تازہ تر ین

پارٹی رہنماوں کی فوجی افسران سے ملاقات پرپابندی

ویب ڈیسک : مسلم لیگ ن نے پارٹی رہنماؤں کی مسلح افواج اور ایجنسیوں کے افسران سے بلااجازت ملاقات پر پابندی لگا دی ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال کی جانب سے منگل کو جاری کیے گئے سرکلر میں کہا گیا ہے کہ ‘مجھے پارٹی کے قائد کی جانب سے ہدایت کی گئی ہے کہ آپ کو اس مسلح افواج اور متعلقہ ایجنسیوں کے افسران سے ملاقاتوں کے حوالے سے پارٹی پالیسی کے بارے میں آگاہ کر دوں۔’

مسلم لیگ ن کے جنرل سیکرٹری احسن اقبال کی جانب سے جاری ایک سرکلر کے مطابق فوج یا سکیورٹی ایجنسیوں کے اہلکاروں سے ذاتی یا سرکاری حیثیت میں ملاقات ہو تو اس کے لیے پارٹی کے قائد سے منظوری لی جائے گی۔

سرکلز کے مطابق ملاقاتیں اگر اچھی نیت سے بھی کی جائیں تو بھی اس سے تنازعات جنم لیتے ہیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے مسلم لیگ نواز کی رہنما مریم نواز کی طرف سے مسلم لیگ ن کے کسی نمائندے کی آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی تردید کے بعد پاکستان کی مسلح افواج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے بتایا تھا کہ آرمی چیف سے مسلم لیگ نواز کے نمائندے محمد زبیر نے دو ملاقاتیں کی ہیں۔

فوج کے ترجمان نے کہا تھا کہ ’ایک ملاقات اگست کے آخر میں ہوئی اور دوسری ملاقات سات ستمبر کو ہوئی۔ ان ملاقاتوں میں ڈی جی آئی ایس آئی بھی موجود تھے۔‘


اہم خبریں
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved