تازہ تر ین

سینیٹ انتخابات میں تحریک انصاف کی پنجاب سے ایک سیٹ بڑھے گی، وزیر داخلہ

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا کہ سینیٹ انتخابات میں کوئی عمران خان سے پیچھے نہیں ہٹ رہا اور پنجاب میں سیٹ کم ہونے کے بجائے ایک سیٹ بڑھے گی۔

لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ عمران خان سے کوئی پیچھے نہیں ہٹ رہا، سینیٹ کے الیکشن میں تحریک انصاف کی ایک آدھی سیٹ بڑھے گی، یہ تو عمران خان کا بڑا پن ہے کہ وہ کہتا ہے کہ خفیہ ووٹ ہو جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ میری بات ریکارڈ کر لیں کہ جو لوگ یہ سوچے بیٹھے ہیں کہ عمران خان اس لیے جا رہا ہے سپریم کورٹ میں تاکہ ووٹ نہ کم ہوں تو پنجاب میں سیٹ کم ہونے کے بجائے ایک سیٹ بڑھے گی۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے قوام متحدہ سمیت ہر عالمی فورم پر کشمیر کا مسئلہ اٹھایا ہے اور مودی کو ہٹلر اور مسولینی کے مترادف قرار دیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ براڈ شیٹ پر جسٹس عظمت ان کو قبول نہیں ہے تو بتائیں کون قبول ہے، جسٹس افتکار قبول ہے، جسٹس قیوم قبول ہے، جسٹس عظمت سعید ایک غیرمعمولی جج ہیں جن کا بہترین ریکارڈ ہے۔ شیخ رشید احمد نے کہا کہ اس کیس کا بڑے پیمانے پر فیصلہ ہونا ہے، ابھی اس کیس میں سے چیزیں نکلنی ہیں، 45 دن سے تین مہینے میں اس کے حقائق سامنے آئیں گے، آخر میں فیصلہ ہوگا کہ اس کیس نے کیا رخ اختیار کرنا ہے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ مسلم لیگ(ن) کی 85 سے 100 ملین ڈالر کی نئی جائیدادیں سامنے آنے والی ہیں اور اگر کسی نے جرم کیا ہے تو اس کا تعلق چاہے کسی بھی طرف سے کیوں نہ ہو، اس کو پھکی ملنی چاہیے۔

انہوں نے مزید کہا کہ فضل الرحمٰن ویسے ہی ان کے پیچھے لگے ہوئے ہیں، وہ خراب ہوں گے، میں سمجھتا ہوں کہ فضل الرحمٰن نے اسرائیل، کشمیر، ختم نبوت کے نام پر اس قوم کا بڑا وقت ضائع کیا ہے، اس ملک میں کسی کی جرات ہے کہ وہ ان چیزوں کے خلاف ہو سکے۔

ایک سوال کے جواب میں وزیر داخلہ نے کہا کہ جب دینی طاقتوں نے رائفل اٹھائی ہوئی تھی تو مولان فضل الرحمٰن پرویز مشرف سے ملا کرتے تھے اور ان کے ساتھ تھے، میں ان اجلاسوں میں موجود ہوتا تھا۔

انہوں نے کہا کہ لانگ مارچ آئین اور قانون کے دائرے میں ہوا تو ہم بھی ان کے لیے کوئی مسئلہ پیدا نہیں کریں گے، جس طرح سے وہ الیکشن کمیشن پر آئے ہیں اگر اس طرح آئیں گے تو کوئی مسئلہ نہیں ہے۔

ایک اور سوال کے جواب میں شیخ رشید احمد نے بلاول بھٹو بالغ ہو گئے ہیں، انہوں نے ٹھیک کہا ہے کہ ان جلسوں سے کوئی نتیجہ نہیں نکلا ہے اور جب آدمی سچ بولنے لگتا ہے تو لاہور کا میڈیا کے اس راستے میں رکاوٹیں کھڑے کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کا کیس سنجیدہ نوعیت کا ہے اور اس میں شہادتوں پر منحصر ہے کہ کیس کا کیا نتیجہ نکلے گا۔


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved