All posts by Saqib Nasir

سپریم کورٹ: شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی نیب کی اپیل خارج

(ویب ڈیسک)سپریم کورٹ نے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں شامل کرنے سے متعلق نیب کی اپیل کو خارج کردیا۔

عدالت عظمیٰ میں جسٹس مشیر عالم کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے نیب کی اپیل پر سماعت کی، اس دوران ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب جہانزیب بھروانا پیش ہوئے۔

دوران سماعت نیب کے وکیل نے دلائل دیے کے ای سی ایل میں نام نہ ہونے کی وجہ سے اکثر ملزمان فرار ہوجاتے ہیں، یہی نہیں انکوائری کے مراحل میں بھی مختلف مقدمات میں نامزد 6 ملزمان بھاگ چکے ہیں۔

انہوں نے مؤقف اپنایا کہ ملزم شہباز شریف پر آمدنی سے زائد اثاثے بنانے کا الزام ہے جبکہ ملزم منی لانڈرنگ میں بھی ملوث ہے۔

اس پر عدالتی بینج کے رکن جسٹس منیب اختر نے ریمارکس دیے کہ 4 روز قبل ہی عدالت عظمیٰ کے 10 رکنی فل کورٹ نے منی لانڈرنگ سے متعلق فیصلہ سنایا ہے، آپ فیصلہ پڑھ کر کیوں نہیں آتے۔

انہوں نے ریمارکس دیے کہ جب یہ درخواست دائر کی گئی تھی اس وقت صورتحال مختلف تھی، نیب جس فرد کا نام ای سی ایل میں ڈالنا چاہتا ہے وہ ملک کی نامور شخصیت ہیں۔

بعد ازاں عدالت نے نیب کی اپیل کو خارج کردیا۔

خیال رہے کہ قومی احتساب بیورو نے لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل دائر کی تھی۔

یاد رہے کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف اس وقت منی لانڈرنگ کیس میں جوڈیشل ریمانڈ پر کوٹ لکھپت جیل میں موجود ہیں۔

گزشتہ دنوں ان کے خلاف منی لانڈرنگ کیس کی سماعت کے دوران احتساب عدالت نے نیب کی جانب سے شہباز شریف کے جسمانی ریمانڈ میں توسیع کی استدعا کو مسترد کردیا تھا۔

خیال رہے کہ 29 ستمبر کو قومی احتساب بیورو نے آمدن سے زائد اثاثہ جات اور منی لانڈرنگ کیس میں سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی ضمانت کی درخواست مسترد ہونے پر انہیں لاہور ہائیکورٹ کے احاطے سے گرفتار کیا تھا۔

منی لانڈرنگ ریفرنس

خیال رہے کہ 17 اگست کو نیب نے احتساب عدالت میں شہباز شریف، ان کی اہلیہ، دو بیٹوں، بیٹیوں اور دیگر افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کا 8 ارب روپے کا ریفرنس دائر کیا تھا۔

اس ریفرنس میں مجموعی طور پر 20 لوگوں کو نامزد کیا گیا جس میں 4 منظوری دینے والے یاسر مشتاق، محمد مشتاق، شاہد رفیق اور احمد محمود بھی شامل ہیں۔

تاہم مرکزی ملزمان میں شہباز شریف کی اہلیہ نصرت، ان کے بیٹے حمزہ شہباز (پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر)، سلمان شہباز (مفرور) اور ان کی بیٹیاں رابعہ عمران اور جویریہ علی ہیں۔

ریفرنس میں بنیادی طور پر شہباز شریف پر الزام عائد کیا گیا کہ وہ اپنے خاندان کے اراکین اور بے نامی دار کے نام پر رکھے ہوئے اثاثوں سے فائدہ اٹھا رہے ہیں جن کے پاس اس طرح کے اثاثوں کے حصول کے لیے کوئی وسائل نہیں تھے۔

اس میں کہا گیا کہ شہباز خاندان کے کنبے کے افراد اور بے نامی داروں کو اربوں کی جعلی غیر ملکی ترسیلات ان کے ذاتی بینک کھاتوں میں ملی ہیں، ان ترسیلات زر کے علاوہ بیورو نے کہا کہ اربوں روپے غیر ملکی تنخواہ کے آرڈر کے ذریعے لوٹائے گئے جو حمزہ اور سلیمان کے ذاتی بینک کھاتوں میں جمع تھے۔

ریفرنس میں مزید کہا گیا کہ شہباز شریف کا کنبہ اثاثوں کے حصول کے لیے استعمال ہونے والے فنڈز کے ذرائع کا جواز پیش کرنے میں ناکام رہا۔

اس میں کہا گیا کہ ملزمان نے بدعنوانی اور کرپٹ سرگرمیوں کے جرائم کا ارتکاب کیا جیسا کہ قومی احتساب آرڈیننس 1999 کی دفعات اور منی لانڈرنگ ایکٹ 2010 میں درج کیا گیا تھا اور عدالت سے درخواست کی گئی کہ انہیں قانون کے تحت سزا دے۔

ملک دشمن عناصر پاکستان کے حالات خراب کرنا چاہتے ہیں،شیخ رشید

(ویب ڈیسک)وفاقی وزیر شیخ رشیداحمد نے پشاور مدرسے میں دہشت گردی کی کارروائی کی بھر پور مذمت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ  ملک دشمن عناصر پاکستان کے حالات خراب کرنا چاہتے ہیں، ملک میں بدامنی پھیلانا چاہتے ہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ قوم نے پہلے بھی ملکر ملک دشمنوں کو شکست دی ہے، اب بھی دہشت گردی کا مقابلہ کریں گے، بزدلانہ کاروائی کی جس قدر مذمت کے جائے کم ہے، معصوم بچوں کو نشانہ بنایا گیا۔

واضح رہے کہ پشاور کے علاقے دیر کالونی زرگر آباد میں مدرسے سے ملحقہ مسجد میں دھماکے میں 7 افراد شہید اور 72 زخمی ہوگئے۔

زخمیوں کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے تاہم زخمیوں میں سے متعدد کی حالت تشویشناک ہے۔

ذرائع کے مطابق ہسپتالوں میں ایمرجنسی ڈکلیئر اور ڈاکٹروں کی چھٹیاں بھی منسوخ کر دی گئی ہیں۔

کشمیریوں کو حقِ خود ارادیت ملنے تک جدو جہد کرتا رہوں گا، عمران خان

(ویب ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے بھارتی جبر اور مظالم کا سامنا کرنے والے کشمیریوں کے لیے اپنے عزم کو دہرایا ہے کہ جب تک انہیں اقوامِ متحدہ کی قرادادوں کے مطابق حق خود ارادیت نہیں مل جاتا وہ کشمیریوں کے لیے جدو جہد کرتے رہیں گے۔

کشمیر پر بھارتی قبضے کے 73 سال مکمل ہونے پر آج 27 اکتوبر کو یوم سیاہ کے موقع پر اپنے خصوصی ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ آج سے 73 سال قبل 27 اکتوبر کو بھارت نے کشمیر پر قبضہ کیا اور کشمیریوں سے اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق خود ارادیت لے لیا۔

یاد رہے کہ 27 اکتوبر 1947 کو بھارت نے برصغیر کی تقسیم سے متعلق منصوبے اور کشمیریوں کی خواہش کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں اپنی فوجیں اتار کر جابرانہ قبضہ کیا تھا۔

5 اگست 2019 کو کشمیر میں ظلم کی نئی داستان کا آٖغاز ہوا اور بھارت نے 9 لاکھ فوج سے 80 لاکھ کشمیریوں کا فوجی محاصرہ کردیا، ان کے تھوڑے بہت حقوق بھی غضب کرلیے گئے، سیاسی قیادت قید کردی گئی، کئی ہزار نوجوانوں کو پکڑ کر بھارت کی دیگر جیلوں میں ڈال دیا گیا اور کشمیریوں کو ایک قسم کی کھلی جیل میں محصور کردیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ یہ کشمیریوں کے لیے بدقسمت وقت ہے کہ وہ نہ بھارت کے شہری ہیں اور نہ ہی انہیں اقوامِ متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کی جانب سے دیا گیا حقِ خود ارادایت استعمال کرنے دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ میں یقین دلاتا ہوں کہ جب تک کشمیریوں کو حق خود ارادیت نہیں ملے گا، میں ان کے لیے جدو جہد کرتا رہوں گا، اس کے لیے عالمی سطح اور ملکی سطح پر آواز اٹھاتا رہوں گا، سربراہان مملکت، عالمی میڈیا سے بات کر کے یاد دلاؤں کہ کشمیری عوام کے اوپر کس قدر ظلم ہورہا ہے۔

ان کا مزید کہا کہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی واضح ہے، وہاں اجتماعی قبریں دریافت ہورہی ہیں، ماورائے عدالت قتل اور میڈیا کا منہ بند کیا جارہا ہے لیکن جس طرح پاکستان میں بھارت کی جانب سے ریاستی دہشت گردی کی جارہی ہے اسے بھی دنیا کے سامنے رکھا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ میں آج بھی بھارت کو کہتا ہوں کہ پاکستان امن چاہتا ہے، مجھے اقتدار ملا تو میں نے ایک ہی بات کہی کہ آپ ہماری جانب ایک قدم بڑھائیں ہم 2 قدم آپ کی طرف بڑھائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ آج بھی میں یہ سمجھتا ہوں کہ برصغیر کے عوام کے لیے سب سے اہم چیز امن ہے جس سے خوشحالی آتی ہے۔

وزیراعظم نے دہرایا کہ ہم (بات چیت کے لیے) تیار ہیں لیکن اس کے لیے آپ کو کشمیر کا فوجی محاصرہ ختم کرنا پڑے گا اور اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے تحت حق خود ارادیت دینا ہوگا تا کہ وہ خود اپنے مست

قبل کا فیصلہ خود کرسکیں۔

15مارچ کو اسلام فوبیہ کیخلاف عالمی دن منایا جائے ورنہ دنیا کا امن تباہ ہو جائے گا:شاہ محمود قریشی

پاکستان او ائی سی کے اجلاس میں قرار داد پیش کرنے کا ارادہ رکھتاہے اور وہ ہی قرار داد جنرل اسمبلی میں پیش کی جائے گی۔
اپوزیشن دشمن کے بیانیے کو ہوا دے رہی ہے۔کسی اپوزیشن لیڈر نے آزاد بلوچستان کے مطالبے کی مذمت نہیں کی۔لاہور(ویب ڈیسک)چینل ۵ کے تجزیوں اور تبصروں پر مشتمل پروگرام”ضیاءشاہد کے ساتھ”میں گفتگو کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ اسلام مخالف مہم پر اجتماعی فیصلے کا وقت آگیا، فرانس کے سفیر کو آج دفتر خارجہ میں طلب کیا گیا ہے جہاں ان سے اسلام مخالف مہم پر احتجاج کیا جائے گا۔  وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مہذب ملکوں کو مسلمانوں کے جذبات کا احترام کرنا چاہیے، پاکستان کے عوام اورحکومت کے جذبات فرانسیسی سفیرکے سامنے رکھے جائیں گے۔

شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ ہولوکاسٹ کیخلاف مہم پر معاشروں نے پابندی لگائی، وقت آگیا ہے کہ اب اس معاملے پر بھی اجتماعی فیصلہ ہونا چاہیے، نائیجر میں او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس میں قرارداد پیش کروں گا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ قرارداد کا مقصد مسلم امہ کو یکجا کرنا اور احساس دلانا ہے اس معاملے پر خاموش نہیں رہ سکتے، قرارداد کا مقصد ایسی اشاعت پر قانونی طور پر پابندیاں لگوانا ہے اور اسلاموفوبیا کے خلاف تمام دنیا کے مذاہب اور لوگ یکجا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ کچھ عرصہ پہلے چارلی ہیبڈو نے گستاخانہ خاکوں کے پروگرام کی کوشش کی،ان کے مجوزہ پروگرام پر میں نے مذمتی بیان جاری کیا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ اسلاموفوبیا بڑھتاہوا ٹرینڈ ہے جس کی نشاندہی وزیراعظم عمران خان نے کی،انہوں نے اپنی یو این تقریر میں کہا تھا کہ رجحان پر قابو نہ پایا تو معاملات بگڑیں گے۔

کے اسلام فوبیہ کے خیلاف ہمارا موقف واضح ہے۔

بھارتی قبضے کیخلاف دنیا بھر میں کشمیری آج یوم سیاہ منائیں گے

(ویب ڈیسک)پاکستان اور لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف کشمیر کے عوام آج وادی پر بھارتی فورسز کے قبضے کے خلاف یوم سیاہ منا رہے ہیں۔

یاد رہے کہ 27 اکتوبر 1947 کو بھارت نے برصغیر کی تقسیم سے متعلق منصوبے اور کشمیریوں کی خواہش کی خلاف ورزی کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیر میں اپنی فوجیں اتار کر جابرانہ قبضہ کیا تھا۔

ڈان اخبار کی رپورٹ کے مطابق اس موقع پر وزیراعظم پاکستان نے عالمی برادری پر اس بات کو یقینی بنانے کے لیے زور دیا ہے کہ بھارت کو مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق پرامن طریقے سے حل کرنے پر مجبور کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں: ’پاکستان کشمیریوں کی حمایت جاری رکھے گا‘ صدرِ مملکت، وزیراعظم کا یومِ سیاہ پر پیغام

یوم سیاہ کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں وزیراعظم نے کشمیر کے عوام کے لیے پاکستان کی غیر متزلزل حمایت کو دوہرایا۔

انہوں نے کہا کہ عالمی برادری نے کشمیری عوام کی حق خودارادیت کے حصول کی جائزجدو جہد کے لیے ان کا جذبہ اورحوصلہ پست کرنے کے لیے بھارت کی ریاستی دہشتگردی، بے گناہ کشمیری عوام کے ماورائے عدالت قتل، اظہار رائے پر بے مثال پابندیاں، جعلی مقابلے، محاصرہ اور سرچ آپریشنز، دوران حراست تشدد و ہلاکتیں، جبری گمشدگیاں، پیلٹ گنز کے استعمال، کشمیری عوام کو اجتماعی سزا دینے کے لیے ان کے گھروں کو تباہ و نذر آتش کرنا اور کشمیریوں کو محکوم رکھنے کے دیگر حربوں کے استعمال کا مشاہدہ کیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ 5 اگست 2019 کو مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی یکطرفہ کاروائیوں، فوجی محاصروں اور مواصلاتی روابط کی بندش کے ساتھ وادی میں کے آبادیاتی تناسب کو تبدیل کرنے کے غیر قانونی اقدامات نے مودی حکومت کے آر ایس ایس متاثرہ ہندوتوا نظریہ کو مزید بے نقاب کر دیا ہے۔

مزید پڑھیں: کشمیر پر بھارتی قبضے کے 72 برس مکمل، دنیا بھر میں یوم سیاہ

انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کی بین الاقوامی حیثیت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں میں تسلیم شدہ ہے۔

وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ یہ تمام رکن ممالک کی اجتماعی ذمہ داری ہے کہ وہ بھارت کو اپنی بین الاقوامی زمہ داریاں پوری کرنے کا پابند بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان عالمی برادری پر زور دیتا ہے کہ بھارت کو خطے میں عدم استحکام کے لیے ریاستی دہشت گردی کے استعمال سے روکنے کے لیے عملی اقدامات اٹھائیں اور مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق پرامن طریقے سے حل کرنے پر مجبور کیا جائے۔
صدر پاکستان کا خصوصی پیغام، صدر مملکت

یوم سیاہ کے موقع پر اپنے خصوصی پیغام میں صدر مملکت عارف علوی نے کشمیری عوام کی حق پرست جدوجہد میں ان کی غیر متزلزل حمایت کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے غیر انسانی اقدامات، وحشیانہ جبر نے ہندوتوا نظریے کی پیروکار آر ایس ایس بی جے پی حکومت کا انتہا پسندانہ چہرہ بے نقاب کر دیا ہے۔

سرکاری خبررساں ادارے اے پی پی کی رپورٹ کے مطابق صدر مملکت نے کہا کہ 73سال قبل آج کے دن بھارتی فوج بین الاقوامی قوانین اور انسانی اصولوں کی خلاف ورزی کرتے ہوئے سرینگر میں اتری اور گزشتہ برس 5 اگست کو بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی متنازعہ حیثیت اور اس کے آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنے کے لیے قدم اٹھایا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت کے اقدامات بین الاقوامی قوانین، اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں اور کشمیریوں سے بھارتی وعدوں کی خلاف ورزی ہیں جنہیں کشمیری عوام، پاکستان اور عالمی برادری نے مسترد کردیا ہے۔

صدر مملکت کا کہنا تھا کہ کشمیری عوام ایک سال سے زائد عرصے سے اپنے گھروں میں قید ہیں، وہ اپنی ہی زمین میں غیر ملکی اور اپنی سڑکوں پر آزادانہ طور پر چلنے کے قابل نہیں، 80 لاکھ کشمیریوں پر 9 لاکھ سے زائد قابض فوج نے مقبوضہ علاقے کو دنیا کی سب سے بڑی جیل بنا دیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کے غیر انسانی اقدامات، وحشیانہ جبر نے ہندوتوا نظریے کی پیروکار آر ایس ایس بی جے پی حکومت کا انتہا پسندانہ چہرہ بے نقاب کر دیا ہے، بھارتی مظالم کی ہولناکی اور ریاستی دہشت گردی کے باوجود کشمیری عوام پرعزم ہیں، کشمیری عوام نے ثابت کیا کہ بھارت طاقت سے کشمیریوں کے عزم کو دبا نہیں سکتا۔

صدر مملکت نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کے حقِ خودارادیت کے حصول ت
ک ان کی حمایت جاری رکھیں گے۔

پشاور کے مدرسے میں دھماکا، 7 افراد شہید، 70 زخمی

(ویب ڈیسک)پشاور کے علاقے دیر کالونی میں کوہاٹ روڈ پر واقع مدرسے میں دھماکے کے نتیجے میں کم از کم7 افراد شہید جب کہ 70 سے زائد زخمی ہو گئے۔

دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس، سیکیورٹی فورسز اور ریسکیو ٹیمیں دھماکے جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں جہاں امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال (ایل آر ایچ) کے مطابق دیر کالونی مدرسے میں ہونے والے دھماکے کے نتیجے میں 7 افراد شہید جب کہ زخمیوں کی تعداد 70 سے زائد ہے۔ترجمان ایل آر ایچ کا کہنا ہے کہ زخمیوں میں زیادہ تر جھلسے ہوئے ہیں جس میں سے متعدد کی حالت تشویشناک ہے۔

ریسکیو ذرائع کا کہنا ہے کہ دھماکے کے نتیجے میں مدرسے میں پڑھنے والے 19 بچے زخمی ہوئے۔

دھماکا ٹائم بم کے ذریعے کیا گیا: پشاور  پولیس

ایس ایس پی آپریشنز کے مطابق دھماکا ٹائم بم کے ذریعے کیا گیا جب کہ دھماکا خیز مواد بیگ میں رکھ کر مدرسے لایا گیا تھا، واقعے کی مزید تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ دھماکے میں 4 سے 5 کلو گرام دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا، سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

 دہشت گردی سے متعلق عمومی تھریٹ تھا: آئی جی خیبرپختونخوا

انسپکٹر جنرل (آئی جی) خیبرپختونخوا پولیس ثناء اللّٰہ عباسی نے دھماکے میں متعدد افراد کی شہادت کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ دہشت گردی سے متعلق عمومی تھریٹ موجود تھا۔

دہشتگردوں کا مذہب سے کوئی تعلق نہیں: شوکت یوسفزئی

خیبر پختونخوا کے وزیر برائے کلچر شوکت یوسفزئی نے مدرسے میں ہونے والے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کو مذہب سے تعلق نہیں ہے۔

شوکت یوسفزئی کا کہنا تھا کہ علاقے میں کافی عرصے سے امن تھا اور سیکورٹی بھی بہتر تھی، کوئٹہ اور پشاور میں دہشت گردی تھریٹ الرٹ تھا، تھریٹ الرٹ کے بعد سیکورٹی مزید سخت کر دی گئی تھی۔

 صوبائی وزیر کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں نے بزدلانہ کارروائی کی ہے، دہشت گرد اپنے مقاصد کے لیے سافٹ ٹارگٹ دیکھتے ہیں اور بچے اور مدرسے سافٹ ٹارگٹ تھے۔

وزیر اعلیٰ نے سیکیورٹی صورتحال پر اجلاس طلب کر لیا

صوبائی وزیر برائے کلچر نے بتایا کہ وزیراعلیٰ کے پی  محمود خان نے دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے سیکیورٹی صورتحال پر اعلی سطح کا اجلاس طلب کر لیا ہے۔

نواز شریف کے بیٹے حسن نواز کو دھمکی آمیز پیغام، پولیس تحقیقات شروع

سابق وزیراعظم نواز شریف کے بیٹے حسن نواز کو دھمکی آمیز پیغام موصول ہوا ہے۔

دھمکی آمیز پیغام برطانیہ کے نمبر سے حسن نواز کو واٹس ایپ پر بھیجا گیا جس پر شریف فیملی نے لندن پولیس کو رپورٹ کی تاہم یہ بات سامنے نہیں آسکی کہ انہیں کیا دھمکی دی گئی ہے۔

پولیس نے حسن نواز سے ملاقات کرکے تفصیلات معلوم کرکےتحقیقات شروع کردی ہیں۔

خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نواز زشریف ان دنوں لندن میں موجود ہیں جہاں ان کا علاج جاری ہے۔

اس کے علاوہ سابق وزیراعظم نے سیاسی سرگرمیاں بھی شروع کردی ہیں جس کے باعث حسن نواز کے دفتر کے سامنے احتجاج بھی کیا گیا تھا۔

چینیوٹ میں طالبہ کا گینگ ریپ، کلاس فیلو گرفتار

چینیوٹ میں کلاس فیلو نے اپنے تین دوستوں کے ساتھ مل کر طالبہ کا گینگ ریپ کردیا۔ میڈیکل رپورٹ میں تصدیق کے بعد پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے مرکزی ملزم کو گرفتار کرلیا۔

ایف آئی آر کے مطابق ضلع ننکانہ کی رہائشی طالبہ کوٹیوشن فیلو شاہد علی 23 اکتوبر کی شام بہانے سے چنیوٹ لے گیا اور وہاں اپنے ساتھیوں کے ہمراہ اس کا گینگ ریپ کیا۔

ڈی پی او فیصل آباد کا کہنا ہے کہ میڈیکل رپورٹ میں ریپ کی تصدیق کے بعد 4 ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔ ان میں سے مرکزی ملزم کو پولیس نے گرفتار کرلیا جبکہ دیگر تین کو تلاش کیا جارہا ہے۔

امریکی ثالثی میں جنگ بندی کے باوجود نیگورونو-کاراباخ میں لڑائی جاری

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند مہینوں کی مہمان ہے۔

تفصیلات کے مطابق گلگت بلتستان میں انتخابی جلسے سے خطاب میں چیئرمین پی پی پی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی جھوٹی جماعت ہے، ان کی ہر بات دھوکہ اور یو ٹرن ہے لیکن پیپلزپارٹی واحد جماعت ہے عوام کو مسائل سے نکال سکتی ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ چاروں صوبوں کو اٹھارویں ترمیم سے حقوق دئے تو گلگت بلتستان کو بھی دلا سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ جدوجہد صرف انتخابات کے کے لیے نہیں گلگت بلتستان کے عوام کے مستقبل کے لیے ہیے کیونکہ میں یہ نہیں چاہتا کہ گلگت بلتستان کے عوام کا مستقبل تباہ ہو۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ مہنگائی کا مقابلہ کرنے کے لیے بی آئی ایس پی جیسا انقلابی پروگرام شروع کیا، سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 100 فیصد، پنشنزمیں 150 فیصد اضافہ کیا، پی ٹی آئی کی ہر بات دھوکا اوریوٹرن نکلی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت کراچی میں اسٹیل مل بند کرنا چاہتی ہے، یہ اقتدار، حکومت بنانے کی لڑائی نہیں آپ کے مستقبل کا سوال ہے۔

بالی ووڈ منشیات کیس میں ایک اور بھارتی اداکارہ گرفتار

ممبئی: بھارت میں نیشنل نارکوٹکس بیورو نے معروف ادکارہ پریتیکا چوہان کو دیگر 5 افراد کے ہمراہ گرفتار کرکے منشیات برآمد کرلی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ممبئی میں نیشنل نارکوٹکس بیورو نے چھاپہ مار کارروائی میں 30 سالہ اداکارہ پریتیکا چوہان کو حراست میں لے کر 90 گرام گانجا برآمد کرلی جب کہ اداکارہ کی نشاندہی پر منشیات فراہم کرنے والے 20 سالہ نوجوان کو بھی گرفتار کر لیا گیا۔

دوران تفتیش انکشاف ہوا کہ ادکارہ کو منشیات فراہم کرنے والوں میں ایک اور شخص بھی ملوث ہے جو کہ مرکزی ملزم بھی ہے جس پر نیشنل نارکوٹکس نے مذکورہ ملزم کو گرفتار کرلیا جب کہ ایک اور کارروائی میں مزید 3 افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ ابھرتے ہوئے اداکار سشانت سنگھ کی خودکشی کی تفتیش کے دوران بالی ووڈ میں منشیات کے استعمال کا انکشاف ہوا جس پر شروع ہونے والی تحقیقات میں ریا چکروتی کو گرفتار اور دیگر ہیروئنز سے پوچھ گچھ کی گئی ہے۔