ہے کہ عوام کے ووٹوں سے برسرِ اقتدار آنے کے بعد ان کی فلاح و بہبود کو نظر انداز کر کے تجورےاں بھرنے والے قانون کے شکنجے مےں آئے تو عدالتوں مےں مقدمات کا سامنا کرنے کی بجائے آزاد عدلےہ کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی۔ اس کے لئے اےک اےسے شخص کا سہارا لےا جو خود بھی قتل اور دوسرے بہت سے سنگےن مقدمات مےں اشتہاری رہا ہے۔ وہ سےاسی اثر ورسوخ اور حکومتی سرپرستی کے باعث قانون کے شکنجے سے بچتا رہا۔ کہا جاتاہے کہ اس حوالے سے جواد ملک کی اےک وےڈےو بھی منظر عام پر آئی جس کے مطابق بقول ان کے والد اور تاےا کو ناصر ملک نے قتل کےا تھا اور وہ خود اس کے خوف سے وطن عزےز کو خےر آباد کہہ کر امرےکہ بےٹھے ہوئے ہےں، ان کے ساتھ انصاف نہےں ہوا وزےراعظم عمران خان ان کے خاندان کو انصاف دلائےں۔ مجرمانہ ذہنےت والے شخص کی مدد سے اےک جج پر ہی نہےں بلکہ عدلےہ پر حملہ کےا گےا ہے۔ اگر مسلم لےگ (ن) کے ماضی مےں جھانکےں تو عدلےہ پر حملے ان کا وطےرہ رہا ہے۔ اس سے بڑھ کر اخلاقی کمزوری کےا ہو گی کہ اےک قومی جماعت جو تےن بار مرکز مےں اور پانچ بارصوبے مےں برسرِ اقتدار رہی ہوچھپ کر بنائی گئی وےڈےو کو بغےر تصدےق کئے فخر سے دکھا رہی ہے۔ ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ مریم نواز اس ویڈیو کو عوام کے سامنے لانے کے بجائے سپریم کورٹ کے سامنے پیش کر کے میاں نواز شریف کیلئے ریلیف حاصل کرنے کی کوشش کرتیں لیکن انہوں نے ایسا کرنے کے بجائے پوائنٹ سکورنگ کی اور ایک پریس کانفرنس کے ذریعے اس ویڈیو کو عوام کے سامنے رکھ دیا ۔
میرے خیال میں شرےف فےملی کو آئےن و قانون سے کوئی لےنا دےنا نہےں وہ صرف آئےن سے ماورا اےن آر او چاہتے ہےں، جےسے ماضی مےں انہوں نے غیرملکی طاقتوں کے ذرےعے دباو¿ ڈلوا کر جنرل مشرف سے سودے بازی کی اور سعودی عرب کے محلات مےں جا پناہ گزےن ہوئے، وہ نہ تو اسے اےن آر او کے زمرے مےں شمار کرنے کو تےار ہےں اور نہ ہی جو دباو¿ آج کل موجودہ حکومت پر ڈلوا رہے ہےں اسے ہی اےن آر او سمجھتے ہےں، جس کا حکومت ببانگِ دہل ذکر کرتی رہتی ہے، لےکن شرےف فےملی ڈےل کر کے باہر نکلنے کو اےن آر او نہےں سمجھتی۔ اب چونکہ وزےر اعظم عمران خان کرپشن کے پےسے کی واپسی تک اےن آر او دےنے کو تےار نہےں ہےں اس لئے اپنی رہائی کی آخری کوشش کے طور پر احتساب عدالت کے جج محمد ارشد کے خلاف آڈےو ٹےپ لے آئے ہےں۔ کہنے کی حد تک تو میاں نواز شرےف جمہورےت کی بالادستی کے بلند و بانگ دعوے کرتے ہےں جمہوری نظام کو پٹڑی سے اتارنے کے حق مےں نہےں اور وہ ماضی مےں ےہ اعلان بھی کرتے رہے کہ اےسی کوئی بھی کوشش ہوئی تو وہ اس کے راستے مےں رکاوٹ بن کر کھڑے ہوں گے۔ لےکن موجودہ حالات مےںجس طرح ایک جج پر ان کی آشےر باد سے مرےم نواز نے وار کیا ہے اور اپنی پارٹی کی جانب سے حکومت کے خلاف مورچہ بند ہوئے ہوئے ہےں، ےہ سرا سر جمہورےت کو ڈی رےل کرنے کی کوشش ہے، ان کی تو شروع سے ےہی سوچ ہے کہ اگر وہ اقتدار مےں ہےں تو ٹھےک ورنہ انہےں جمہورےت سے کوئی غرض نہےں ہے۔ عمران خان جو اس سسٹم کو چےنج کرنے کی بات کرتے ہےں اےسے لوگ ہی وزےرِ اعظم کے راستے مےں مزاحم ہےں۔ بظاہر اےسا لگتا ہے کہ اس ملک مےں سسٹم کی تبدےلی کا خواب کبھی شرمندہ تعبےر نہےں ہو گا۔ ہمارے ہاں ہر حکمران قطع نظر اس کے کہ اس کا تعلق کہاں سے تھا سب کا اےک ہی مقصد رہا ہے کہ اقتدار پر گرفت کےسے مضبوط کی جائے اور اےسے کون سے ذرائع اختےار کئے جائےں کہ اقتدار ہمےشہ ان کے خاندان مےں رہے۔
ہماری بد قسمتی ےہ رہی ہے کہ ہم اداروں کی مضبوطی کی بات کرتے ہےں لےکن ہمےشہ شخصےات کے مضبوط ہونے کو اداروں کا استحکام سمجھ لےتے ہےں۔ ہمےں ہمارے حکمرانوں کی کوتاہےوں کی سزا ملتی رہی ہے اور ےہ اےک مسلسل سزا ہےجو ہم پر کسی نہ کسی طرح مسلط ہے، جوحکمران اپنی لاپروائی بلکہ ملک سے لاپروائی کی صورت مےں ہماری قسمت مےں لکھتے رہے ہےں۔ لیکن مجھے یقین ہے کہ یہ نظام ضرور بدلے گا!
(کالم نگارسماجی وادبی امورپرلکھتے ہیں)
٭….٭….٭


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved