تازہ تر ین
کالم

کپتان کیلئے مولانا طارق جمیل کی گواہی

ریاض صحافی....تماشا عالم اسلام کے عظیم مبلغ مولانا طارق جمیل نے وزیراعظم عمران خان کےخلاف پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے ”سیاسی افطار ڈنر کے اکٹھ“سے ایک دن قبل ہی ہوا نکال دیدی تھی،.

تبدیلی نہیں تبدیلیاں ہی تبدیلیاں

قسور سعید مرزا /ایک نظر ادھر بھی وزیراعظم عمران خان کی بائیس سالہ جدوجہد تو شاید لوگوں کو اتنی یاد نہ ہو لیکن اسلام آباد کے دھرنے کے بعد سے جو کچھ عمران خان کہتے.

تحریک انصاف بھی تبدیلی نہ لاسکی ؟

نصیر ڈاھا .... گستاخی معاف اسد عمر کو ہٹانے کی ایک بنیادی وجہ یہ سمجھی گئی تھی کہ وہ آئی ایم ایف کے ساتھ معاملات کو یکسو کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکے تھے۔ تاہم انہیں.

ذرا ان کا بھی سوچیں!

محمد عبد الشکور........نقطہ نظر نیو ایئر،محبت کا دن ،بسنت ڈے ان دِنوں میں تو موج میلہ ہوتا ہے۔مزہ آتا ہے،میڈیا کو اشتہار ملتے ہیں۔کاروباری طبقہ کروڑوں روپے کی آﺅٹ ڈور مہم چلاتا ہے۔بی بی سی،سی.

جرمنی اور قانون کی حکمرانی

مرزا روحیل بیگ ....مکتوب جرمن دوسری جنگ عظیم کے بعد جرمنی دو حصوں میں تقسیم ہو چکا تھا۔ مشرقی جرمنی پر روس کا کنٹرول تھا جبکہ مغربی جرمنی امریکا، برطانیہ اور فرانس کے زیر اثر.

پنجاب کی تقسیم لیکن ملتانی فارمولے کے تحت کیوں ؟

خضر کلاسرا....ادھوری ملاقات پاکستان تحریک انصاف کے مرکز ی لیڈر وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے ملتان میں بیٹھ کر پنجاب کی تقسیم کا جو فارمولا دیاہے، اس کو نہ بہاولپورکے عوام اور سیاستدان تسلیم کررہے.

قانون سازی ، ارکان پارلیمنٹ سنجیدگی دکھائیں

وزیر احمد جوگیزئی....احترام جمہوریت قومی اسمبلی میں فاٹا کے الحاق سے متعلق ترمیم کرنے پر تمام ممبران گرامی مبارک باد کے مستحق ہیں اور ان کی لیڈرشپ کو سلام ہے کہ ضرورت پڑنے پر وہ.

لاکھوں رےٹائرڈ ملازمےن کے مسائل

محمد حسین ملک ....رائے عامہ حکومتےں آتی ہےں چلی جاتی ہےں ۔ جب سے پاکستان معرض وجود مےں آےا بہت سی سےاسی پارٹےاں بھی آئےں ۔کچھ موجود ہےں ۔کچھ کا صرف نام موجود ہے ۔.

آزاد کشمیر: شاردا مندر کے مضمرات

افتخار گیلانی........خاص مضمون گذشتہ دنوں خبر آئی کہ ”پاکستانی پنجاب میں گوردوارہ کرتار پور کے درشن کی خاطر، سکھ عقیدت مندوں کے لیے ایک راہداری کی منظوری کے بعد اب پاکستانی حکومت، جموں و کشمیر.

حلقہ ارباب ذوق ،کارل مارکس اور علامہ اقبال

میم سین بٹ....ہائیڈپارک حلقہ ارباب ذوق اور انجمن ترقی پسند مصنفین دونوں قدیمی ادبی تنظیمیں ہیںتاہم ان کے نظریات آغاز میں خاصے مختلف بلکہ متضاد تھے حلقہ ارباب ذوق والے ادب برائے ادب کے قائل.
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved