تازہ تر ین

جعلی اقرار نامہ کی آڑ میں زمیندار کے پلاٹ پر قبضہ کی کوشش ، 62مرلے پلاٹ کے مالک جام ارشاد کی اراضی میں 10مرلے کی الگ رجسٹری کردی گئی، متاثرہ جام ارشاد مدد کیلئے ” خبریں ہیلپ لائن “ پہنچ گیا

خان پور (نمائندہ خبریں) لکشمی کی چمک اور اثرورسوخ کے آگے قانون کی نظریں جھک گئیں، جعلی اقرارنامہ بیع کی آر لیکر زمیندار کے پلاٹ پر قبضہ کی کوشش کرنے والے شخص پر درج مقدمہ خارج، تحصیلدار نے ایک ہی پلاٹ کی2رجسٹریاں کردیں۔ پلاٹ پر قبضہ کے لئے دھاوا بولنے والے ملزمان مقدمات کے اندراج کے باوجود گرفتار نہ ہوسکے، ملزمان کی جانب سے سنگین نتائج کی دھمکیاں، متاثرہ شخص کیایک دفعہ پھر”خبریں ہیلپ لائن“ سے مدد کی اپیل ۔تفصیلات کے مطابق ضلع رحیم یارخان کی تحصیل خان پور کے موضع مرادواہ کے رہائشی جام ارشاد احمد نے پلی دین پور شریف کے نزدیک62مرلے کا جیسے ہی رہائش کے لئے پہلے اپنے بھائیوں ودےگرساتھیوں کو بھیج کر حملے کرائے اور توڑ پھوڑ کرائی لیکن پولیس تھانہ صدر کے پہنچنے پر وہ فرار ہو گئے۔ان واقعات کے2مقدمات تھانہ صدر خان پور میں جام ارشاد احمد کی مدعیت میں درج ہوئے اس کے بعد وسیم مختار نے ایک10مرلے کا جعلی اقرار نامہ بیع تیار کرکے پھر سے قبضہ کی کوشش کی لیکن جام ارشاد احمد کی نشاندہی پر اقرار نامہ بیع جعلی ثابت ہوا جس پر تھانہ سٹی خان پور نے وسیم مختار کے خلاف جعل سازی کا مقدمہ درج کرلیا گیا لیکن لکشمی کی چمک یا پھر اثرورسوخ کی بنیاد پر اچانک قانون کی نظریں ملزم کے آگئے یوں جھکتی دکھائی دیں کہ ایس ایچ او تھانہ سٹی چوہدری شبیر جھورڑنے پر بااثر شخص وسیم مختار کے خلاف مقدمہ خارج کردیا ادھر 62مرلے کے پلاٹ کی اصل مالک جام ارشاد احمد کے نام پر تحصیلدار خان پور جنیدخان پہلے کرچکا ہے۔اس نے اسی پلاٹ میں سے10مرلے کی دوسری رجسٹری وسیم کے نام بھی کردی۔ متاثرہ جام ارشاد احمد نے بااثر شخص کے ان ہتھکنڈوں سے تنگ آکر ایک دفعہ پھر”خبریں ہیلپ لائن“ لاہور سے مدد مانگ لی اور وضاحت کی کہ جعلی اقرار نامہ سے میرے ملکیہ پلاٹ پر قبضہ کی کوشش ناکام ہونے پر وسیم مختار نامی بااثر شخص نے غلام یاسین نامی اس شخص سے ملی بھگت کرکے10مرلے کا پرچہ ملکیت حاصل کرکے رجسٹری کرائی ہے جس کا اس62مرلے پلاٹ سے ذرا برابر بھی کوئی تعلق نہیں لیکن پلاٹ سے کچھ فاصلہ پر اس کا15رقبہ پر تعمیر شدہ ایک مکان ضرور موجود ہے جس نے پرچہ ملکیت اپنے15مرلے کے مکان میں سے10مرلے کا پٹواری سے حاصل کیا لیکن رجسٹری کراتے وقت پلاٹ کا نقشہ میرے ملکیہ پلاٹ میں سے دیدیا ہے انہوں نے کہا کہ پلاٹ پر قبضہ قانونی طور پر ہمارے پاس ہے ہم نے دو نمبر رجسٹری بارے تحریری طور پر رجسٹری ہونے سے قبل ڈی سی رحیم یار خان کو دی تھی جنہوں نے اے سی خانپور کو تحقیقات کا حکم دیا تھا لیکن 10مرلے کی میرے پلاٹ کے رقبہ پھر سے رجسٹری کردی گئی ہے متاثرہ شخص نے خبریں کے توسط سے چیف جسٹس ہائیکورٹ اور وزیراعلیٰ پنجاب سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔


سب سے زیادہ پڑھی جانے والی مقبول خبریں




دلچسپ و عجیب
کالم
آپ کی رائے
   پاکستان       انٹر نیشنل          کھیل         شوبز          بزنس          سائنس و ٹیکنالوجی         دلچسپ و عجیب         صحت        کالم     
Copyright © 2016 All Rights Reserved