تازہ تر ین

ملکی وے کہکشاں کے گلیکٹک پلین کی تازہ ترین تصویر جاری

ورجینیا: (ویب ڈیسک) محققین کی جانب سےملکی وے کہکشاں کے گلیکٹک پلین کے تازہ ترین سروے کے بعد اس کی تفصیلی تصویر جاری کر دی گئی۔ اس تصویر میں 3.32 ارب اجرامِ فلکیات دیکھی جاسکتی ہیں۔
گلیکٹک پلین ایک ایسی فرضی خط ہوتی ہے جو کہکشاں کو دو حصوں میں تقسیم کرتی ہے۔
اپنی نوعیت کے انتہائی بڑے، ممکنہ طور پر سب سے بڑے، خلائی کیٹلاگ کو چلی میں نصب سیرو ٹولولو انٹر-امیریکن آبزرویٹری کے ڈارک انرجی کیمرا سے حاصل کیے گئے ڈیٹا سے ترتیب دیا گیا ہے۔ یہ مشاہدہ گاہ امریکا کی نیشنل سائنس فاؤنڈیشن (این ایس ایف) کے تحت کام کرتی ہے۔
این ایس ایف کی ڈویژن ڈائریکٹر آف آسٹرونومیکل سائنسز ڈیبرا فشر نے ایک بیان میں کہا کہ فرض کریں تین ارب سے زائد افراد کی ایک گروپ فوٹو ہو اور ہر فرد کو واضح دیکھا جاسکتا ہو۔ ماہرینِ فلکیات آنے والی دہائیوں میں تین ارب سے زائد ستاروں پر مشتمل اس پورٹریٹ کا بغور مطالعہ کریں گے۔
ہماری ملکی وے کہکشاں میں کھربوں ستارے، بڑی تعداد میں ستارہ ساز خطے اور گیس اور غبار کے بڑے بڑے بادل موجود ہیں۔ ان اجرامِ فلکیات کی فہرست ترتیب دینا بہت بڑا کام ہے جو ماہرین کی ٹیم نے انجام دیا ہے۔
محققین نے بصری اور نیئر انفرا ریڈ طول امواج پر ملکی وے کی گلیکٹک خط کا مشاہدہ کرنے کے لیے ڈارک انرجی کیمرا کا استعمال کیا اور اس خطے کی ایسی تفصیلات حاصل کیں جس کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی۔
اس کیٹلاگ کو مکمل ہونے میں دو سال کا عرصہ لگا جس کے لیے ڈارک انرجی کیمرا نے 10 ٹیرا بائیٹس سے زیادہ کا ڈیٹا فراہم کیا جس کے لیے جنوبی آسمان کی 21 ہزار 400 انفرادی طور پر عکاسی(ایکسپوژر) کی گئی۔


اہم خبریں





دلچسپ و عجیب
کالم
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2021 All Rights Reserved Dailykhabrain