تازہ تر ین

شکریہ چوہدری صاحب!

سجادوریا
وفاقی وزیرِسائنس اےنڈ ٹےکنالوجی فواد چوہدری اےک بار پھر میڈیا اور سےاست کی توجہ کا مرکز بنے ہوئے ہےں۔چوہدری صاحب کمال کے ذہین،متحرک اور خوبصورت لب و لہجہ کے ساتھ مدلل گفتگو کرنے کے فن مےں بہترین مہارت رکھتے ہےں۔فواد چوہدری سے اختلاف بھی کیا جا سکتا ہے کبھی کبھار دلائل کا ترکش سنبھالے حساس علاقوں مےں بھی داخل ہو جاتے ہےں۔ان کے مخالفین و حاسدین اپنے کلےجے ٹھنڈے کرنے کےلئے ان پر تنقید بھی کر تے ہےں۔لےکن ےہ کمال آدمی ہے ،حاسدین کے درد کا احساس رکھتا ہے ،ان کو نظر انداز کرتا گزرتا چلا جاتا ہے۔ فواد چوہدری کی شخصیت کی خوبی ےہ ہے کہ سےاسی مخالفین سے بحث و مباحثہ کے دوران بھی ان سے اختلاف کو اپنی ذاتی جنگ ےا دشمنی نہیں بننے دےتے بلکہ ہلکی پھلکی نوک جھونک اور چھےڑ چھاڑ مےں بدل دےتے ہےں۔اپنے سےاسی مخالفین سے تعلق اور دوستی بھی رکھتے ہےں۔فواد صاحب نے پانامہ کےس کے دوران سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کے دوران جس لیاقت و قابلیت کا مظاہرہ کیاوہ قابل ستائش تھا ۔مےں کہتا ہوں اس وقت سپریم کورٹ اور ن لیگ کے موقف کے درمیان اپنی محتاط اور مدلل گفتگو کرنا ،اےک تنی ہوئی رسی پر چلنے کے مترادف تھا ۔ میں حےران ہوتا ہوں کہ بعض محترم ہستیاں اےسی بھی ہےں کہ خےالی،جذباتی اور بچپنے کی کچی سوچ سے باہر ہی نہیں نکل پائیں لےکن وزیر،مشیر اور ترجمان بنے ہوئے ہےں۔
فواد چوہدری وزیراطلاعات بنائے گئے تو اےک بہترین اور مناسب چوائس تھے،انہوں نے وزارت اطلاعات مےں اصلاحات کرنے کی کوشش کی ،انکو تبدیل کر دیا گےا،مےں سمجھتا ہوں کہ پہلی کابینہ وزیراعظم نے بنائی جس مےں وزیر خزانہ اسد عمر اور وزیر اطلاعات فواد چوہدری تھے ،ےہ وزیر اعظم کی اپنی سوچ اور انتخاب تھے۔لےکن بعد مےں عمران خان شاید بیوروکرےسی کے زےر اثر چلے گئے۔تنقید ہوئی تو کہا گیا کپتان کی مرضی جہاں چاہے کھلاڑی کو کِھلائے؟پہلی بات تو ےہ اب اس خام خےالی سے باہر نکل آئےں،اندازہ ہو گےا ہو گا کہ کپتان اور وزیراعظم مےں فرق ہو تا ہے ،دوسرا ےہ کہ کپتان کسی بلے باز کی جگہ کسی فاسٹ باولر کو بھےج دے تو اسکو کپتان کی دانشمندی کہا جائے ےا ڈھٹائی کہا جائے؟اب آتے ہےں فواد چوہدری کے گزشتہ دنوں دیے گئے ایک انٹرویو کی جانب ،جس نے سےاست اور صحافت کے تالاب مےں ارتعاش پےدا کردیا ۔فواد چوہدری نے کہا کہ اندرونی اختلافات نے منتخب لوگوں کو کمزور کیا اور بےوروکرےسی طاقتور ہو گئی ۔کیا انہوں نے غلط کہا؟ کیا شاہ محمود قرےشی اور جہانگیرترین کے اختلافات شدید تر نہیں؟ کیا کابینہ میں غیر منتخب افراد شامل نہیں ؟کیا ان ٹےکنو کرےٹس نے کوئی معجزہ سر انجام دیا ؟ان غےر منتخب لوگوں نے کونسی اےسی خدمت سر انجام دی جو منتخب لوگ نہ کر سکتے تھے؟ مجھے ذاتی طور پر اس بات پر اعتراض نہیں کہ اگر کوئی قابل ٹےکنو کرےٹ ضرور ی ہو تو کوئی مسئلہ نہیں لےکن اسکی کارکردگی کیا ہے ؟اس نے فائدہ کیا پہنچاےا؟ ےہ پوچھنا اور سوال اٹھانا تو عوام کا حق ہے۔
میرے خیال میں حکومت تےزی سے ناکامی کی جانب جا رہی ہے اوربد قسمتی سے اس کے ذمہ دار بھی وزیر اعظم عمران خان خود ہےں۔وزیر اعظم عمران خان زمینی حقائق کا ادراک کرتے ہوئے عام آدمی کے مسائل حل کریں عوام کی مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے ۔جب وزراءکو با اختےار نہیں بنائےں گے تو بےوروکرےسی سازشےں کر ے گی اور بےوروکرےٹ ،وزراءسے طاقتور بن جائےں گے ،بےوروکرےسی وزراءکی شکاےتےں لگائے گی تو کام کےسے ہو گا؟جناب وزیر اعظم صاحب آپ کرکٹ کے کپتان اچھے تھے ،لےکن میرے نزدیک ابھی تک وزیر اعظم اچھے نہیں ثابت ہوئے۔ عوامی مسائل خاص کر کرونا وباءکی وجہ سے بہت بڑھ گئے ہیں۔ ملکی معیشت کا حال ہمارے سامنے ہے۔ حکومت قائم ہوئے دو برس بیت چکے ہیں لیکن عوام کو وہ تبدیلی نظر نہیں آ رہی جن کا انہوں نے خواب دیکھا تھا یا انہیں خواب دکھایا گیا تھا۔
مےں حےران ہوں کہ اس وقت سےاسی جدوجہد کرنے والے پیچھے اور غیر منتخب افراد لوگ آگے ہےں۔عمران خان کی سےاسی سمجھ بوجھ کا اندازہ لگائیے کہ جہانگیر ترین اچانک کرپٹ ہو گےا ہے ،جو پہلے تحریک انصاف کو مضبوط کرتے رہے۔آزاد امیدواروں کو اپنے جہاز مےں بٹھا کر لاتے اور عمران خان ان کے گلے مےں تحریک انصاف کاجھنڈا لٹکا کر وزیر اعظم بننے کے خواب اور قریب سے دےکھنے لگتے۔آج جہانگیر ترین برطانیہ بےٹھے ہوئے ہیں۔ےہاں بےوروکرےٹس اپنا شکنجہ مضبوط کئے بےٹھے ہےں۔وفاقی وزراءاےک دوسرے سے خوف زدہ ہےں۔ جناب وزیر اعظم آپ مفادپرستوں ،موقع شناسوں اور خوشامدیوں کے حصار مےں گھرے ہوئے ہےں۔آپ صرف کسی معجزے کے منتظر ہےں ۔اےسا نہیں ہو گا ؟ رےاستےں اور حکومتےں ،سےاسی تدبر و حکمت سے چلائی جاتی ہےں۔جس کا مظاہرہ بالکل نہیں ہو رہا ۔فواد چوہدری نے کمال جرا¿ت کا مظاہرہ کیا ،انہوں نے وزیر سائنس و ٹےکنالوجی ہوتے ہوئے سےاسی زوال کے اسباب کا بر وقت ذکر کردیا ،جس سے وزیر اعظم اور حکومت کو اپنے معاملات دےکھنے کا موقع ملے گا۔مشیران کی کارکردگی پر غور کرنا ہو گا۔فواد چوہدری وزارت کا محتاج نہیں ،وہ بےک وقت وکیل اور اےنکرپرسن بن کر لاکھوں کما سکتا ہے۔لےکن اس نے اگر اپنے گھر کے مسائل پر بات کی ہے تو اسکا مطلب ہے کہ وہ پارٹی ،حکومت اور وزیر اعظم سے مخلص ہے۔اپنے سےاسی معاملات بھی سدھارنے کی بات کی،اختلافات کی سچائی بےان کی،ان اختلافات سے منتخب لوگوں کو پہنچنے والے نقصان کا ذکر کیا ،تو کیا غلط کیا ؟مےں سمجھتا ہوں انہوں نے اپنی پارٹی پر تنقید کرنے کی رواےت ڈالی ہے ، ےہ صرف فواد ہی کر سکتا ہے ۔اسکے لئے ان کو شاباش دی جانی چاہئے ،ان کا شکرگزار ہو نا چاہئے۔مےں تو ےہی کہوں گا ،شکریہ چوہدری صاحب۔
(کالم نگارقومی امورپرلکھتے ہیں)
٭….٭….٭


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved