تازہ تر ین

ریلوے سگنل کرپشن کیس میں ملوث پاکستان ریلوے کے سینئر افسران کیخلاف نیب لاہور سرگرم۔۔۔

لاہور(ویب ڈیسک) 55 کروڑ مالیت کے سگنل سسٹم کے منصوبہ میں مالی بدعنوانی کے الزام میں 4 ریلوے افسران اور پرائیویٹ کنٹریکٹر گرفتار۔ گرفتار ملزمان میں پراجیکٹ ڈائریکٹر فہیم انور شاہ (بی ایس 20)، سابق چیف سگنل انجینئر ملزم عطاءاللہ( بی ایس 20)، سابق چیف فائنینشل آفیسر ڈاکٹر محمد سعید (بی ایس 20) شامل ڈپٹی پراجیکٹ ڈائریکٹر محمد احمد(بی ایس 18) اور پرائیویٹ فرم کے مالک (کنٹریکٹر) ڈاکٹر معاز محی الدین بھی گرفتار ملزمان کی فہرست میں شامل دوران تحقیقات ملزمان کی الیکٹرک سگنل پراجیکٹ میں آپس کی ملی بھگت سے کروڑوں روپے کی کرپشن منظر عام پر آنے کیصورت میں گرفتاریاں ہوئیںپاک ریلوے کیجانب سے 2016 میں بن قاسم یارڈ پر سگنل سسٹم کی تعیناتی کیلئے میسرز اکیوی ناکس نامی کمپنی کو ٹھیکہ جاری کیا گیا 550 ملین مالیت کاٹھیکہ مبینہ طور پر قواعد و ضوابط کیخلاف میسرز اکیوی ناکس کو فراہم کیا گیا میسرز اکیوی ناکس کیٹگری-5 کی ایک کمپنی تھی جبکہ کیٹگری-3 کی کو ئی بھی فرم یہ ٹھیکہ حاصل کرنے کی اہل تھی ریلوے افسران کیجانب سے میسرز اکیوی ناکس کو ٹھیکہ فراہمی کیلئے بوگس دستاویزات تیار کی گئیںتحقیقات کیمطابق ملزمان نے آپس کی ملی بھگت سے کمپنی کو مطلوبہ تجربہ میں بھی رعائیت فراہم کی میسرز ایکوی ناکس کیجانب سےفراہم کئے گئے آلات کی مالیت 38 کروڑ روپے ظاہر کی گئی جبکہ ان آلات کی اصل قیمت 9 کروڑ 70 لاکھ تھی ملزمان کا یہ اقدام حکومتی خزانے کو مبینہ طور 28 کروڑ روپے کے نقصان کا موجب بنانیب تفتیش میں منصوبہ سے متعلق سنسنی خیز انکشافات کی توقع ہے نیب لاہور حکام تمام ملزمان کو جسمانی ریمانڈ کے حصول کیلئے کل احتساب عدالت کے روبرو پیش کرینگے دوران ریمانڈ ملزمان سے پراجیکٹ میں مبینہ دھاندلی اور دیگر ملزمان کی گرفتاری سے متعلق اہم معلومات متوقع ہیں۔


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved