تازہ تر ین

کر و نا مر یضو ں کا علاج کر نیو ا لے ڈا کٹر وں عملہ کو سپیشل رسک ا لاﺅنس دیا جا ئیگا عثما ن بز دار

لاہور(خصوصی رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کیلئے کام کرنے والے ڈاکٹروں، نرسز، طبی عملے اور دیگر کو ایک تنخواہ کے برابر سپیشل رسک الاﺅنس دیا جائے گا۔ ڈیرہ غازی خان قرنطینہ میں 14 روز گزار کر کلیئر قرار دیئے جانے والے 600 افراد کو ان کے گھروں میں بھجوایا جا رہا ہے۔ حکومت پنجاب متعلقہ اضلاع میں ان کی فالو اپ سکریننگ کا بھی اہتمام کر رہی ہے۔ ان کے کورونا ٹیسٹ بھی نیگٹو آچکے ہیں۔ جیلوں میں بھی قیدیوں کی سکریننگ کا آغاز کیا جا چکا ہے۔ معمولی جرائم میں ملوث 3500 قیدیوں کی رہائی کیلئے سمری بھجوائی جا رہی ہے۔ لاہور کیمپ جیل میں قیدیوںکیلئے 100 بیڈز کا خصوصی ہسپتال بھی قائم کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے انسداد کورونا اقدامات کیلئے قائم کابینہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ صوبہ بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی کل تعداد 312 ہے۔ڈیرہ غازی خان میں 176، لاہور 77، ملتان3، جہلم 19، راولپنڈی 2، فیصل آباد2 ، گجرات21، گوجرانوالہ8، منڈی بہاﺅالدین، رحیم یار خان، سرگودھا اور نارووال میں ایک ایک مریض ہے۔ انہوں نے بتایا کہ صوبہ بھر میں قرنطینہ سینٹرز کی مجموعی تعداد 163 ہے جہاں مریضو ںکی مجموعی گنجائش 20 ہزار ہے اور مزید قرنطینہ سینٹر بنانے اور طبی سہولتوں کو بڑھانے کا کام تیزی سے جاری ہے۔ صوبہ کے ہر ڈویژن میں بی ایس ایل لیول تھری لیبارٹری قائم کی جائے گی۔ پانچ ڈویژن کیلئے 62 کروڑ روپے جاری کئے جا چکے ہیں اور اس پراجیکٹ کو جلد از جلد پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔ وزیراعلیٰ نے بتایا کہ حکومت پنجاب سول ایوی ایشن اتھارٹی کو خط لکھ رہی ہے کہ پنجاب میں بیرون ملک سفر کرکے آنے والے سول ایوی ایشن سے وابستہ فضائی عملے اور دیگر سٹاف کے فوری چیک اپ کا فوری بندوبست کیا جائے یا حکومت پنجاب کو ان کی سکریننگ کیلئے فہرست فراہم کی جائے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ لاہور سمیت صوبہ کے دیگر شہروں میں صفائی اور دیگر ضروری امور کو متاثر نہیں ہونے دیا جائے گا۔ انتظامیہ شہروں کی صفائی ستھرائی کا اہتمام کرے۔ انہوں نے کہا کہ شہروں میں فوڈ چین سپلائی کسی صورت متاثر نہیں ہونی چاہیئے۔ ہمارے پاس اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے کسی قسم کی قلت نہیں تاہم عوام بھی غیر ضروری طور پر اشیاءکا سٹاک کرنے سے گریز کریں۔ انتظامیہ ذخیرہ اندوزی کرنے والوں کے خلاف سرگرم عمل ہے۔ کورونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے پی پی ای یعنی حفاظتی لباس وغیرہ کی خریداری اور فراہمی کا عمل جاری ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اپیل کی کہ شہری سماجی فاصلے برقرار رکھیں اور مخیر حضرات نادار لوگوں کی ضروریات کو پورا کرنے کا اہتمام کریں۔ کرفیو نہیں ہے لیکن شہری گھروں میں رہنے کو ترجیح دیں اور تعاون کریں۔ حکومت پنجاب وفاقی حکومت کی طرز پر سوشل پروٹیکشن پیکیج دے گی۔ اجلاس میں چیف سیکرٹری نے بتایا کہ فیصل آباد میں ایران سے آنے والے 150 زائرین کو رکھا گیا ہے۔ فی الحال تفتان کا بارڈر بند ہے اور مزید زائرین کے آنے کی کوئی اطلاع نہیں۔ اجلاس میں صوبائی وزراءڈاکٹر یاسمین راشد، فیاض الحسن چوہان، رکن صوبائی اسمبلی مسرت جمشید چیمہ، چیف سیکرٹری، سیکرٹری اطلاعات، سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ اینڈ میڈیکل ایجوکیشن، سیکرٹری پرائمری و سیکنڈری ہیلتھ کیئر ، ڈی جی پی آر اور دیگر متعلقہ حکام بھی موجود تھے۔وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے آج یونیورسٹی آف انجینئر نگ اینڈ ٹیکنالوجی کالاشاہ کاکو کیمپس کا دورہ کیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کالاشاہ کاکو کیمپس میں کورونا مریضوں کیلئے قائم آئسولیشن/قرنطینہ مراکز کا جائزہ لیا اور قرنطینہ کے انتظامات پراطمینان کا اظہار کیا۔وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے قرنطینہ مراکز کے قریب انسنریٹر لگانے کی ہدایت کی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو کالاشاہ کاکو کیمپس میں کورونا مریضوں کیلئے دستیاب سہولتوں کے بارے میں بریفنگ دی گئی اور بتایا گیا کہ لاہور کے اولڈ ٹرمینل ایئرپورٹ سے مریضوں کو منتقل کرنے کیلئے 15 اے سی بسوں کا اہتمام کیا گیا ہے۔کورونا مریضوں کو ٹرمینل پر رجسٹریشن کے بعد قرنطینہ مرکز میں شفٹ کر دیا جائے گا۔ کالاشاہ کاکو کیمپس میں کنٹرول روم، ایمرجنسی رسپانس سینٹر بھی قائم کیا گیا ہے۔ ہنگامی حالت میں مریضوں کی نقل و حمل کیلئے 4 ایمولینسز بھی سینٹر میں موجود ہوں گی۔ کالاشاہ کاکو کیمپس میں 10 موٹر سائیکل ایمبولینسیں بھی موجود ہوں گی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو بتایا گیا کہ کالاشاہ کاکو قرنطینہ میں 15 ڈاکٹر اور طبی عملے کے 65 ارکان مختلف شفٹوں میں 24 گھنٹے ڈیوٹی دیں گے۔ آئسولیشن/قرنطینہ میں کورونا مریضوں کیلئے ڈسپنسری اور انفیکشن کنٹرول سسٹم بھی قائم کیا گیا ہے۔ آئسولیشن سینٹر کی سیکورٹی کا بھی اہتمام کیا گیا ہے۔مریضوں کیلئے پورٹیبل واش روم اور دیگر سہولتیں بھی مہیا کی گئی ہیں۔کالاشاہ کاکو کیمپس کورونا سینٹر میں 816 مریضوں کو رکھا جا سکے گا۔یو ای ٹی، جی سی یو اور جوڈیشل کمپلیکس میں 1400 کے لگ بھگ مریض رکھے جاسکتے ہیں۔مریضوں کو ان کی طبی صورتحال کے مطابق علیحدہ رکھا جائے گا اور ہر کمرے میں بیڈ، سینٹی ٹائزر، کھانے پینے کی اشیاءاور دیگر ضروری سامان مہیا کیا جائے گا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو یو ای ٹی قرنطینہ میں ییلو روم اور ییلو وین کے بارے میں بھی تفصیلی بریفنگ دی گئی وزیراعلیٰ کو بتایا گیا کہ انسنریٹر میں قرنطینہ میں متعین ڈاکٹروں اور طبی عملے کا لباس تلف کیا جائے گا۔میڈیکل سٹاف کے گاگلز، بوٹ، گلوز، فیس ماسک، کیپ اور حفاظتی لباس ڈیوٹی ختم ہونے کے بعد ییلو روم میں جمع ہوگا۔ییلو روم میں وزن کرکے سیل شدہ حفاظتی کٹ ییلو وین میں پہنچا دی جائے گی۔ییلو وین سے انسنریٹر میں 1200 ڈگری سینٹی گریڈ پر مواد کو تلف کیا جائے گا۔قرنطینہ سے ویسٹ کو تلف کرنے کے عمل کی ڈیجیٹل مانیٹرنگ کی جائے گی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ہدایت کی کہ کورونا مریضوں کا علاج کرنے والے عملے کا استعمال شدہ لباس تلف کرنے کیلئے ایس او پی پر عمل کیا جائے۔لباس اور دیگر مواد کی غیر محتاط نقل و حمل کی کوتاہی ہرگز نہ کی جائے اور انفیکشن کنٹرول پروگرام پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، کمشنر لاہور ڈویژن، ڈپٹی کمشنر لاہور، محکمہ صحت کے حکام بھی موجود تھے۔وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے وزیراعظم عمران خان کی طرف سے کورونا متاثرین کیلئے ایک ہزار ارب روپے سے زائد کے امدادی پیکیج کا خیرمقدم کیا ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ مزدور طبقے کو 3 ہزار روپے ماہانہ ملیں گے۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے لاہور کے علاقے شاہدرہ میں آئل ٹینکر میں آتشزدگی کے واقعہ کے بارے میں کمشنر لاہور ڈویژن اور سی سی پی او لاہور سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزےراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارنے گوجرہ میں نوجوان پر بیہمانہ تشدد کے واقعہ کا سخت نوٹس لیتے ہوئے انسپکٹر جنرل پولیس سے رپورٹ طلب کر لی ہے اور تشدد کرنے والے ملزمان کی جلد گرفتاری کا حکم دیا ہے۔


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved