تازہ تر ین

انٹر بینک میں ڈالر کی اڑان جاری، 158 روپے 60 پیسے کا ہوگیا

کراچی (ویب ڈیسک)انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر بڑھنے کا سلسلہ بدھ کے روز بھی جاری رہا اور انٹر بینک مارکیٹ میں ڈالر 80 پیسے اضافے سے 158 روپے 60 پیسے کا ہوگیا۔مارکیٹ کے آغاز میں ڈالر کی قدر 157 روپے 80 پیسے تھی جس میں صفر اعشاریہ 51 فیصد اضافہ ہوا۔ڈالر کی قدر چھ ماہ تک مستحکم رہنے کے بعد پیر کے روز سے اس میں اضافہ شروع ہوا تھا اور ایک ہی دن میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت 3.65 روپے (2.36 فیصد) اضافے سے 157 روپے 90 پیسے پر پہنچ گئی تھی۔اوپن مارکیٹ میں بھی ڈالر کی اڑان جاری ہے اور بدھ کے روز اس کی قدر ایک روپے اضافے سے 158 روپے ہوگئی۔ڈالر کی قدر میں حالیہ اضافے کی وجہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کا مارکیٹ سے سرمایہ واپس نکالنے کو قرار دیا جارہا ہے۔ایکسچینج کمپنی آف پاکستان کے سابق جنرل سیکریٹری ظفر پراچا نے کہا کہ ‘غیر ملکی سرمایہ اسٹاک مارکیٹ میں اپنے اثاثے فروخت کر رہے ہیں جس کے باعث ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے۔’ٹی بلز، جن میں اضافے کی غرض سے خطیر رقم لگائی جاتی ہے، وہ بھی ایک ہفتے سے کم وقت میں میچور ہونے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ‘روپے کی قدر میں کمی نہیں ہونی چاہیے تھی کیونکہ ڈالر کی قدر خود یورو کے مقابلے میں کم ہو رہی ہے، تاہم کورونا وائرس کی وبا کے باعث سرمایہ کاروں میں گھبراہٹ پائی جاتی ہے اور افواہوں نے جنم لیا ہے۔’فارکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے صدر ملک بوستان نے بھی اس موقف کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ ‘کیونکہ سرکاری بلز میچور ہونے جارہے ہیں، سرمایہ کاروں کی اکثریت مارکیٹ میں دوبارہ سرمایہ کاری کے بجائے اپنا پیسہ نکال رہی ہے جس کے باعث انٹر بینک میں ڈالر کی طلب میں اضافہ ہوا ہے۔’خیال رہے کہ گزشتہ روز اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے 8 ماہ میں ترسیلات زر5.37 فیصد بڑھ کر 15 ارب 12 کروڑ 70 لاکھ ڈالر ہوگئیں۔اگرچہ رواں مالی سال کے 8 ماہ میں سالانہ کے حساب سے آمدنی میں اضافہ ہوا تاہم اضافے کی شرح مالی سال 2019 کے اسی عرصے کے 10.44 فیصد کے مقابلے میں کم رہی۔


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved