تازہ تر ین

سعودی عرب کی خواتین بھی اب بائیک چلائیں گی

سعودی عرب (ویب ڈیسک ) ایک سال قبل تک سعودی خاتون کو چست جینز اور ہارلے ڈیوڈسن ٹی شرٹ پہنے ریاض سپورٹس سرکٹ میں موٹربائیکس چلاتے دیکھنے کا تصور کرنا بھی مشکل تھا۔31 سالہ نورا جو کہ ان کا فرضی نام ہے نے بتایا: ’مجھے بچپن سے ہی بائیک چلانے کا شوق ہے۔خیال رہے کہ سعودی عرب میں خواتین کو مردوں سے بہت سے معاملات میں اجازت درکار ہوتی ہے۔عودی ولی عہد محمد بن سلمان نے خواتین کے حقوق اور اختیارات پر پہلے سے موجود عائد پابندیوں کو کم کرنے کا آغاز گذشتہ برس سے کیا جس کے تحت گاڑی چلانے کی اجازت، بغیر محرم کے سعودی عرب میں داخلے کی اجازت، تفریح کے لیے گھر کی بجائے کھیل کے میدان میں جانے اور سینیما گھروں میں جانے کی اجازت شامل ہے۔دوسری جانب اس پابندی کے خاتمے کے لیے جدوجہد کرنے والی خواتین کی گرفتاری کی خبریں بھی سامنے آئیں۔یہی وجہ تھی کہ مصنوعی روشنیوں میں موٹر سائیکل چلانا سیکھنے والی خواتین میں سے کسی نے بھی اس کریک ڈاو¿ن پر بات نہیں کی۔’اب مجھے امید ہے کہ میں اتنی مہارت حاصل کر لوں گی کہ گلیوں میں بائیک چلا سکوں۔بوکریوا کا کہنا ہے کہ انھوں نے فروری میں خواتین کو موٹر سائیکل چلانا سکھانا شروع کی اور تب سے چار شوقین خواتین داخلہ لے چکی ہیں جن میں سے زیادہ سعودی خواتین ہیں۔اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے بوکریوا نے کہا : ’وہ ہمیشہ سے ہی بائیک چلانا سیکھنا چاہتی تھیں، اور اب وہ کہتی ہیں کہ اب میرا وقت ہے۔انھوں نے انسٹیٹیوٹ کے پروموشنل مواد پر لکھی ایک عبارت پڑھی جس پر لکھا تھا: ’اب بائیک چلانے کی آپ کی باری ہے۔اس کورس کی فیس 1500 ریال ہے اور بوکریوا کے خیال میں زیادہ خواتین کے داخلہ نہ لینے کی وجہ ’ان کے خاندان کی جانب سے رکاوٹ ہو۔تناوی کا کہنا ہے کہ انھیں اپنے گھر والوں کی طرف سے سخت خدشات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔انھوں نے بتایا: ’میرے والدین نے کہا، تم بائیک پر ہو ؟ تم ایک لڑکی ہو، یہ خطرناک ہے۔‘موٹر سائیکل چلانے والی خواتین کے لیے جو سب سے بڑا مسئلہ درپیش ہے وہ لباس ہے۔اس نجی انسٹیٹیوٹ کے اندر بائیکرز چست جینز، گھٹنے کے بچاو¿ کے لیے پیڈز پہن لیتی ہیں لیکن اس کے بارے میں عوامی مقامات پر سوچا بھی نہیں جا سکتا۔سعودی عرب میں خواتین کے عوامی مقامات پر عبایہ پہننا لازم ہے جو کہ موٹرسائیکل کے لیے موزوں نہیں، کیونکہ عبایہ موٹرسائیکل کے پہیوں میں پھنس سکتے ہیں۔


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved