تازہ تر ین

متحدہ عرب امارات: یہودیوں کیلئے کوشر ریستوران کھولنے کی تیاریاں

دبئی میں دنیا کی بلند ترین عمارت برج الخلیفہ کے تحت چلنے والے ارمانی ہوٹل میں یہودیوں کیلئے پہلا کوشر ریستوران کھولنے کی تیاریاں جاری ہیں۔

متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کے درمیان تعلقات کو معمول پر لانے کے معاہدے کے بعد ریستورانوں اور کیٹررز کی جانب سے یہودی صارفین کیلئے کوشر ریستوران کھولنے کی تیاریوں میں تیزی آگئی ہے۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق دبئی میں قائم ریستورانوں کے مالکان کو امید ہے کہ اسرائیل سے براہِ راست پروازوں کے ذریعے بڑی تعداد میں یہودی متحدہ عرب امارات آئیں گے، کوشر ریستوان میں یہودی عقائد کے مطابق ذبح کیے گئے جانوروں کا گوشت استعمال کیا جاتا ہے۔

امارات کے متعدد قوانین کوشر پکوانوں کی تیاری کیلئے ساز گار نہیں، جس کے سبب کوشر پکوانوں کی تیاری کیلئے اجزاء کا حصول کسی چیلنج سے کم نہیں ہوگا، کیوں کہ یہ اجزا مقامی مارکیٹ میں دستیاب نہیں ہیں۔

تعلقات کو معمول پر لانے سے متعلق طے پانے والے معاہدے کے تحت امارات اور اسرائیل فضائی رابطے قائم کریں گے، ان رابطوں کا آغاز دو ماہ بعد جنوری 2021ء میں ہوگا۔

دونوں ممالک ایک دوسرے کے شہریوں کی آمد و رفت کیلئے ویزا کا طریقۂ کار بھی طے کریں گے۔ ارمانی، لگژری ہوٹلز کے جھرمٹ کے درمیان واقع ریستورانوں میں سے ایک ہے، چالیس نشستوں تک کی گنجائش والے ارمانی ریستوران کے شیف فیبین فائیولے کا کہنا ہے کہ ہم مہینوں سے اپنے عملے کو کوشر ڈشز تیار کرنے اور دوسرے کاموں کی تربیت دے رہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ریستوران کے کچن میں ہم انہیں تعلیم دیتے ہیں کہ وہ کیا استعمال کرسکتے ہیں اور کیا نہیں۔

فیبین نے ‘اے ایف پی’ کو بتایا کہ کوشر ریستوران کھولنے کا مقصد یہودیوں یا کوشر فوڈ کھانے کا تجربہ کرنے کے خواہشمند کسی بھی فرد کو فائیو اسٹار ہوٹل جیسی سہولتیں فراہم کرنا ہے۔


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved