تازہ تر ین

قوم مطمئن رہے

رانا زاہد اقبال …. اظہار خیال
پاکستان کی مسلح افواج کو ےہ کرےڈٹ جاتا ہے کہ انہوں نے ہر مشکل وقت مےں آگے بڑھ کر چےلنجز کا سامنا کےا اور چاہے سےلاب ہوں، زلزلہ ہو، بارشےں ہوں ےا دہشت گردی کا عفرےت، وہ ہر امتحان مےں کامےاب رہے۔ ہماری مسلح افواج کی پےشہ ورانہ مہارت اور حربی صلاحےت دنےا مےں مستند سمجھی جاتی ہے۔ افواجِ پاکستان ہماری قومی سلامتی کی علامت ہے۔ ہمارے دشمنوں کے دلوں پر اس کی دھاک بےٹھ چکی ہے۔ہمارے ملک میں آج تک جتنے بھی مارشل لاءلگے ہےں ،ان کا مشاہدہ کرےں تو معلوم ہوتا ہے کہ حالات ہی کچھ اےسے ہو جاتے تھے کہ فوج کو عوام اور سےاست دانوں کے پر زور مطالبے پر آگے آنا پڑتا رہا ۔ موجودہ دور حکومت مےں عوام نے دےکھ لےا کہ اگر سےاسی قےادت بالغ نظری سے کام لے تو معاملات خوش اسلوبی سے حل ہوتے جاتے ہےں۔
آج جنگوں کی صورت تبدےل ہو چکی ہے اور سٹرےٹجی اور سٹرٹےجک پوزےشن کا استعمال نئے دور کے تقاضوں مےں سرِ فہرست ہے۔ اب وہ پہلے والی جنگےں نہےںرہےں بلکہ براہِ راست جنگ اتنی تباہی کا باعث ہو سکتی ہے کہ جس کا تصور کرنا بھی محال ہے۔ تھرڈ جنرےشن، فورتھ جنرےشن، ففتھ جنرےشن وار اےسے جنگی حربے ہےں جو کہ کسی ملک کے حکمران اپنے سپہ سالار کی مکمل مشاورت کے بغےر سمجھ نہےں سکتے۔ دوسرا ہمارے ملک کا جغرافےائی نقشہ کچھ اےسا ہے کہ دنےا کی بڑی طاقتےں اس کو نظر انداز نہےں کر سکتیں اوراوپر سے ہمارا پڑوس ہے جو ہر وقت ہمےں نقصان پہنچانے کے پلان بناتا رہتا ہے اور صوبائی مخاصمت کو ہوا دےنے کی کوشش بھی کرتا رہتا ہے۔ حکومت اور عسکری قےادت کے اےک پےج پر ہونے کی وجہ سے وزےرِ اعظم نے گزشتہ دنوں بھارت کو واضح پےغام دےا تھا کہ پاکستان امن چاہتا ہے لےکن کسی مس اےڈونچر کا منہ توڑ جواب دےا جائے گا اور ےہ کہ بھارت ہماری مذاکرات کی دعوت کو کمزوری سمجھتا رہا ہے اب بھارت سے مذاکرات نہےں ہوں گے۔
جب سے ہماری فوج اور پےرا ملٹری فورسز دہشت گردی کی جنگ مےں اندرونِ ملک مصروف ہےں تو خےال کےا جا رہا تھا کہ اب ہماری افواج کی استعداد شاید اس حد تک نہےں ہے،وےسے تو ےہ اےک قدرتی بات ہے کہ جب کوئی فوج لمبے عرصے کے لئے آپرےشن مےں الجھ جاتی ہے تو کہےں کہےں خلا پےدا ہونا شروع ہو جاتا ہے، ےہی وہ وقت ہوتا ہے جب دشمن ہر طرح کے حربے استعمال کر کے حالات کو بڑھا چڑھا کر عوام کے مورال کو گرانے کی کوشش کرتا ہے کہ چونکہ فوج اےک لمبے آپرےشن مےں الجھ کر رہ گئی ہے اس لئے اس کی لڑنے کی صلاحےت متاثر ہو رہی ہے ۔اس کا مقصد صرف ےہ ہوتا ہے کہ ظاہر کےا جائے کہ فوج اےک لمبی لڑائی مےں الجھ کر کمزور ہوتی جا رہی ہے تا کہ مجموعی طور پر فوج اور قوم کے مورال کو متاثر کےا جائے۔پروپےگنڈا اےک زہرےلا ہتھےار ہوتا ہے اس لئے اس کا کاو¿نٹر کرنا ضروری ہوتا ہے۔ ےہ اسی پروپےگنڈے کا ہی حصہ تھا کہ بھارتی آرمی چےف نے اےٹمی ہتھےاروں کی بابت بےان داغ دےا تھا۔ اس بےان کے ردِ عمل مےں وزےر اعظم عمران خان نے مسلح افواج سے مشاورت کے بعد منہ توڑ جواب دے دےا ہے۔
اسی غلط فہمی کی بنےاد پر کہ پاکستان شائد جواب نہ دے بھارتی طےاروں نے فروری مےں وطنِ عزےز کی سرحدےں عبور کر لی تھےں۔ پاکستان نے جواب مےں اس کے دو طےارے گرا کر ساری دنےا اور بالخصوص بھارت پر ےہ واضح کر دےا تھا کہ اگر چہ پاکستان کی مسلح افواج فاٹا مےں آپرےشن کر رہی ہیں لیکن اس کا یہ مطلب نہےں کہ وہ باقی سرحدوں سے غافل ہے۔ ےہی مشترکہ حکمتِ عملی تھی جس کی بناءپر افغانستان کے علاوہ کشمےر کے حوالے سے رےاست ےا اس کے عناصر پر جو الزامات لگتے رہے ان کی نہ صرف بےخ کنی ہو گئی بلکہ کشمےرکے موجودہ حالات مےں کشمےری عوام کی مزاحمت کو بھی عالمی سطح پر پاکستان سے نہےں جوڑا جا رہا۔ کشمےری عوام کی سےاسی، سفارتی اور اخلاقی مدد کی جا رہی ہے لےکن بھارت کشمےر مےں جاری گرفتارےوں اور ظلم و بربرےت پر بےن الاقوامی برادری کو صفائےاں پےش کرنے پر مجبور ہے۔
لےکن بڑے افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ ملک کے اندر کچھ لابےاں ریاستی اداروں کے خلاف پروپےگنڈہ مےں مصروف ہےں تا کہ ان کو کمزور کےا جا سکے۔ ہم کوئی بےان دےنے سے پہلے سوچتے نہےں ہےں ۔حالےہ چیئرمین سےنٹ کے انتخابات کے بعد جس طرح ہارنے والے امےدوار نے ایک ادارے کے بارے مےں جس طرح رےمارکس دئے بڑے افسوسناک ہےں۔ سےاست دان اپنی خامےوں اور کوتاہےوں کو نظر انداز کر کے اداروں پر کےچڑ اچھالنا شروع کر دےتے ہےں۔
حالےہ پاک بھارت کشےدگی مےں ماضی کی طرح اےک بار پھر سے پاکستانی عوام کا اپنی فوج کو مکمل تعاون حاصل ہے جو ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہےں۔ پاکستان کی مسلح افواج انتہائی بلند پےشہ ورانہ معےار کی حامل ہےں اور ڈسپلن کی پابندی کی مثال دےنی ہو تو پاکستانی افواج کی مثال دی جا سکتی ہے۔ پوری دنےا افواجِ پاکستان کا مورال گرانے کی کوشش کرتی ہے لےکن پاکستان کی مسلح افواج اس لحاظ سے بھی داد کی مستحق ہےں کہ وہ ساری دنےا کے گلے شکوے اور الزامات سنتی ہےں اور سہتی ہےں لےکن ان کے ہونٹوں پر حرفِ شکاےت نہےں آتا۔ ہماری مسلح افواج اپنی پےشہ ورانہ سرگرمےوں مےں تن دہی سے مصروف رہتی ہےں۔ موجودہ صورتحال میں بھی فوج ہر طرح کے حالات کا مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہے اس لئے قوم مطمئن رہے۔
(کالم نگارسماجی وادبی امورپرلکھتے ہیں)
٭….٭….٭


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved