تازہ تر ین

فکسنگ سکینڈل ، ناصر جمشید کی مشکلات برقرار

لاہور(آئی این پی) پاکستان سپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن کے دوران سامنے آنےوالا سپاٹ فکسنگ اسکینڈل کے باعث معطل ہونےوالے کرکٹرناصرجمشید کی ایک سالہ معطلی ختم ہوگئی ۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن یونٹ نے اسپاٹ فکسنگ کیس میں تعاون نہ کرنے پرناصرجمشید کوایک سال کیلئے معطل کردیا تھا۔ناصرکی معطلی 13فروری کوختم ہوگئی تاہم بورڈ کی جانب سے چند روز قبل نئی چارج شیٹ جاری ہونے کے بعد ان کی معطلی برقرارہے۔معطلی ختم پر ناصر جمشیدکوآج سے برمنگھم میں کلب کرکٹ کا دوبارہ آغازکرنا تھا تاہم ایک بار پھر معطل ہونے کے باعث ان کا معاہدہ ایک بارپھرخطرے میں پڑگیا ہے۔واضح رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے متنازع کرکٹر ناصر جمشید کو پی سی بی اینٹی کرپشن کوڈ کے آرٹیکل 2 کی ذیلی شق 1.1، 1.2، 1.3، 1.4 اور 4.4 کی خلاف ورزی کرنے پر نوٹس جاری کردیا۔خیال رہے کہ ناصر جمشید پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 2017 میں اسپاٹ فکسنگ کیس کے مرکزم ملزم ہیں اور انہیں پی سی بی کے اینٹی کرپشن یونٹ سے معاملے پر تحقیقات میں تعاون نہ کرنے پر ایک سال کی پابندی کا سامنا ہے۔پاکستان کرکٹ بورڈ نے معاملے پر پیش رفت کرتے ہوئے ناصر جمشید پر اسپاٹ فکسنگ کے معاملے پر نوٹس جاری کرتے ہوئے 14 دن کے اندر جواب طلب کرلیا ہے۔ ناصر جمشید پر اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کے ماسٹر مائنڈ ہونے کا الزام ہے۔پی ایس ایل 2017 میں اسپاٹ فکسنگ کا کا معاملے اس کے آغاز کے پہلے ہی ہفتے میں سامنے آیا تھا۔اس ہی معاملے پر پی سی بی نے شرجیل خان اور خالد لطیف کو 3 سال کی پابندی کی سزا سنائی تھی۔اپنے دفاع میں ناصر جمشید نے دعویٰ کیا تھا کہ ان کے خلاف لگے الزامات ڈرامائی اور بے بنیاد ہیں۔

 


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved