All posts by Daily Khabrain

میشا شفیع کے وکیل کی جرح مکمل،گلو کا رہ کے گواہ بیانات قلمبند کرانے کیلئے 7 اکتوبر کو طلب

لاہور (ویب ڈیسک )گلوکار و اداکار علی ظفر کی جانب سے گلوکارہ میشا شفیع کے خلاف دائر کیے ایک ارب ہرجانے کے کیس میں علی ظفر اور اس کے گواہوں کے بیانات اور جرح مکمل ہوگئی۔میشا شفیع کے وکلا نے تین دن تک گلوکار علی ظفر سے جرح کی۔لاہور کی سیشن کورٹ میں جج امجد شاہ نے کیس کی سماعت کی اور تیسرے دن بھی علی ظفر جرح کے لیے پیش ہوئے۔گلوکار و اداکار اس سے قبل گزشتہ روز اور 19 ستمبر کو بھی جرح کے لیے عدالت میں پیش ہوئے تھے۔تیسرے روز میشا شفیع کے وکیل ثاقب جیلانی نے علی ظفر سے جرح کی اور آج ان کی جرح مکمل کرلی گئی۔علی ظفر کی جرح ان کے 4 جولائی کو دیے گئے بیان پر کی گئی، ان سے قبل ان کے تمام 12 گواہوں کے بیانات قلم بند کرنے سمیت ان کی جرح بھی مکمل کی جا چکی ہے۔علی ظفر کی جرح مکمل ہونے کے بعد عدالت نے کیس کی سماعت آئندہ ماہ 7 اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے میشا شفیع کے گواہان کو طلب کرلیا۔ابتدائی طور پر میشا شفیع کے گواہوں کے بیانات قلم بند ہوں گے جس کے بعد اداکارہ کا بیان قلم بند ہونے کے بعد ان تمام سے جرح کی جائے گی۔یہ کیس گزشتہ ڈیڑھ سال سے زیر سماعت ہے اور اس کی متعدد سماعتیں ہوئیں اور اسی کیس میں میشا شفیع نے سیشن جج پر بھی بد اعتمادی کا اظہار کیا تھا اور ان کی درخواست پر سماعت کرنے والے جج کو بھی تبدیل کیا گیا تھا۔اسی کیس میں تاخیری حربے استعمال کرنے کے خلاف میشا شفیع نے لاہور ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ میں بھی درخواستیں دائر کی تھیں اور دونوں اعلیٰ عدالتوں نے سیشن کورٹ کو گواہوں کو جرح کے لیے وقت دینے سمیت مناسب وقت میں کیس کا فیصلہ سنانے کی ہدایت بھی کی تھی۔اسی کیس میں علی ظفر کی جانب سے پیش کیے گئے 12 گواہان نے عدالت میں بیان دیا تھا کہ انہوں نے علی ظفر کو میشا شفیع کو جنسی ہراساں کرتے ہوئے نہیں دیکھا اور ان کے سامنے ایسا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔میشا شفیع نے اپریل 2018 میں ٹوئٹ کے ذریعے علی ظفر پر جنسی ہراسگی کا الزام عائد کیا تھا، جسے گلوکار نے مسترد کردیا تھا۔بعد ازاں علی ظفر نے اداکارہ کے خلاف ایک ارب روپے ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا تھا جس پر کیس چل رہا ہے، دوسری جانب میشا شفیع نے بھی علی ظفر کے خلاف اسی عدالت میں 2 ارب روپے کے ہرجانے کا دعویٰ دائر کر رکھا ہے اور گلوکارہ کی درخواست پر آئندہ ماہ سماعت ہوگی۔

328 چھوٹی بچیوں سمیت رتو ڈیرو میں ایڈز کے مریضوں کی تعدادمیں اچانک خو فنا ک اضا فہ

 

اسلام آباد(ویب ڈیسک): رتو ڈیرو میں ایڈز سے متاثرہ مریضوں کی تعداد مسلسل اضافے کے باعث 1 ہزار 46 تک جاپہنچی ہے۔لاڑکانہ کی سب ڈویڑن رتو ڈیرو میں ایڈز کے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافے کو روکنے کے لیے گلوبل فنڈ کا رتو ڈیرو میں ایڈز کے متاثرہ مریضوں کے لیے ایک ملین ڈالر دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق رتو ڈیرو میں 510 بچوں میں ایڈز پایا گیا ہے جب کہ 155 لڑکیوں اور 53 لڑکوں میں ایڈز کی تشیخص ہو چکی ہے، 328 چھوٹی بچیوں میں بھی ایڈز کے جراثیم پائے گئے ہیں۔رتوڈیرو میں گلوبل فنڈ کے تعاون سے ایڈز کے متاثرہ مریضوں کو ساری زندگی کے لیے علاج معالجے کی سہولت فراہم کرنے کی حکمت تیار کر لی گئی ہے ساتھ ہی ساتھ ایڈز کے مرض سے نمٹنے کے لیے سرویلنس سٹم شروع کرنے پر بھی کام شروع کر دیا گیا ہے۔

ملکہ ترنم کاآج93واں یوم پیدائش،مداحوں نے خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا

ٹھٹھہ صادق آباد (ویب ڈیسک ) برصغیر کی معروف گلوکارہ ملکہ ترنم نور جہاں کا93واں یوم پیدائش آج 21ستمبر بروز ہفتہ منایا جارہا ہے ۔اس سلسلے میں لاہور،کراچی،قصور ،ملتان،ٹھٹھہ صادق آباد اور دیگر شہروں میں ان کے مداحوں نے انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے خصوصی تقاریب کا اہتمام کیا ہوا ہے۔میڈم نور جہاں کی سالگرہ کے حوالے سے ریڈیو اور ٹی وی چینلز خصوصی پروگرام نشر کر رہے ہیں جن میں ملک ترنم نور جہاں کی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا جارہا ہے اور ان کے گائے ہوئے مشہور فلمی وغیر فلمی گیت نشر کیے جارہے ہیں۔ملکہ ترنم نور جہاں21ستمبر 1926ء کو عظیم صوفی شاعر بلھے شاہ کی دھرتی قصور میں پیدا ہوئیں انہوں نے سٹیج اداکاری سے اپنے کیرئیر کا آغاز کیا۔ملکہ ترنم نور جہاں کا اصل نام اللہ وسائی تھا جبکہ نور جہاں ان کا فلمی نام تھا انہوں نے گلوکاری کے ساتھ ساتھ اداکاری میں بھی اپنے جوہر دکھائے انہوں نے ایک موسیقار گھرانے میں آنکھ کھولی اس لیے موسیقی انہیں وراثت میں ملی ملکہ ترنم نور جہاں نے اپنے فنی کیرئیر کے دوران ہزاروں گیت گائے انہوں نے 1965ء کی پاک بھارت جنگ کے دوران قومی نغمے بھی گائے جو کہ ہماری قومی تاریخ کا ایک اہم حصہ ہیں۔میڈم نور جہاں کی خوبصورت اور کانوں میں رس گھولنے والی آواز کی وجہ سے انہیں ملکہ ترنم کا خطاب ملا۔میڈم نور جہاں 23دسمبر 2000ءکو دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گئی تھیںان کی عمر 74برس تھی۔

پورے ملک کی طرح وفاقی دارالحکومت میں بھی ڈینگی خطرناک حد تک بڑھنے لگا

 

اسلام آباد: (ویب ڈیسک)وفاقی دارالحکومت کے سب سے بڑے اسپتال پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ڈینگی کے 150 مشتبہ مریض لائے گئے ہیں۔ان تفصیلات سے پمز کے ترجمان نے میڈیا کو آگاہ کیا ہے، ترجمان پمز کے مطابق 150 میں سے 50 مریض میں ڈینگی وائرس کی تشخیص ہو گئی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ پمز کے آئسولیشن وارڈ میں ڈینگی کے 50 مریض داخل ہیں، جن میں سے تین مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔واضح رہے کہ پمز میں گزشتہ دو ماہ میں ڈینگی کے 5000 مشتبہ مریض لائے گے ہیں۔پولی کلینک کے آئسولایشن وارڈ میں ڈینگی کے 60 مریض زیر علاج ہیں، اس اسپتال میں اب تک ڈینگی کی 410 مریضوں کا علاج کیا جا چکا ہے۔اسلام آباد اور راولپنڈی میں ڈینگی وائرس کے حوالے سے ہائی رسک ایریاز قرار دیا گیا ہے اور جڑواں شہروں کے سرکاری اور پرائیویٹ اسپتالوں میں ڈینگی کے مشتبہ مریضوں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔

 

دورہ امریکا سے پہلے کشمیریوں کے قا تل بھارتی وزیر اعظم کی خفت اور خجالت، وزیر اعظم عمران خان کو پذیرائی ملنے لگی

لاہور: (ویب رپو رٹ) بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی ایک ہفتے کے دورے پر امریکا روانہ ہو گئے لیکن ذلت و رسوائی نے پہلے ہی ان کا پیچھا کرنا شروع کر دیا ہے جبکہ وزیر اعظم عمران خان کو پذیرائی ملنے لگی، پاکستان نے نر یندر مودی کو اپنی فضائی حدود کی اجازت دینے سے انکار کر کے بے آبرو کر دیا تھا جبکہ امریکا پہنچنے سے پہلے امریکی خارجہ کمیٹی کی چیئرمین ایلٹ اینگل سمیت متعدد ارکان کانگریس نے مودی کے خطاب کی تقریب میں شرکت کے دعوت ناموں کو ٹھکرا دیا، شواہد بتا رہے ہیں کہ وہ امریکا میں تذلیل سمیٹنے جا رہے ہیں۔ امریکی کانگریس کی جنوبی ایشیا کمیٹی کے چیئرمین بریڈ شرمین نے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ وہ مودی کیساتھ محض تصویریں بنانے کیلئے نہیں جانا چاہتے، افریقن امریکن کاکس کی چیئر پرسن کیرن بیسن نے مودی ٹیم کی جانب سے دعوت پر شٹ اپ کال دے دی، کانگریس لاطینی امریکن کاکس کے چیئرمین ٹونی ارڈیناس نے بھی مودی کی تقریب میں نہ جانے کا اعلان کر دیا جبکہ ایشیائی امریکن اینڈ پیسفک آئی لینڈرز کی چیئر پرسن ڈاکٹر جوڈی چو نے مودی کو سننے سے ہی انکار کر دیا، بھارتی وزیر اعظم کی خفت اور خجالت کا صرف یہی سامان نہیں بلکہ ہیوسٹن کی عدالت نے مودی اور ان کے وزیر داخلہ امیت شاہ کو انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر طلب کر لیا اور 21 دن کے اندر جواب داخل کرانے کا حکم دیا ہے۔ خالصتان تحریک ا?زادی کے سکھ رہنماوں نے عدالت میں درخواست دائر کی تھی۔

وادی میں بھارتی پابندیوں کا 48 واں روز، انڈین فوج کا گھروں پر دھاوا،توڑ پھوڑ،گرفتا ریاں

سرینگر: (ویب ڈیسک) مقبوضہ وادی میں بھارتی پابندیوں کا آج 48 واں روز ہے، بھارتی فوج نے کپواڑا میں گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ کی، 2 افراد کو گرفتار کرلیا۔کشمیری اپنے ہی گھروں میں قیدی بن کر رہ گئے، بھارتی فوج نے کپواڑا میں گھر پر دھاوا بول دیا اور سامان کی توڑ پھوڑ کی، پلواما میں 2 افراد کو گرفتار کرلیا۔ مقبوضہ وادی میں 5 اگست سے کرفیو نافذ ہے، چپے چپے پر بھارتی فوج تعینات ہے۔لوگوں کو گھروں سے نکلنے پر تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے، انٹرنیٹ، موبائل سروس بھی بند ہے، تمام حریت اور سیاسی رہنماو¿ں کو گھر اور جیلوں میں نظر بند کر رکھا ہے۔یاد رہے گزشتہ روز نماز جمعہ کے بعد وادی بھر میں مودی سرکار کے خلاف مظاہرے ہوئے، بارہمولا، کپواڑا، باندی پورہ، پلوامہ اور شوپیاں سمیت مختلف اضلاع میں شہری سڑکوں پر نکل آئے۔آزادی کے حق میں اور مودی سرکار کے مظالم کے خلاف آواز بلند کرتے نہتے افراد پر قابض فوج نے آنسو گیس کی شیلنگ کی اور گولیاں برسائیں جس سے متعدد کی حالت غیر ہوگئی۔

میٹروپولیٹن کارپوریشن اور بلدیاتی اداروں میں مفت انٹرنیٹ کی سہولت ختم

لاہور:(ویب ڈیسک) موجودہ حکومت نے شہر لاہور کے باسیوں سے ایک اور سہولت چِھینتے ہوئے میٹروپولیٹن کارپوریشن اور بلدیاتی اداروں میں مفت انٹرنیٹ کی سہولت ختم کر دی ہے۔بزدار سرکار سابق دور کا عوامی مقامات اور سرکاری دفاتر میں مفت وائی فائی فراہم کرنے کا منصوبہ جاری رکھنے میں ناکام ہو گئی ہے۔ پنجاب میں پی ٹی آئی حکومت نے میٹروپولیٹن کارپوریشن اور بلدیاتی اداروں میں مفت انٹرنیٹ کی سہولت ختم کر دی ہے۔اس ضمن میں پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ نے متعلقہ اداروں کو ڈیوائسز سمیت دیگر مشینری کی واپسی کے لیے مراسلہ بھی جاری کر دیا ہے۔میٹروپولیٹن کارپوریشن اور بلدیاتی اداروں میں مفت وائی فائی کی سہولت چِھن جانے پر شہریوں کا کہنا ہے کہ یہ ایک اچھی سہولت تھی، نیٹ استعمال کر لیتے تھے کسی بھی قسم کی معلومات باآسانی مل جاتی تھیں۔مسائل کے حل کیلئے سرکاری دفاتر کا رخ کرنے والے سائلین کا کہنا ہے کہ مفت وائی فائی سے متعلقہ محکمے اور افسروں بارے معلومات حاصل کرنے میں آسانی ہوتی تھی۔

عائشہ عمرکا مختصر شرٹ اور تنگ پینٹ کیسا تھ پا کستان کی نمائندگی کا اچھوتا انداز مگر تنقید کی زد میں بھی آ گئیں

نیو یا ر ک (ویب ڈیسک)عائشہ عمر نے بین الاقوامی سالانہ فیسٹول برننگ مین 2019 میں شرکت کی جو امریکا کے نیویڈا ریگستان پر منعقد کیا گیا۔اس وقت ادکارہ عائشہ عمر عالمی سطح پر نت نئے انداز سے پاکستان کی نمائندگی کررہی ہیں لیکن وہ مداحوں کی شدید تنقید کی زد میں بھی ہیں۔برننگ مین فیسٹیول میں ہر سال مختلف ممالک اور قومیت سے تعلق رکھنے والے افراد شرکت کرتے ہیں جس میں مختلف ثقافت اور فن کی نمائش ہوتی ہے۔اداکارہ عائشہ عمر بھی اس فیسٹیول کا حصہ بنیں اور پاکستان کی نمائندگی کی۔اداکارہ نے فیسٹیول میں لی گئی چند تصاویر شیئر کیں جس میں سے ایک تصویر پر انہیں شدید تنقید کا سامنا ہے۔تصویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ اداکارہ نے پاکستان کی نمائندگی کرنے کے لیے سندھی ثقافت ‘رلی’ کے ڈیزائن والی مختصر شرٹ اور تنگ پینٹ کا انتخاب کرکے پاکستان کے جھنڈے والی سائیکل پر بیٹھے پوز دیا ہے۔

بے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کا گھیرا مزید تنگ، کیسوں کی سماعت کیلیے 3بینچ قائم

اسلام آباد: (ویب ڈیسک) وفاقی حکومت نے بے نامی جائیدادیں رکھنے والوں کے خلاف گھیرا مزید تنگ کردیا ہے۔حکومت نے بے نامی جائیدادیں و اثاثے رکھنے والوں کے کیسوں کی سماعت کیلیے 3بینچ قائم کردیے ہیں۔ یہ ایڈوجڈیکیٹنگ اتھارٹی بینچ اسلام آباد،لاہور اور کراچی میں بیٹھیں گے اور کیسوں کی سماعت کریں گے،ان کے دائرہ اختیار کا بھی تعین کردیا گیا ہے جس کے بعد اب ایڈجوڈیکیٹنگ اتھارٹی مکمل طور پر فعال ہوگئی ہے۔نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ بے نامی ٹرانزیکشن ایکٹ 2017 ئ کے تحت قائم کیے جانے والے ان 3بینچوں میں سے پہلا بینچ اسلام آباد میں قائم کیا گیا ہے۔ یہ بینچ صوبہ خیبرپختونخواہ سمیت اسلام ا?باد کیپیٹل ٹیرٹری اور صوبہ پنجاب کے راولپنڈی ڈویڑن کے بے نامی کے کیسوں کی سماعت کرے گا جبکہ دوسرا بینچ لاہور میں بیٹھے گا اور یہ بینچ راولپنڈی کے سوا باقی پورے پنجاب کی بے نامی جائیدادوں و بے نامی ٹرانزیکشنز و اثاثہ جات سے متعلق کیسوں کی سماعت کریگا۔تیسرا بینچ کراچی میں بیٹھے گا جو پورے صوبہ سندھ اور صوبہ بلوچستان کی بے نامی جائیدادوں و بے نامی ٹرانزیکشنز و اثاثہ جات سے متعلق کیسوں کی سماعت کریگا

لنکا کے خلاف ون ڈے سیریز ،قومی اسکواڈ کا اعلان، حسن علی جگہ نہیں بنا پائے

لاہور (ویب ڈیسک) ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق نے سری لنکا کے خلاف ون ڈے سیریز کے لیے قومی اسکواڈ کا اعلان کیا۔ پاک سری لنکا ون ڈے سیریز کی قیادت سرفراز احمد کریں گے۔سیریز کے لیے قومی اسکواڈ میں شامل دیگر کھلاڑیوں میں امام الحق ، عابد علی ،آصف علی ،فخر زمان ، حارث سہیل ، محمد حسنین ،افتخار احمد، عماد وسیم، شاداب خان ، وہاب ریاض ، محمد عامر ، محمد حسنین ، عثمان شنواری اور محمد نواز شامل ہیں۔ حسن علی ٹیم میں جگہ نہیں بنا پائے۔واضح رہے کہ پاکستان اور سری لنکا کے درمیان 3 میچز کی سیریز کراچی میں کھیلی جائے گی۔