تازہ تر ین

’ تجارتی کراسنگ پوائنٹس میں اضافے سے معاشی سرگرمیوں کو فروغ حاصل ہوگا ‘

صدر مملکت نے کہا ہے کہ تجارتی کراسنگ پوائنٹس میں اضافے سے بلوچستان میں معاشی سرگرمیوں کو فروغ حاصل ہوگا۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی زیر صدارت بلوچستان میں بارڈر اور ٹریڈ منیجمنٹ پر اجلاس ہوا جس میں بلوچستان کے عوام اور تاجروں کو درپیش مسائل پر بریفنگ دی۔

اجلاس میں صدر مملکت کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا گیا کہ بلوچستان کے دور دراز علاقوں میں پیٹرول پمپس کی سہولت موجود نہیں، بارڈر کے علاقوں میں تاجروں کو ضروری سہولیات جیسا کہ مواصلات، بینکس اور سڑکوں کے بنیادی ڈھانچے کی عدم موجودگی جیسے مسائل کا سامنا ہے۔

وزیرِ خزانہ نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ دو طرفہ تجارت کے فروغ کیلئے مقامی کرنسی میں تجارت کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، وزارت خزانہ بلوچستان کے تاجروں کو ہمسایہ ممالک کے ساتھ تجارت کیلئے تمام ممکنہ مدد فراہم کرے گی۔

اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ بلوچستان میں ہمسایہ ممالک کے ساتھ تجارتی کراسنگ پوائنٹس کی تعداد بڑھانے کی ضرورت ہے، ملکی برآمدات بڑھانے کیلئے متعلقہ ادارے بلوچستان کے تاجروں کو سہولیات فراہم کرنے کیلئے اقدامات کریں۔

صدر مملکت نے کہا کہ تجارتی کراسنگ پوائنٹس میں اضافے سے بلوچستان میں معاشی سرگرمیوں کو فروغ حاصل ہوگا اور برآمدات کا حجم بڑھے گا۔

ڈاکٹر عارف علوی  کا کہنا تھا کہ متعلقہ ادارے کاروبار کرنے میں آسانی پیدا کرنے اور بلوچستان سے دیگر صوبوں تک اشیاء کی ترسیل بہتر بنانے کیلئے عملی اقدامات کریں۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا مزید کہنا تھا کہ وزارت پیٹرولیم سے بلوچستان کے دور دراز علاقوں میں پیٹرول پمپس کی ضروریات پوری کرنے کیلئے بات کرچکا ہوں، گوادر اور کراچی کے مابین سفر آسان بنانے کیلئے مکران کوسٹل ہائی وے پر اضافی پیٹرول پمپس کی ضرورت ہے۔

اجلاس میں چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی، وزیر خزانہ شوکت فیاض ترین اور گورنر بلوچستان سید ظہور احمد آغا ، وزیر اعلیٰ بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو، سیکرٹری داخلہ اور چیف سیکرٹری بلوچستان نے بھی شرکت کی۔


اہم خبریں





دلچسپ و عجیب
کالم
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2021 All Rights Reserved Dailykhabrain