All posts by Faisal Khan

’حکومت کے دن گنے جاچکے، ہم اسلام آباد سے ویسے ہی نہیں آئے‘، مولانا فضل الرحمن

بنوں(ویب ڈیسک)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم عمران خان کو پیغام دیتے ہوئے کہا کہ آپ کے دن گنے جاچکے کیونکہ ہم اسلام آباد ویسے نہیں گئے اور ویسے نہیں آئے۔بنوں میں دھرنے کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نےکہاکہ پاکستان سے باطل اور نالائق حکومت کا خاتمہ ہوگا، ہم پاکستان کی جمہوریت اور آئین کے تحفظ کے لیے نکلے ہیں۔انہوں نے کہاکہ حکمرانوں کے پاس مخالفین کو گالیاں دینے کے علاوہ کچھ نہیں، ان حکمرانوں کا کوئی نظریہ نہیں، یہ گالم گلوچ اور بازاری زبان کوسیاست سمجھتے ہیں، ہمیں پتا ہے تم بازاری ہو اور یہی زبان تمہارے شیان شان ہے۔
مولانا کا وزیراعظم کو چیلنج
مولانا فضل الرحمان نے وزیراعظم عمران خان کو چیلنج دیتے ہوئے کہاکہ آﺅ میرے اور اپنے کردار کا مقابلہ کرو، اپنے والد میرے والد اور دادا کا مقابلہ کرو۔جے یو آئی (ف) کے سربراہ کا کہنا تھا کہ آپ کے دن گنے جاچکے، ہم اسلام آباد ویسے نہیں گئے اور ویسے نہیں آئے، آپ کی جڑیں کٹ گئیں اور چولیں ہل گئیں، اب دن گنتے جاو¿، ہم اسلام آباد ویسے نہیں گئےا ور ایسے واپس نہیں آئے۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ کہتے تھے موٹروے پاکستان کو تباہ کرے گا، یہ ترقی کا راستہ نہیں، آج نوازشریف کے موٹروے کے افتتاح کے لیے گئے یا نہیں، سب کو چور کہنے والا آج کیا منہ دکھائے گا۔
’غبارے سے ہوا نکل گئی‘، وزیراعظم کا فضل الرحمان پر طنز
مولانا فضل الرحمان نے الزام لگایا کہ عمران خان نے اپنی بہن کو ایمنسٹی اسکیم کے تحت این آر او دیا، سلائی میشن کی کمائی 70 ارب تک پہنچ گئی، ہمیں بھی ایسی سلائی مشین دے دو تاکہ ہم بھی 70 ارب بنالیں۔ان کا کہنا تھا کہ کہتے تھے پاکستان کے 200 ارب ڈالر باہر پڑے ہیں، اب کہتے ہیں کوئی پیسہ نہیں، چیئرمین ایف بی آر نے بھی بیان دیا کوئی پیسہ نہیں، آپ کو گالیاں کے سوا کچھ نہیں ا?تا، ان باتوں سے حکومتیں نہیں چلتیں، قوم کو دوبارہ الیکشن کی طرف جانا ہوگا۔

نوازشریف کی بیرون ملک روانگی کی تیاریاں مکمل، صبح 9 بجے لندن روانہ ہوں گے

لاہور (ویب ڈیسک)سابق وزیراعظم نوازشریف کی علاج کیلئے بیرون ملک روانگی کی تیاریاں مکمل ہوگئیں، کل صبح 9 بجے ائیر ایمبولینس کے ذریعے لندن روانہ ہوں گے۔ائیر ایمبولینس آج شب 3 بجے قطر سے لاہور پہنچ جائے گی۔ شہباز شریف اور ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان بھی نواز شریف کے ساتھ جائیں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ ائیر ایمبولینس شریف فیملی کی جانب سے کرائے پرحاصل کی گئی ہے۔علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ انتظامیہ نے بھی تیاری مکمل کرلی۔ وزارت داخلہ نے لاہورہائی کورٹ کے حکم کی مصدقہ نقل ملنے کے بعد نوازشریف کو ایک بار کیلئے بیرون ملک جانے دینے کا ہدایت نامہ جاری کردیا ہے۔وزارت داخلہ کی جانب سے نواز شریف کو باہر جانے کی اجازت کا میمورنڈم بھی جاری کردیا گیا ہے۔میمورنڈم کے مطابق عبوری انتظام کےتحت نوازشریف کوباہرجانےکی ایک بار اجازت دینےکافیصلہ کیاگیا ہے اور انہیں 4 ہفتوں کے لیے بیرون ملک علاج کی غرض سے جانے کی اجازت لاہورہائی کورٹ کے حکم پردی گئی ہے۔وزارت داخلہ کے میمورنڈم میں شہبازشریف اور نوازشریف کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی کا بھی حوالہ شامل ہے۔ذرائع کے مطابق نوازشریف کسی بھی ائیرپورٹ پر عدالتی حکم کی تصدیق شدہ نقل دکھا کر بیرون ملک جا سکیں گے۔
لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ
واضح رہے کہ 16 نومبر کو لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دیتے ہوئے انہیں اور شہباز شریف کو 4 ہفتوں میں وطن واپسی کے لیے حلف نامے جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔اس سے قبل وفاقی کابینہ نے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت 7 ارب روپے کے انڈیمنٹی بانڈ جمع کروانے کے ساتھ مشروط کی تھی جسے پاکستان مسلم لیگ (ن) نے مسترد کرتے ہوئے عدالت سے رجوع کیا تھا۔
نواز شریف کی خرابی صحت کا پس منظر
قومی احتساب بیورو (نیب) لاہور کی حراست میں میاں نوازشریف کی طبیعت 21 اکتوبر کو خراب ہوئی اور ان کے پلیٹیلیٹس میں اچانک غیر معمولی کمی واقع ہوئی، اسپتال منتقلی سے قبل سابق وزیراعظم کے خون کے نمونوں میں پلیٹیلیٹس کی تعداد 16 ہزاررہ گئی تھی جو اسپتال منتقلی تک 12 ہزار اور پھر خطرناک حد تک گرکر 2 ہزار تک رہ گئی تھی۔نوازشریف کو پلیٹیلیٹس انتہائی کم ہونے کی وجہ سے کئی میگا یونٹس پلیٹیلیٹس لگائے گئے لیکن اس کے باوجود ا±ن کے پلیٹیلیٹس میں اضافہ اور کمی کا سلسلہ جاری ہے۔نوازشریف کے لیے قائم میڈیکل بورڈ کے سربراہ سروسز انسٹی ٹیوٹ ا?ف میڈیکل سائنس (سمز) کے پرنسپل پروفیسر محمود ایاز تھے۔سابق وزیراعظم کی بیماری تشخیص ہوگئی ہے اور ان کو لاحق بیماری کا نام اکیوٹ آئی ٹی پی ہے، دوران علاج انہیں دل کا معمولی دورہ بھی پڑا جبکہ نواز شریف کو ہائی بلڈ پریشر، شوگراور گردوں کا مرض بھی لاحق ہے۔اسی دوران نواز شریف کو لاہور ہائیکورٹ نے چوہدری شوگر ملز کیس میں طبی بنیادوں پر ضمانت دی اور ساتھ ہی ایک ایک کروڑ کے 2 مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔دوسری جانب اسلام آباد ہائیکورٹ نے 26 اکتوبر کو ہنگامی بنیادوں پر العزیزیہ ریفرنس کی سزا معطلی اور ضمانت کی درخواستوں پر سماعت کی اور انہیں طبی و انسانی ہمدردی کی بنیاد پر 29 اکتوبر تک عبوری ضمانت دی اور بعد ازاں 29 اکتوبر کو ہونے والی سماعت میں اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم کی سزا 8 ہفتوں تک معطل کردی۔خیال رہے کہ العزیزیہ اسٹیل ملز کیس میں سابق وزیراعظم کو اسلام آباد کی احتساب عدالت نے 7 سال قید کی سزا سنائی تھی۔سزا معطلی اور ضمانت کے بعد نواز شریف کو پہلے سروسز اسپتال سے شریف میڈیکل کمپلیکس منتقل کرنے کا فیصلہ کیا گیا تاہم بعد ازاں انہیں ان کی رہائش گاہ جاتی امرا منتقل کیاگیا جہاں عارضی ا?ئی سی یو بھی قائم کیا گیا تھا۔نواز شریف 7 ارب کے بانڈ جمع کرائیں، 4 ہفتوں کیلئے باہر چلے جائیں، حکومت نے اجازت دیدی۔نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کیلئے وفاقی حکومت کو ن لیگ کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی۔ اس حوالے سے وفاقی کابینہ کی ذیلی کمیٹی نے وزیر قانون فروغ نسیم کی سربراہی میں فیصلہ کیا کہ نواز شریف تقریباً 7 ارب روپے کے انڈیمنٹی بانڈ جمع کرائیں اور 4 ہفتوں کیلئے بیرون ملک چلے جائیں تاہم ن لیگ نے اس شرط کو مستردکرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا۔لاہور ہائی کورٹ نے انڈیمنٹی بانڈ کی شرط ختم کی اور بیان حلفی کی بنیاد پر نواز شریف کو 4 ہفتوں کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی۔

مریم کی ڈائٹ کوک بند کرنے پر ریحام کی دلچسپ تنقید

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وزیراعظم عمران خان کی سابق اہلیہ ریحام خان نے نواز شریف کی بیرون ملک روانگی پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ شریف فیملی نے تو بہت کچھ برداشت کیا ہے جب کہ سربراہ تحریک انصاف ایک دن بھی جیل میں نہیں گزار سکتے۔ایک ویڈیو بیان میں ریحام خان نے تحریک انصاف کے کارکنوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جیل میں موجود نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کی ڈائیٹ کولڈ ڈرنک(شوگر فری مشروب) بند کر دی گئی جب کہ اگر ایک دن کے لیے جیل میں آپ کے لیڈر کی کوک [کوک، پیپسی اور سیون اپ] بند کردی گئی تو بہت مشکل ہوجائے گی۔ان کا کہنا تھا کہ کل کو اگر آپ کو ایک دن بھی جیل میں گزارنا پڑجائے تو وہاں کوئی کوک، پیپیسی اور سیون اپ نہیں ملے گی۔ریحام خان کے مطابق سب کچھ پچھلے دور حکومت کی طرح ہورہا ہے،آپ کے خلاف بھی دھرنا دیا گیا،مولانا فضل الرحمان بھی شٹر ڈاو¿ن اور لاک ڈاﺅن کی باتیں کررہے ہیں یہ باتیں ہم نے 2014 میں سنی تھیں جب 126 دن دھرنے میں لگائے گئے لیکن کچھ نہیں ہوا۔حکومتی اتحادیوں کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سارے ایک پیج پر آگئے ہیں، پرویز الہٰی بھی آپ کے خلاف بول رہے ہیں، وزیر ریلوے کا بھی یہی رویہ ہے، یہ ردعمل ہے جو آپ نے دیگر لوگوں کے ساتھ کیا تھا اب آپ نے جن تھوڑے لوگوں کے ساتھ مل کر قومی اسمبلی میں اکثریت بنائی ہوئی ہے وہ ابھی سے آپ کو آنکھیں دکھا رہے ہیں۔ انہوں نے پاکستان تحریک انصاف کے کارکنوں پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ بڑی باتیں کی جارہی تھیں کہ 7 ارب وغیرہ نکالیں گے لیکن اس کی بجائے نواز شریف نے انڈیمنٹی بانڈ کی شرط مسترد کردی اور شہباز شریف کی زبان کے بانڈ پر انہیں بیرون ملک جانے کی اجازت مل گئی۔

ایران سے آنے والے ٹماٹر بھی قیمتوں میں کمی نہ لاسکے

لاہور (ویب ڈیسک)ایران سے درآمد کے باوجود بھی ملک میں ٹماٹر کی قیمتیں کم نہ ہوسکیں اور مختلف شہروں میں فی کلو ٹماٹر 320 روپے سے بھی زائد پر فروخت ہورہا ہے۔ ایران سے ٹماٹروں کی بھاری کھیپ لے کر 4 ٹریلر کوئٹہ اور 9 ٹریلر پاک ایران سرحدی شہر تفتان پہنچ گئے جب کہ تفتان پہنچنے والے 9 ٹریلر بھی ایک دو روز میں کوئٹہ پہنچ جائیں گے۔حکومت نے ٹماٹر کی قیمتوں پر قابو پانے کے لیے 4 ہزار 500 میٹرک ٹن ٹماٹر درآمدکرنے کا پرمٹ جاری کیا تھا۔کسٹم حکام کے مطابق ایران سے آنے والے ٹریلروں میں مجموعی طور پر 4 ہزار 500 میٹرک ٹن ٹماٹر لدا ہوا ہے، ایرانی ٹماٹر کوئٹہ سے تعلق رکھنے والی 7 نجی کاروباری کمپنیوں نے درآمد کیے ہیں۔ایران سے ٹماٹر پاکستان پہنچنا شروع تو ہوگیا ہے لیکن ایرانی ٹماٹروں کی کھیپ بھی اس کی قیمت کو استحکام نہیں دے سکی، کراچی میں ٹماٹر 280 روپے سے لے کر 300 روپے سے زائد کی فی کلو قیمت میں فروخت ہورہا ہے۔خریداروں کا کہنا ہے کہ اس قیمت پر ٹماٹر کی خریداری سب کے بس کی بات نہیں ہے۔ اس لیے وہ پاکستانی کچا ٹماٹر خرید رہے ہیں۔ جس کی قیمت 120روپے کلو ہے۔واضح رہے کہ ملک میں ٹماٹر کے بحران کے باعث اس کی قیمت 300 روپے فی کلو تک پہنچ گئی ہے جس کے بعد خیال تھا کہ ایران سے ٹماٹر درآمد کرنے سے پاکستان میں ٹماٹر کی قیمت میں خاطرخواہ کمی ہوگی تاہم ایساہوتا نظر نہیں آیا۔

بغیر کھڑکی والے طیارے اسکرین پر باہر کا پورا منظر دکھائیں گے

لندن(ویب ڈیسک) فضائی سفر کے دوران اکثر و بیشتر مسافروں کے درمیان کھڑکی والی نشست حاصل کرنے پر جھگڑا رہتا ہے اور زیادہ تر مسافر بورڈنگ کے وقت خصوصی طور پر کھڑکی والی نشست کی خواہش کرتے ہیں تاکہ وہ فضائی سفر میں اونچائی سے باہر کے مناظر سے لطف اندوز ہوسکیں۔مسافروں کی شدید خواہش کو مدنظر رکھتے ہوئے ایک برطانوی ٹیکنالوجی فرم نے جدت لاتے ہوئے مستقبل میں طیاروں کو اس طرح ڈیزائن کرنے کا پروگرام بنایا ہے جس میں پورا طیارہ آسمان کے پینورامک ویو (چاروں طرف پھیلے ہوئے منظر) میں تبدیل ہوجائے گا۔اس نئی ٹیکنالوجی کے ذریعے مستقبل میں طیاروں کی کھڑکیاں ختم کردی جائیں گی اور پورا طیارہ ’او ایل ای ڈی‘ ٹچ اسکرین سے ڈھک دیا جائے گا جس سے ہر نشست ایک قسم کی ’ونڈو سیٹ‘ بن جائے گی۔یہ ٹچ اسکرینز طیارے کے باہر لگے کیمروں سے منسلک ہوں گی جو باہر کا حقیقی منظر ہر نشست پر پیش کریں گی جب کہ مسافر اپنی مرضی سے ’او ایل ای ڈی‘ پر مناظر کے بجائے اینٹرٹینمنٹ سسٹم کے ذریعے دیگر پروگرام دیکھ سکیں گے۔اگر آپ ”او ایل ای ڈی“ کے بارے میں نہیں جانتے تو بتاتے چلیں کہ یہ ”آرگینک لائٹ ایمٹنگ ڈایوڈ“ کا مخفف ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ اس میں نامیاتی مرکبات

(آرگینک کمپاو¿نڈز) پر مشتمل ایک ایسی پتلی فلم ہوتی ہے جس میں سے بجلی گزاری جاتی ہے تو وہ روشنی خارج کرتی ہے۔یہ ٹیکنالوجی ٹیلی ویڑن، ٹیبلٹ کمپیوٹرز، موبائل فونز اور کمپیوٹر مانیٹرز میں استعمال ہورہی ہے۔ جب تک یہ طیارے حقیقت میں تیار کیے جائیں گے، امید ہے کہ تب تک اس سے کہیں زیادہ جدید اور بہتر او ایل ای ڈی ڈسپلے مارکیٹ میں آچکے ہوں گے۔

وزیر اعظم نے قیادت سے برطرف سرفراز کی حمایت کردی

لاہور (ویب ڈیسک)وزیر اعظم عمران خان نے قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کی قومی ٹیم میں واپسی کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ قیادت سے برطرف کیے جانے کے باوجود اب بھی سرفراز کا کیریئر ختم نہیں ہوا۔دنیائے کرکٹ کے عظیم ترین کھلاڑیوں سے ایک مانے جانے والے عمران خان اپنے سیاسی کیریئر میں مصروفیات خصوصاً وزیر اعظم بننے کے بعد سے پاکستان کرکٹ کی کارکردگی اور تبدیلیوں کے حوالے سے زیادہ تبصروں سے گریز کرتے ہیں۔وزیر اعظم جو پاکستان کرکٹ بورڈ کے پیٹرن ان چیف بھی ہیں، نے سابق چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی کی جگہ احسان مانی کو گزشتہ سال سربراہ مقرر کردیا تھا لیکن اس کے بعد سے وہ کرکٹ کی سرگرمیوں سے کنارہ کش ہیں اور ان کا کوئی بھی بیان سامنے نہیں آیا۔تاہم اب انہوں نے حال ہی میں قیادت سے برطرف کیے جانے والے سابق کپتان سرفراز احمد کی حمایت کرنے کے ساتھ ساتھ قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق کو بھی سپورٹ کیا۔وزیر اعظم نے صحافیوں سے غیررسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی کھلاڑی کی بھی فارم اور کارکردگی کو ٹی20 کی بنیاد پر نہیں پرکھنا چاہیے بلکہ اس کے بجائے ٹیسٹ اور ون ڈے کرکٹ کو معیار بنانا چاہیے۔عمران خان نے کہا کہ سرفراز احمد قومی ٹیم میں واپس آ سکتے ہیں لیکن فی الحال انہیں ڈومیسٹک کرکٹ پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔یاد رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے قومی ٹیم کی کھیل کے تینوں فارمیٹس میں ہر گزرتے دن کے ساتھ خراب ہوتی کارکردگی کے ساتھ ساتھ ان کی اپنی مستقل خراب فارم کے سبب قیادت سے برطرف کرنے کے ساتھ ساتھ ٹیم سے بھی ڈراپ اہر کردیا تھا۔وزیر اعظم نے پاکستان ٹیم کے نئے ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر مصباح الحق کی بھی قابلیتوں پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مصباح کی تقرری ایک احسن اقدام ہے کیونکہ وہ ایک سچے اور غیرجانبدار آدمی ہیں جن کے پاس کھیل کا بہت تجربہ ہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ مصباح کا تقرر اچھا انتخاب ثابت ہو گا اور پاکستانی ٹیم ٹیسٹ اور ون ڈے میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرے گی، وہ اپنی صلاحیتوں کی بدولت کھلاڑیوں کو نکھار کر ان کی کارکردگی میں بہتری لا سکتے ہیں۔وزیر اعظم نے پاکستان کے ڈومیسٹک کرکٹ کے نئے اسٹرکچر پر بھی اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس سے مستقبل میں قومی ٹیم اچھے نتائج دے سکے گی۔اگر ہماری ڈومیسٹک کرکٹ بہتر ہو گی تو پاکستان کرکٹ بھی ترقی کرے گی’۔

اسد عمر دوبارہ وفاقی کابینہ میں شامل، خسرو بختیار کا قلمدان تبدیل

اسلام آباد (ویب ڈیسک)سابق وفاقی وزیر اسد عمر کو وزیر منصوبہ بندی اور اسپیشل انیشی ایٹو کا وزیر بنانے کا فیصلہ کرلیا گیا۔وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ میں توسیع اور رد و بدل کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس سلسلے میں اسد عمر کو منصوبہ بندی اور اسپیشل انیشی ایٹو کا وزیر بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ خسرو بختیار کو پیٹرولیم کا وفاقی وزیر بنانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور اس حوالے سے نوٹیفکیشن جلد جاری کردیا جائے گا۔خیال رہے کہ گزشتہ دنوں ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ انہوں نے وفاقی کابینہ میں تبدیلی کا فیصلہ کرلیا ہے جس کا اعلان جلد کیا جائے گا۔وفاقی کابینہ میں اس وقت 24 وزراءمختلف قلمدانوں پر ہیں جن میں سے عمر ایوب خان کے پاس پاور ڈویڑن کے ساتھ ساتھ پیٹرولیم ڈویڑن کا اضافی قلمدان ہے جو اب خسرو بختیار کو دیا جارہا ہے۔خسرو بختیار کے پاس پلاننگ، ڈویلمپنٹ اور ریفارم کی وزارت تھی تاہم اب یہ وزارت اب اسد عمر کو سونپی جارہی ہے۔اسد عمران تحریک انصاف کی حکومت قائم ہونے کے بعد بننے والی پہلی کابینہ میں وزیر خزانہ تھے تاہم عالمی مالیاتی فنڈ (ا?ئی ایم ایف) کے ساتھ پیکج کے حوالے سے ہونے والے مذاکرات میں ڈیڈلاک کے باعث انہوں نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا جس کے بعد سے وزیر خزانہ کا قلمدان خالی ہے اور اس وقت عبدالحفیظ شیخ وزیر اعظم کے مشیر خزانہ کی حیثیت سے ذمہ داریاں نبھارہے ہیں۔

’نواز شریف کو 15 روز پہلے چلے جانا چاہیے، حکومت نے تاخیری حربے اپنائے‘، احسن اقبال

لاہور (ویب ڈیسک)پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو علاج کے لیے 15 روز پہلے ہی پاکستان سے چلے جانا چاہیے تھا، حکومت نے غیر ضروری اور غیر انسانی تاخیری حربے اپنائے۔ن لیگ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ ’حکومتی مشیر کہتے پھررہے ہیں کہ نواز شریف جہاں جائیں گے عدالتی فیصلہ وہاں بھیجا جائے گا، کیا آج تک کسی نے یہ کہا ہے کہ ہمارا وزیراعظم جہاں جائے گا کیلی فورنیا کی عدالت کا فیصلہ وہاں بھیجیں گے؟‘
’جنرل جیلانی کے گھر کا سریا لگاتے لگاتے لوگ وزیر بن گئے، کسی کو نہیں چھوڑوں گا‘
مسلم لیگ ن کے مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ نواز شریف منگل کی صبح لندن روانہ ہوں گے، شہباز شریف کی عدم موجودگی میں پارٹی رہنماﺅں کو ذمہ داریاں سونپ دی گئی ہیں۔لندن روانگی سے قبل شہباز شریف نے پارٹی رہنماﺅں کے ساتھ بڑی بیٹھک جمائی۔ اجلاس میں احسن اقبال، رانا تنویر حسین اور خواجہ آصف کو پارٹی اور پارلیمانی امور کی ذمہ دریاں سونپی گئیں۔اجلاس میں قیادت کی عدم موجودگی میں ملک بھر میں ورکرز کنونشن کرنے پر اتفاق ہوا۔اجلاس کے بعد احسن اقبال نے کہاکہ میاں نواز شریف صبح لندن روانہ ہو رہے ہیں، افسوس ہے کہ ان کی بیماری پر سیاست کی گئی اور ان کے علاج میں پندرہ دن کی تاخیر کی گئی۔احسن اقبال نے کہاکہ ن لیگ کل رہبر کمیٹی کے ہونے والے اجلاس میں شرکت کرے گی اور اپوزیشن کے اتحاد کے لیے اپنا کردار جاری رکھے گی۔

وزارت داخلہ نے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی

لاہور (ویب ڈیسک)وزارت داخلہ نے لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کے مطابق نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی ہے۔وزارت داخلہ کی جانب سے نواز شریف کو باہر جانے کی اجازت کا میمورنڈم بھی جاری کردیا گیا ہے۔میمورنڈم کے مطابق عبوری انتظام کےتحت نوازشریف کوباہرجانےکی ایک بار اجازت دینےکافیصلہ کیاگیا ہے اور انہیں 4 ہفتوں کے لیے بیرون ملک علاج کی غرض سے جانے کی اجازت لاہورہائی کورٹ کے حکم پردی گئی ہے۔وزارت داخلہ کے میمورنڈم میں شہبازشریف اور نوازشریف کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ میں جمع کروائے گئے بیان حلفی کا بھی حوالہ شامل ہے۔ذرائع کے مطابق نوازشریف کسی بھی ائیرپورٹ پر عدالتی حکم کی تصدیق شدہ نقل دکھا کر بیرون ملک جا سکیں گے۔امیگریشن ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کا نام بدستور ایگزٹ کنٹرول لسٹ(ای سی ایل) میں شامل ہے اور قانون کےمطابق ان کا نام ای سی ایل میں شامل رہے گا،عدالت نے انہیں صرف ایک بار بیرون ملک جانےکی اجازت دی ہے اور وہ عدالتی احکامات دکھا کر ملک سے باہرجاسکتے ہیں۔لاہورمیں امیگریشن ذرائع نے مزید بتایا ہے کہ علامہ اقبال انٹرنیشنل ائیرپورٹ انتظامیہ کو ابھی تک نواز شریف کو لندن لےجانے والی ائیر ایمبولینس کی آمد کی کوئی اطلاع نہیں دی گئی۔واضح رہے کہ 16 نومبر کو لاہور ہائی کورٹ نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو علاج کے لیے بیرون ملک جانے کی اجازت دیتے ہوئے انہیں اور شہباز شریف کو 4 ہفتوں میں وطن واپسی کے لیے حلف نامے جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔اس سے قبل وفاقی کابینہ نے نواز شریف کو بیرون ملک جانے کی اجازت 7 ارب روپے کے انڈیمنٹی بانڈ جمع کروانے کے ساتھ مشروط کی تھی جسے پاکستان مسلم لیگ (ن) نے مسترد کرتے ہوئے عدالت سے رجوع کیا تھا۔دوسری جانب ن لیگ کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نواز شریف کو اسٹیرائیڈ کی ہائی ڈوز دینے کا عمل جاری ہے تاکہ ان کے پلیٹیلیٹس کی مقدار سفر کے قابل ہو سکے۔ترجمان ن لیگ نے کہا کہ ہائی بلڈ شوگر، ہارٹ اور دیگر طبی خطرات کو کم سے کم سطح پر لانے کے لیے بھی نواز شریف کو ادویات دی جا رہی ہیں۔مریم اورنگزیب نے بتایا کہ ڈاکٹرز ایسی محفوظ طبی حکمت عملی پر کاربند ہیں جس سے نواز شریف بحفاظت سفر کر سکیں۔انہوں نے مزید کہا کہ نواز شریف کو لے جانے کے لیے ائیر ایمبولینس منگل کی صبح پہنچے گی اور منگل کو ہی نواز شریف علاج کے لیے بیرون ملک روانہ ہو جائیں گے۔

عمران خان کے نقل اتارنے پر بلاول بھٹو زرداری کا ردعمل

اسلام آباد (ویب ڈیسک)وزیراعظم عمران خان نے پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی نقل اتارتے ہوئے انہیں ’لبرلی کرپٹ‘ قرار دیا ہے۔ہزارہ موٹروے کی افتتاحی تقریب سے خطاب میں وزیراعظم عمران خان نے سربراہ جمعیت علمائے اسلام فضل الرحمان(جے یو ا?ئی۔ ف) مولانا فضل الرحمان اور چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری پر خوب تنقید کی۔عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں اگر کوئی دھرنے کا ایکسپرٹ ہے تو وہ خود ہیں، پہلے ہی کہا تھا کہ یہ لوگ ایک مہینہ کنٹینر میں گزاردیں میں ان کی ساری باتیں مان جاو¿ں گا۔وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ڈیزل کے نام پر بکنے والے سے آج جو مرضی چاہے فتوے کے لیے قیمت لگوالے۔عمران خان نے ایک بار پھر بلاول کو لبرلی کرپٹ قرار دیا ا ور انہی کے انداز میں ان کی نقل بھی کی۔
تم 70 سال کے بوڑھے ہو ، سلیکٹڈ سیاست کرتے ہو، بلاول
وزیراعظم عمران خان کی تنقید کا جواب دیتے ہوئے بلاول نے کہا کہ ’نہ لبرل ہوں نہ کرپٹ ہوں نہ منافق ہوں، میں ترقی پسند اور نظریاتی ہوں، ایک سال سے سیاست میں ہوں‘۔بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ ’تم 70 سال کے بوڑھے ہو،20 سال سے سلیکٹڈ سیاست کرتے ہو‘۔انہوں نے کہا کہ ’اگر عمران خان کی کوئی پہچان ہے تو یوٹرین ہے، منافقت اور کٹھ پتلی ہے‘۔خیال رہے کہ گزشتہ روز بلاول نے اپنی ٹوئٹ کے ذریعے وزیراعظم عمران خان پر تنقید کی تھی جس کے جواب میں تحریک انصاف کے رہنما مراد سعید اور سینیٹر فیصل جاوید نے انہیں آڑے ہاتھوں لیا تھا۔