تازہ تر ین

سوشل میڈیا کے بے جا استعمال سے بچنے کے لئے صارف کا انوکھا اقدام

” تمہاری ڈیوٹی یہ ہے کہ میں فیس بک کھولوں تو مجھے تھپڑ جڑ دینا”

اچھی سے اچھی چیز بھی اگر لت بن جائے اور اس سے معمولات زندگی متاثر ہونے لگیں تو پھر کچھ نہ کچھ کرنا ہی پڑتا ہے.
امریکی شہر سان فرانسسکو کے ایک کمپیوٹر پروگرامر منیش سیٹھی کو بھی جب یہ محسوس ہوا کہ وہ فیس بک وغیرہ پر بہت زیادہ وقت صرف کر رہے ہیں، یہی کوئی 6 گھنٹے روزانہ۔۔ تو انہوں نے سوچا، ایسے تو کام نہیں چلے گا، کچھ کرنا چاہیے. تو دس ماہ پہلے انہوں نے اشتہار دیا کہ ایک ایسے محنتی ورکر کی ضرورت ہے جو میرے فیس بک استعمال کرنے پر مجھے تھپڑ مارنے کے لیے تیار رہے.
20 امیدواروں میں سے انہوں نے کارا نامی خاتون کی خدمات 8 ڈالر فی گھنٹہ پر حاصل کیں۔
بچنے والا وقت استعمال کرکے منیش نے ایک ویئر ایبل کمپنی بنائی ہے جس کا مقصد ایسی ڈیوائس تیار کرنا ہے جو روزمرہ کی عادات بدلنے میں مدد فراہم کرسکے۔
کمپنی نے ایسی ڈیوائس تیار کی ہے جو ناپسندیدہ بات پر برقی جھٹکا لگاتی یا جسم میں سنسناہٹ پیدا کرتی ہے۔
منیش سیٹھی کا کہنا ہے کہ سوشل میڈیا پر وقت کا ضیاع بہت ڈپریس کرتا تھا۔ تھپڑوں نے ان کی کارکردگی 98 فیصد بڑھادی ہے


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2021 All Rights Reserved Dailykhabrain