All posts by admin

آئندہ 48 گھنٹوں میں چھوٹو گینگ سے علاقہ خالی کرالیا جائیگا

لاہور (نیوز ایجنسیاں )صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے دعویٰ کیا ہے کہ آئندہ اڑتالیس گھنٹوں میں چھوٹو گینگ یا تو جہنم واصل ہو جائے گایا ہتھیار ڈال دے گا۔ علاقے کو کلیئر کرنے کے بعد رینجرز پولیس کی مدد کیلئے علاقے میں موجود رہے گی۔ پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ چھوٹو گینگ ہمارا سیاسی مخالف نہیں بلکہ جرائم پیشہ گروہ ہے۔ پنجاب حکومت کا عزم ہے کہ اس علاقے کو ہر صورت کلیئر کرایا جائے گا، جبکہ ہتھیار ڈالنے کے علاوہ چھوٹو گینگ کا کوئی مطالبہ قبول نہیں کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ آپریشن میں پولیس اور ایلیٹ فورس کے جوان حصہ لے رہے ہیں، جبکہ رینجرز اور فوج کو بیک اپ پر رکھا گیا ہے۔ چھوٹو گینگ کے کرمینلز بینکرز میں ہونے کی وجہ سے چھ جوان شہید ہوئے۔ رانا ثناء اللہ کا مزید کہنا تھا کہ قومی مفاد کو مدنظر رکھے بغیر بیانات داغ دیئے جاتے ہیں۔ پولیس کو اسلحے اور غذا کی کمی کی خبریں بے بنیاد ہیں۔

21جیلوں میں دہشتگردوں سمیت 348 قیدیوں کو پھانسی

لاہور (میاں افضل سے) صوبے کی 21 سنٹرل جیلوں میں دہشتگردوں سمیت 348 سزائے موت کے قیدی پھانسی کی سولی پر لٹک چکے ہیں۔ جبکہ 3 پھانسی کے منتظر قیدی ذہنی توازن کھو چکے ہیں۔ سنٹرل جیل کوٹ لکھپت میں سب سے سزائے موت پانے والے 45 قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکایا جا چکا ہے جبکہ دوسرے نمبر اڈیالہ جیل راولپنڈی میں 42قیدیوں کو پھانسی دی گی اور سنٹرل جیل بہاولپور میں 32 قیدیوں کو تختہ دار پر لٹکانے سے تیسرے نمبر پر ہے ۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ بعض سنٹرل جیلوں میں سزائے موت کے قیدیوں کو واک نہیں کروائی جاتی اور نہ ہی ان کا چیک اپ کروایا جاتا ہے جس کی وجہ سے پھانسی کے منتظر قیدی پھانسی سے پہلے ہی موت کے منہ میں جا رہے ہیں۔ سزائے موت کے قیدی متعدد بیماریوں کا شکار ہو چکے ہیں ۔ صوبے کی 21 جیل میں دو سالوں کے دوران دہشتگردوں سمیت سزائے موت کے جتنے قیدیوں کو پھانسی دی گئی ایک اعدادو شمار کے مطابق سنٹرل جیل لاہور 45 ، سنٹرل جیل گوجرانوالہ 15، سنٹرل جیل ساہیوال 25 ، ڈسٹرکٹ جیل قصور 5 ، ڈسٹرکٹ جیل سیالکوٹ 18 ، سنٹرل جیل بہاولپور 32، سنٹرل جیل ڈی جی خان 8 ، سنٹرل جیل راولپنڈی 42 ، ڈسٹرکٹ جیل اٹک 17، ڈسٹرکٹ جیل گجرات 16، ڈسٹرکٹ جیل جہلم 6، سنٹرل جیل فیصل آباد 31، سنٹرل جیل میانوالی 16، ڈسٹرکٹ جیل فیصل آباد 11، ڈسٹرکٹ جیل جھنگ 11، ڈسٹرکٹ جیل ٹوبہ ٹیک سنگھ 5، ڈسٹرکٹ جیل سرگودھا 11، سنٹرل جیل ملتان 23 ڈسٹرکٹ جیل وہاڑی 9 اور ہائی سکیورٹی جیل ساہیوال میں 2 قیدیوں کو پھانسی دی جا چکا ہے۔ ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ بعض جیلوں میں سزائے موت کے قیدیوں کو واک نہیں کروائی اور نہ ہی ان کا چیک اپ کروایا جاتا ہے جس کی وجہ سے سزائے موت کے منتظر قیدی پھانسی پر لٹکنے سے قبل موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں۔

کچہ آپریشن،فوجی گن شپ ہیلی کاپٹرپہنچ گئے،علاقے سیل

راجن پور، رحیم یار خان، کچہ جمال، ملتان (نمائندگان، نیوز ایجنسیاں) چھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن میں پنجاب پولیس کو ناکامی کا سامنا، پاک فوج میدان میں آ گئی چھوٹو گینگ کیخلاف جاری آپریشن میں حصہ لینے کیلئے پاک فوج کے جوان پہنچ گئے ہیں۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق پاک فوج کی ایک بٹالین اوکاڑہ سے ملتان پہنچ گئی ہے جوکہ چھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن میں حصہ لے گی جبکہ آپریشن کیلئے گن شپ ہیلی کاپٹرز بھی استعمال کیے جائیں گے۔نجی ٹی وی کا کہناہے کہ گزشتہ روز آئی جی پنجاب نے کور کمانڈر بہاولپور سے ملاقات کی تھی جبکہ پنجاب حکومت کی جانب سے پاک فوج کوچھوٹو گینگ کیخلاف آپریشن میں مدد کیلئے درخواست کی گئی تھی جس کے بعد پاک فوج کا 450جوانوں پر مشتمل دستہ ملتان پہنچ گیاہے۔ کچے کے علاقے میں آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے پنجاب اور سندھ کی سرحد سیل کر دی گئی ہے۔ گن شپ ہیلی کاپٹرپہنچ گئے ہیں اور ڈاکوﺅں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا ہے۔ ڈاکوو¿ں نے پانچ اہلکاروں کی لاشیں پولیس کے حوالے کر دیں جبکہ چار زخمیوں کوچھوڑ دیا۔ تفصیلات کے مطابق راجن پور میں جاری آپریشن ضرب آہن ڈاکوﺅں کو گہری ضرب لگانے میں ناکام رہا۔ بدنام زمانہ ڈاکوﺅں نے پولیس کوجانی نقصان پہنچایا۔ دو ڈی ایس پیز سمیت پچیس اہلکاروں کو بھی یرغمال بنا لیا گیا لیکن آج ڈاکوﺅں نے چار زخمی اہلکاروں کو چھوڑ دیا۔ ڈاکووں نے ایک یرغمالی ایس ایچ اوتھانہ بنگلہ اچھا حنیف غوری کو قتل کر دیا۔ اس سے پہلے ڈاکوﺅں نے پولیس کو خبردار کیا تھاکہ فائرنگ کا سلسلہ بند نہ کیا گیا تو وہ یرغمال اہلکاروں کو قتل کردیں گے۔ پولیس ذرائع کا کہناہے آپریشن میں اب تک تین ڈاکوﺅں کے مارے جانے کی اطلاعات ہیں جبکہ پندرہ زخمی ہوئے۔ مغویوں کی بازیابی کے لیے چھوٹو گینگ اور پولیس میں سونمیانی کے مقام پر مذاکرات جاری ہیں۔ ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب مشتاق سکھیرا نے کور کمانڈرملتان سے ملاقات بھی کی اور راجن پور میں جاری چھوٹو گینگ کے خلاف آپریشن پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر انہوں نے راجن پور کے کچے کے علاقے میں چھوٹو گینگ کے قبضے سے متعلق بھی کور کمانڈر ملتان کو آگاہ کیا۔ راجن پور آٹھ اضلاع کی پولیس چھوٹو گینگ کو قابو نہ کر سکی۔ راجن پور کے علاقے کچا جمال میں سات اہلکاروں کی شہادت اور چوبیس اہلکاروں کے اغوا کے بعد چھوٹو گینگ کے خلاف جمعرات کو دوسرے روز بھی آپریشن معطل رہا۔ مذاکرات کے بعد چھوٹو گینگ نے پانچ اہلکاروں کی لاشیں پتن کے مقام پر پولیس کے حوالے کر دیں۔ ان میں ایس ایچ او حنیف غوری، شکیل، اجمل، طارق اور امان اللہ کی لاشیں شامل ہیں جبکہ چار زخمی پولیس اہلکاروں کو بھی چھوڑ دیا جنہیں شیخ زید اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ چوبیس یرغمالی اہلکاروں کے نام بھی سامنے آ گئے ہیں۔ ان میں اسد اللہ ، فیاض، ریحان، شفیق، الطاف، منیر، مظہر ، اختر، کلیم ، غلام دستگیر شامل ہیں۔ الٰہی بخش، راشد، علمدار، محمد سجاد، سراج ، نعیم، مجاہد ،رفیق، صدیق ، لیاقت، عبدالمجید، افتخار ، عاصم بھی تاحال یرغمال ہیں۔ دوسری طرف پولیس کا کہنا ہے کہ آپریشن میں تین ڈاکو مارے گئے ان میں چھوٹو کا دست راست پہلو پٹھانی ، مجید سیکھانی اور بگی بقرانی شامل ہیں۔ کچے کے علاقے میں آپریشن ضرب عضب کے باعث شمالی وزیرستان سے بھاگ کر آنیوالے دہشتگردوں نے پناہ لے رکھی ہے جس کی شہید ایس ایچ او حنیف غوری نے بھی تصدیق کی تھی۔ چھوٹو گینگ میں 80 سے 100 افراد ہیں جن کے پاس بھارتی ساختہ اینٹی ایئرکرافٹ گنیں بھی موجود ہیں۔ کچہ آپریشن کے دوران چھوٹو گینگ کی طرف سے یرغمال بنائے گئے 7 اہلکاروں کو بھی شہید کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے جبکہ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ 11 ڈاکو مار دیئے گئے ہیں۔ خیرپورسادات سے نامہ نگار کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ چھوٹو نے پولیس سے مطالبہ کیا ہے کہ محفوظ راستہ دیا جائے‘ میرے اور میرے قریبی ساتھیوں کےلئے ایک جہاز دیا جائے جو کہ ہمیں دبئی پہنچا دے۔ ہمارے گروہ میں کالعدم تنظیموں کے دہشت گرد شامل نہیں۔ ذرائع کے مطابق چھوٹو وقفے‘ وقفے سے وائر لیس پر پولیس افسران سے مذاکرات کرتا رہا مگر مذاکرات کامیاب نہ ہو سکے اور چھوٹو گینگ نے مزید 7 یرغمالیوں کو شہید کر دیا جن میں ایک پرائیویٹ شخص بھیشامل ہے جوکہ پولیس پارٹی نے زبردستی بغیر کسی اجرت کے کشتی چلانے پر مامور کیا تھا۔ چھوٹو گینگ نے تمام لاشیں پولیس کو اٹھانے دی ہیں۔ پولیس ذرائع کے مطابق آئی جی پنجاب نے ملتان میں صورتحال سے نمٹنے کےلئے اعلیٰ افسران کی میٹنگ طلب کر لی ہے۔ رحیم یارخان سے تحصیل رپورٹر کے مطابق آئی جی پنجاب کی جانب سے وزیر داخلہ کو خط ارسال کیا گیا ہے جس میں درخواست کی گئی ہے کہ کچہ کے علاقوں کو جرائم پیشہ افراد سے پاک کرنے کیلئے پاک فوج آپریشن کرے۔ ذرائع کے مطابق پاک فوج کے اعلیٰ حکام کی زیر صدارت اہم اجلاس میں فیصلہ کرلیا گیا ہے کہ آپریشن کو ہر قیمت پر کامیاب بنایا جائے گااور یرغمال بنائے گئے۔ پولیس اہلکاروں کی بازیابی کو بھی یقینی بنایا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق فضائی آپریشن کیلئے حکمت عملی بھی مرتب کرلی گئی ہے جو آئندہ 48 گھنٹوں میں متوقع ہے۔ رحیم یار خان سے ڈسٹرکٹ رپورٹر کے مطابق آئی جی پنجاب مشتاق احمد سکھیرا‘ آر پی او ڈیرہ غازی خان رحمت اللہ نیازی‘ رینجرز اور آرمی کے افسران سمیت ہیلی کاپٹر کے ذریعے ملتان روانہ ہوئے۔ این این آئی کے مطابق آئی جی نے کور کمانڈر ملتان سے بھی ملاقات کی۔ صادق آباد سے نمائندہ خبریں کے مطابق کچہ کے علاقوں میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے آپریشن کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ آرمی کے چھ گن شپ کوبرا ہیلی کاپٹر کچہ میں پہنچ گئے۔ رحیم یار خان سے ڈسٹرکٹ رپورٹر اور خانپور سے نامہ نگار کے مطابق پولیس ذرائع نے بتایا کہ کچہ کے علاقہ میں پولیس کی فائرنگ سے ڈاکوﺅں کی 3 خواتین ساتھی اور 2 بچوں سمیت 11 ڈاکو مارے گئے ہیں جن میں چھوٹو بکھرانی کے انتہائی اہم ساتھی بھی شامل ہیں۔ اطلاعا ت کے مطابق اب تک کے مقابلہ میں چھوٹو بکھرانی کے اہم ساتھی قابل عرف کوپر کٹ ولد میوہ قوم سیکھانی سکنہ چک چراغ شاہ‘ اس کا بھائی پہلوان اس کے علاوہ کالو ولد نامعلوم‘ مجید عرف مجیدا بکھرانی، بہرام اندھڑ اور ڈاکوﺅں کی 3 خواتین ساتھی اور 2 بچے بھی پولیس کی طرف سے ہونے والی فائرنگ میں مارے گئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق مجید بکھرانی چھوٹو کا بیٹا تھا۔ 10 زخمی ڈاکوﺅں میں سے 6 کی حالت تشویشناک ہے۔ شہداءکو آبائی علاقوں میں نماز جنازہ کے بعد سپرد خاک کردیاگیا۔ 5جوانوں کی پولیس لائن راجن پور میں نماز جنازہ ادا کر دی گئی۔ نماز جنازہ میں ڈی سی او راجن پور چودھری ظہور حسین گجر ، ضلعی انتظامیہ کے افسران، پولیس افسران ، ریسکیو 1122، علماءکرام ، مذہبی و سماجی رہنما ،وکلاء، ورثاءاور شہریوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ مولانا محمودالحسن قاسمی نے نماز جنازہ پڑھائی۔ پولیس کی طرف سے سلامی پیش کی گئی۔ داجل سے تعلق رکھنے والے انسپکٹر محمد حنیف غوری اور نواحی بستی چھینہ سے تعلق رکھنے والے ایلیٹ فورس کے حافظ محمد اجمل چھینہ کے جسد خاکی پولیس گاڑیوں کے بہت بڑے جلوس کے ساتھ جام پور لائے گئے۔ جلوس کی قیادت ڈی ایس پی جام پور حافظ عبدالرحمان عاصم کررہے تھے۔ نمائندہ چینل ۵ ملتان نعمان بھٹہ نے لائیو ٹیلی فونک گفتگو کے دوران کہا ہے کہ چھوٹو گینگ کافی عرصے سے متحرک ہے۔ 20 سے30 کلو میٹر ایریا ان کے قبضے میں ہے۔ جو لوگ ان کی بات نہیں مانتے ان پر ظلم اور فصلیں تک جلا دی جاتی ہیں۔ یہ ہتھیار خریدنے کےلئے بھی مقامی لوگوں سے بھتہ طلب کرتے ہیں۔ ان تک پہنچنا مشکل نہیں مگر پولیس اور مقامی انتظامیہ بھی ان کے آگے بے بس ہے۔ پولیس نے ہیلی کاپٹرز مانگے جو نہیں دئیے گئے۔ گن شپ ہیلی کاپٹر صرف ریسکیو کےلئے استعمال ہو ا ہے مگر آپریشن میں کوئی عمل دخل نہیں رکھتا۔ ہمارے ذرائع کے مطابق چھوٹو گینگ پولیٹیکل سرپرستی میں چل رہا ہے۔ ہمارے کچھ سیاستدانوں کی سرپرستی سے یہ گینگ بہت مضبوط ہو چکا ہے۔ 4پولیس اہلکاروں کی بازیابی میں ڈپٹی سپیکر شیر علی گورچانی کا نام آ رہا ہے۔
کچہ آپریشن

وزیر اعظم کیخلاف سازشوں کا مقابلہ، ہر فورم پر جواب دینے کا فیصلہ

اسلام آباد (این این آئی‘ آئی این پی‘ اے پی پی) حکومت کا پانامہ لیکس پر اپوزیشن کی جانب سے مذموم مقاصد کی خاطر وزیراعظم کی ذات اور خاندان پر لگائے جانے والے مضحکہ خیز الزامات کا ہر فورم پر موثر جواب دینے کا فیصلہ کر تے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کے اقتصادی ایجنڈے کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ، عوامی ترقی اور تعمیر کے سفر کو الزامات اور اپنی ذاتی خواہشات کی بھینٹ چڑھانے کی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا،حکومت نے اس سے پہلے بھی ایسی سازشوں اور سازشی عناصر کا مقابلہ کیا اور سرخر ہوئی اور اس مرتبہ بھی تمام سیاسی اور قانونی محاذوں پر ان سازشوں کا مقابلہ کیا جائے گا۔ جمعرات کو وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی زیر صدارت مسلم لیگ (ن )کے سنیئر رہنماﺅں کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف،وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز شریف ،وفاقی وزراءسینیٹر پرویز رشید،جنرل (ر)عبدالقادر بلوچ، زاہد حامد، خواجہ سعد رفیق،خواجہ محمد آصف،اٹارنی جنرل آف پاکستان ،سینیٹر مشاہد اللہ نے شرکت کی۔اجلاس میں وزیراعظم نواز شریف کی مکمل اور جلد صحت یابی کیلئے دعا کی گئی،اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اپوزیشن کی جانب سے مذموم مقاصد کی خاطر وزیراعظم کی ذات اور خاندان پر لگائے جانے والے مضحکہ خیز الزامات کا ہر فورم پر جواب دیا جائے گا،اجلاس کے شرکاءکا کہناتھا کہ مسلم لیگ(ن) اس سے پہلے بھی اس طرح کی تمام سازشوں اور سازشی عناصر کا مقابلہ کیا اور اس میں سرخرو ہوئے اور اس مرتبہ بھی تمام سیاسی اور قانونی محاذوں پر ان سازشوں کا مقابلہ کیا جائے گا۔اجلاس کے شرکاءنے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ ایک مرتبہ پھر پاکستان کے اقتصادی ایجنڈے کے سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور عوامی ترقی اور تعمیر کے سفر کوبھی،الزامات اور اپنی ذاتی خواہشات کی بھینٹ چڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے، اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ عوام اور تمام سیاسی قوتوں کو ملکی ترقی اور خوشحالی پر اس مذموم ایجنڈے کے اثرات سے آگاہ کیا جائے گا اور انہیں اعتماد میں لیا جائے گا، اجلاس میں وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے شرکاءکو وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے دی جانے والی ہدایات پہنچاتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے ہدایت کی ہے کہ سازشیوں کو اہمیت نہ دی جائے اور اس پر وقت ضائع کرنے کی بجائے پوری توجہ ملکی ترقی کے منصوبوں کو مکمل کرنے پر دی جائے۔ وزیر اعظم نواز شریف کی ہدایت پر وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے پانامہ لیکس کے معاملے پر اپوزیشن اور حکومت کے اتحادی جماعتوں کو اعتماد میں لینے اور حکومتی موقف بیان کرنے کے لئے کمیٹیاں تشکیل دیدی گئی ہیں اس بات کا فیصلہ وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی زیر صدارت وزیر اعظم ہاﺅ س میں ہونے والے اجلاس میں کیا گیا جس میں وزیر اعلی ٰ پنجاب شہباز شریف ،مریم نواز شریف، وزیر اطلاعات پرویز رشید، وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق ، عبدالقادربلوچ ، مشاہد اللہ خان و دیگر رہنما شریک ہوئے ۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تحریک انصاف اور پیپلز پارٹی کی قیادت سے وزیر خزانہ خود ملاقات کرینگے اور ان کی ملاقات شاہ محمود قریشی اعتزاز احسن اور خورشید شاہ سے ہو گی جب کہ دیگر جماعتوں سے ملاقاتوں کی ذمہ داری وفاقی وزراءکو سونپی گئی ہے۔پرویز رشیداور مشاہد اللہ محمو د خان اچکزئی جبکہ پرویز رشید اور وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق سے ملاقات کریں گے۔زاہد حامد اور اشتراوصاف وکلاءتنظیموں سے ملاقاتیں کرینگے ، وفاقی وزراء سیاسی رہنماوں سے ملاقاتوں کے بارے میں اپنی رپورٹ وزیر خز انہ کو پیش کرینگے۔

ضرب عضب میں شریک فوجی جوانوں کیلئے اعزازات

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) جنرل ہیڈ کوارٹرر جی ایچ کیو)راولپنڈی میں آپریشن ضرب عضب میں حصہ لینے والے بہادر فوجی جوانوں کو آرمی چیف جنرل راحیل شریف نے ملٹری اعزازت سے نوازا ،شہدا کے لواحقین کی خصوصی شرکت۔پاک فوج کے ادارہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر )کے مطابق آپریشن ضرب عضب میں بہادری اور جرات کی داستانیں رقم کرنے والے فوجی جوانوں اور شہدا کو ملٹری اعزازات دینے کی تقریب جنرل ہیڈ کوارٹر میں منعقد کی گئی جس میں فوجی افسران ،شہدااور غازیوں کے لواحقین نے تقریب میں بڑی تعداد میں شرکت کی ۔آر می چیف جنرل راحیل شریف نے آپریشن ضرب عضب میں بہادری پر فوجیوں کو اعزازات سے نوازا ۔تقریب میں 35فوجی افسران کو ستارہ امتیاز اور 36افسران و جوانوں کو تمغہ بصالت دیا گیا جبکہ شہداکے میڈل اور اعزازات ان کے لواحقین نے وصول کیے ۔آرمی چیف نے شہداکے لواحقین کے ساتھ بات چیت بھی کی ۔

جہیز دکھانے ،ایک سے زائد ڈشز پکانے پر پابندی

لاہور (ایجو کیشن رپورٹر) پنجاب اسمبلی نے گزشتہ روز چھ مسودہ قانون اکثریت رائے سے منظور کر لئے – جومسودہ قانون منظور کئے گئے ان میں مسودہ قانون (ترمیم) جنگلات پنجاب 2016، مسودہ قانون فلڈپلین ریگولیشن پنجاب 2015، مسودہ قانون (تریم) ویجیلینس کمیٹیاں پنجاب2016، مسودہ قانون شادی ، بیاہ ، تقریبات پنجاب 2015ء، مسودہ قانون (ترمیم) اکنامک ریسرچ انسٹی ٹیوٹ پنجاب 2016ءاور مسودہ قانون (ترمیم) کمیشن برائے مقام نسواں پنجاب 2015ءشامل ہیں -تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پنجاب اسمبلی کے اجلاس کے دوران ویجیلینس کمیٹیاں بنانے سے متعلق مسودہ قانون اکثریت رائے سے منظور کر لیا گیا جس کے تحت دہشت گردوں کے سہولت کار ، تخریبی اور مشکوک عناصر کی موجودگی و نقل و حرکت کے خلاف کارروائی کے لئے ضلعی اور یونین کونسل کی سطح پر ویجیلینس کمیٹیاں بنانے کا فیصلہ کیا گیا – پنجاب اسمبلی نے ترمیمی بل ویجیلینس کمیٹیاں پنجاب 2016 منظور کر لیا- کمیٹیوں کا کنوینئر ڈی سی او ہو گا – ان کمیٹیوں کا مقصد گلی محلوں میں مشکوک سرگرمیوں پر نظر رکھنے کے نظام کو موثر اور یقینی بنانا ہے – کمیٹی میں پولیس، سپیشل برانچ اور انٹیلی جنس کے نمائندہ کے علاوہ دو ارکان صوبائی اسمبلی اور دو عام شہری شامل کئے جائیں گے – کمیٹی یونین کونسل کی سطح پر مقامی ویجیلینس کمیٹی تشکیل دے گی- کمیٹی کا رکن بننے والے فرد کی جانچ پڑتال کی جائے گی – سپیشل برانچ اور سی ٹی ڈی مقامی ویجیلینس کمیوں کے اراکین کو ٹریننگ دے گی- کمیٹی یونین کونسل سطح پر اپنے دائرہ اختیارمیں مشکوک افراد کی موجود گی ، فرقہ واریت یا تخریب کاری کو ہوا دینے والے عناصر کے بارے میں معلومات اکٹھا کرے گی- اس کے علاوہ کمیٹی ممنوعہ اور غیر قانونی تنظیموں کے چندہ اکٹھا کرنے ، وال چاکنگ ، آڈیو، ویڈیو ، ممنوعہ مواد تقسیم کرنے والے عناصر پر بھی نظر رکھے گی- کمیٹی کے ذمہ رہائش پذیر کرائے داروں کی معلومات اکٹھا کرنے کا کام بھی ہو گا – کمیٹی میں شامل اراکین کو کسی قسم کا معاوضہ نہیں دیا جائے گا-پنجاب اسمبلی نے شادی بیاہ کی تقریبات میں ون ڈش اور اوقات کے آرڈیننس کو بھی قانونی شکل دے دی اور اس حوالے سے بل منظور کر لیا گیا- جس کے تحت شادہ بیانہ یعنی رسم نکاح ، مائیوں، مہدی ، بارات اور ولیمہ پر ون ڈش کھانا ہی دیا جائے گا – سالن ، چاول، سالاد، گرم اور ٹھنڈے مشروبات ، روٹی یا نان اور ایک سویٹ ڈش کی پابندی کو یقینی بنایا جائے گا-نمودونمائش والی رسومات پر پابندی ہو گی – گلی ، سڑک، پبلک پارک یا اوپن جگہ پر لائٹیں لگانے پر بھی پابندی ہو گی – لوگوں کو جہیز دکھانے کی بھی اجازت نہیں ہو گی – شادی کے موقع پر گھر میں آئے ہوئے مہمانوں پر ون ڈش کی پابندی نہیں ہو گی -قانون کی خلاف ورزی کی صورت میں ایک ماہ قید اور بیس لاکھ روپے تک جرمانہ ہو سکے گا- شادی تقریبات میں آتش بازی بھی نہیں کی جا سکے گی۔

پانامہ لیکس پر جہاز ڈپلومیسی….عمران ،نثار کا اکھٹے سفر

لندن (وجاہت علی خان سے) پانامہ لیکس میں وزیراعظم نواز شریف اور ان کی فیملی کے بعض افراد کا نام آنے پر وزیراعظم و آصف علی زرداری کی لندن میں مروجودگی اور عمران خان و چودھری نثار علی خان کے ایک ہی جہاز میں پاکستان سے لندن تک کا اکٹھے سفر کرنے کے بعد ایک نیا لندن پلان سامنے آیا ہے جس کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان مسلم لیگ ن کے درمیان بیک ڈور رابطوں کے ذریعے یہ فیصلہ ہو چکا ہے کہ اس معاملہ میں رائے ونڈ میں دھرنے یا مظاہرے میں پاکستان تحریک انصاف کا ساتھ نہیں دیا جائے گااس سلسلہ میں مسلم لیگ اور تحریک ا ناصف کے ایک باوثوق ذرائع نے خبریں کو بتایا کہ جہاز ڈپلومیسی کے ذریعہ عمران خان اور چودھری نثار علی خان کے مابین بھی حالیہ صورتحال پر سیر حاصل گفتگو اور چند اہم نکات طے ہوئے ہیں جن کے نیجہ میں کہا جا رہا ہے کہ ممکن ہے رائے ونڈ تک جانے کی ضرورت پیش نہ آئے ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی کی اعلیٰ قیادت نے فیصلہ کیا ہے کہ دھرنا سیاست کی بجائے پاکستان مسلم لیگ سے کچھ لو اور کچھ دو کی پالیسی پر عمل کر کے سیاسی فوائد حاصل کئے جائیں اورآصف علی زرداری یہ فیصلہ کر چکے ہیں کہ اس ضمن میں عمران خان کے ساتھ نہیں دیا جائے گا اس سلسلہ میں ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ لندن میں وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف علی زرداری کی کوئی ملاقات نہیں ہو گی اس ضمن میں ذرائع کا کہنا ہے کہ کیونکہ پیپلز پارٹی پنجاب کے بعض سرکردہ رہنماﺅں سمیت چودھری اعتزاز احسن بھی سمجھتے ہیں کہ پیپلزپارٹی کو تحریک انصاف کا بھر پور ساتھ دے کر وزیراعظم پر دباﺅ شدید تر کیا جائے اور ان کی حالیہ کمزوری سے بھرپور فائدہ اٹھایا جائے لیکن آصف علی زرداری اعتزاز احسن اور دیگر پارٹی رہنماﺅں سے متفق نہیں ہیں ذرائع کے مطابق اعتزاز احسن اور دیگر پارٹی رہنماﺅں کو اعلیٰ قیادت کا واضح پیغام دے دیا گیا ہے اگر اس کے باوجود اعلیٰ قیادت کے فیصلے کے برعکس ہوا تو یہ صریحاً آصف علی زرداری کے فیصلے کی نفی اور بغاوت کو پارٹی کا پالیسی بیان نہیں سمجھا جائے گا۔

پاکستان کا 2کھرب ڈالر کے حصول کیلئے سوئس حکام سے رابطہ

اسلام آباد (صباح نیوز) قومی اسمبلی کو آگاہ کیا گیا ہے کہ پاکستانیوں کے 200 ارب ڈالر کے اکاﺅنٹس تک رسائی کے لئے سوئس حکومت سے رابطہ کیا گیا ہے رسائی ملنے پر پتا چلے گا کہ یہ پیسے کسی ضابطہ کار کے تحت یا بلیک منی کے ذریعے گئے، معلومات ملنے پر ہی کارروائی شروع ہوسکتی ہے ۔ وفاقی دارالحکومت میں پنجاب کی طرز پر”اسلام آباد فوڈ اتھارٹی“کے قیام کےلئے قانونی کارروائی مکمل ہو گئی ہے اتھارٹی کا جلد اسلام آباد میں قیام عمل میں آ جائے گا۔ حکومت نے قومی اسمبلی میں نیشنل ایکشن پلان کی وجہ سے ملک میں امن و امان کی صورتحال بہت بہتر ہونے کا دعوی بھی کیا ہے ۔ جمعرات کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران منزہ حسن کے سوال کے جواب میں وزیر مملکت برائے داخلہ انجینئر بلیغ الرحمان نے بتایا کہ ملاوٹ پر قابو پانے کے لئے اسلام آباد میں مہم شروع ہے۔ اسلام آباد میں کہیں بھی حرام گوشت نہیں پکڑا گیا۔ غذائی کاروبار کے معیار کو جانچنے اور ملاوٹ و ناقص خوراک پر قابو پانے کے ضابطہ کار کے لئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کی طرز پر اسلام آباد میں فوڈ اتھارٹی قائم کرنے کی تجویز زیر غور ہے۔ قانونی کمیٹی نے مسودہ قانون کو فائنل کر دیا ہے ۔ عائشہ سید کے سوال کے جواب میں بلیغ الرحمان نے بتایا کہ نیشنل ایکشن پلان ہمارا قومی پروگرام ہے جس کو ہر ایک ملکیت دیتاہے۔ اس سے آج ملک میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوئی ہے۔ وسائل کی کوئی کمی نہیں، نیکٹا کا سالانہ بجٹ سوا ارب روپے تک کر دیا گیا ہے۔ 28 وزارتوں اور صوبوں کا کردار ہے 2015-16ءمیں نیکٹا کوایک ارب اکیس کروڑ روپے سے زائد کا فنڈز دیا گیا۔ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ نیشنل ایکشن پلان کے نتائج پوری قوم کے سامنے ہیں نفرت انگیز تقریر و انتہاءپسندانہ مواد کی روک تھام ممنوعہ تنظیموں، افراد کے دوبارہ منظر عام پر آنے سے روکنا، مدارس کا اندراج و انضباط، دہشت گردوں کے کمیونیکیشن نیٹ ورک کو تباہ کرنا اور دہشت گردی کو میڈیا میں بڑھا چڑھا کر پیش کرنے پر پابندی اس کے نمایاں نکات ہیں۔ قومی اسمبلی کو یہ بھی بتایا گیا ہے کوئی شادی شدہ خاتون اپنا شناختی کارڈ تبدیل کرواتی ہے اور پرانے کارڈ کی تفصیلات ظاہر نہیں کرتی تو اس کا کارڈ بلاک کر دیا جاتا ہے۔ ایک لاکھ 3 ہزار غیر قانونی امیگرینٹس رجسٹرڈ ہوگئے ہیں، افغان مہاجرین کی وطن واپسی کے لئے تاریخ میں توسیع کی گئی ہے۔ وزیرمملکت نے بتایا کہ شادی کے بعد نیا شناختی کارڈ بنوانا جرم ہے، اگر اس کو پرانے کارڈ کے ساتھ لنک نہ کیا جائے۔ اس پر زیرو ٹالرینس ہے، اس کو بلاک کر دیا جاتا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں رانا محمد افضل نے بتایا کہ براہ راست سرمایہ کاری اور شراکت داری ترجیح ہے ، ہمارا تجارتی خسارہ اور بجٹ خسارہ کم ہو رہا ہے۔ مالیاتی ذمہ داری و تجدید قرضہ ایکٹ 2005ءمیں ترمیم کا ارادر ہے۔ اس وقت جی ڈی پی شرح قرضہ کا 60 فیصد ہے تاہم 2032-33ءمیں اس کو 50 فیصد تک لایا جائے گا۔ پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر 20 ارب ڈالر سے تجاوز کر چکے ہیں عارف علوی کے سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ ہم نے سوئس حکومت کو اقتدار میں آتے ہی اپروچ کیا، سوئس حکومت کی طرف سے ہر ملاقات کے لئے تاریخ دی جاتی ہے، یہ تاریخ پاکستان نہیں دے سکتا۔ جب ان 200 ارب ڈالر کے اکاﺅنٹس تک رسائی ہوگی، تب پتا چلے گا کہ یہ پیسے کسی ۔ضابطہ یا بلیک منی کے ذریعے گئے تب ہی کارروائی ہوسکے گی قومی اسمبلی کو یہ بھی بتایا گیا ہے کہ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کا 16 اضلاع میں نئے سرے سے سروے کا پہلا مرحلہ جون 2016ءتک شروع ہونے کی توقع ہے۔ بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام نے ملک بھر میں مستحق افراد کا ایک مرتبہ پھر سروے کروانے کے عمل کا آغاز کیا ہے۔ یہ بنیادی طور پر پیچیدہ عمل ہے اور اس کے لئے مالی وسائل غور و فکر اور مختلف فریقوں کی شراکت درکار ہے لہذا یہ عمل پوری طرح بروئے کار آنے میں وقت لگے گا، سروے مرحلہ وار منعقد ہوگا۔ رواں سال ملک کے 16 اضلاع میں یہ سروے مکمل ہونے کی امید ہے جبکہ باقی علاقوں میں سروے کا دوسرا مرحلہ آئندہ سال مکمل ہوگا۔ جب کہ وزارت داخلہ کے مطابق اسلام آباد میں خطیبوں اور مﺅذن کی 52 اسامیاں خالی ہیں۔ وزارت داخلہ کی جانب سے آگاہ کیا گیا کہ ہے اسلام آباد میں خطیب کی 30 اور مﺅذن کی 12 اسامیاں خالی ہیں۔

قومی اسمبلی کا اجلاس ایک مرتبہ پھرمچھلی منڈی میں تبدیل،فاٹا بارے فیصلہ نہ ہو نے پر اپو زیشن کا واک آﺅٹ،کورم بھی پو را نہ ہو سکا

اسلا م آ با د (ویب ڈیسک)قومی اسمبلی کا اجلاس ایک مرتبہ پھر فاٹا بل پیش نہ کرنے اور اپوزیشن کے واک آو¿ٹ کے بعد کورم نہ پورے ہونے پر ملتوی کردیا گیا۔ قومی اسمبلی کا اجلاس اسپیکر سردار ایاز صادق کی زیرصدارت شروع ہوا تو حکومت کی جانب سے آج بھی فاٹا اصلاحات بل ایوان میں پیش نہ کیا جاسکا۔حکومت کی جانب سے فاٹا اصلاحات بل ایوان میں پیش نہ کیے جانے پر اپوزیشن کا احتجاج مسلسل جاری ہے اور آج بھی بل پیش نہ کرنے پر اپوزیشن نے اسمبلی کارروائی سے واک آو¿ٹ کیا۔ایوان میں اظہار خیال کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے رکن اسمبلی سید نوید قمر نے کہا کہ قومی خزانے سے بھاری رقم ایوان پر خرچ ہوتی ہے لیکن کچھ حاصل نہیں، قومی اسمبلی ایجنڈے سے فاٹا سے متعلق نکات راتوں رات نکال لیے جاتے ہیں.